Wednesday, 29 January, 2020
مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے امریکی صدر کی پیشکش
طاہر یاسین طاہر کا کالم
وزیر اعظم پاکستان، عمران خان، کشمیر، امریکہ، صدر ٹرمپ، بھارت، مودی

بغداد آپریشن: ایرانی ردعمل سے تاحال ماہرین لاعلم
ناصرمغل کا کالم تحقیق
عراق میں امریکی حملے سے ایرانی جرنیل کی موت کے بعد خطہ نئی جنگ کے خدشات سے بھرچکاہے۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مشرق وسطیٰ کی صورت حال کو بہت نازک اور تشویشناک قراردیتے ہوئے انتباہ کیاہے کہ دنیا اس نئی جنگ کے لیے تیار رہے۔
اعتزاز حسن بنگش تجھے سلام
عباس بیگ مرزا کا کالم نشان حیدر
سکول کے دنوں میں دیر سے آنے پر اسمبلی سے دور لائن میں کھڑا ہونے کے دوران میں اکثر سوچتا تھا کہ ہر بندہ مجھے دیکھ کر طنزاً مسکرا رہا ہے اس دوران میں دیگر 'احباب' سے بھی آنکھیں چراتا اور شرمندگی کے آثا ر سکول داخلے کی اجازت ملنے
امریکہ کو پہلی بار ہارڈ ٹارگٹ کا سامنا؟
ناصر مغل کا کالم
ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی امریکی حملے میں موت نے خطے کونہ صرف عدم استحکام کی نئی صورتحال سے دوبار کردیا ہے بلکہ دونوں دیرینہ حریفوں کو ایک دوسرے کے سامنے لاکھڑا کر دیا۔ایرانی جنرل کو امریکی فوج نے باقاعدہ ٹارگٹ کرکے
’’جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت‘‘
طاہر یاسین طاہر کا کالم
امریکی اقدامات خطے سمیت دنیا بھر کے لیے انتہائی سنگین اور خطرناک ہیں۔طاقت کے زعم میں امریکہ ہمیشہ عالمی قوانین کو پامال کرتا آیا ہے۔عراق میں کچھ ایام قبل منتخب حکومت کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے تھے۔ اس احتجاج کو امریکیوں نے
’’ٹک ٹاک کے ذریعے جاسوسی‘‘
عمر چوہدری کا کالم اگلا مورچہ
ٹک ٹاک نے امریکہ کے فوجی حکام کی ناک میں دم کر دیا ہے اور اب امریکی فوجی اداروں نے افسران اور اہلکاروں کو چینی ایپ ٹک ٹاک ڈائون لوڈ نہ کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں امریکی فوج کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل روبن نے ٹک ٹاک سے متعلق
امریکا عراق میں، خود آپ اپنے دام میں صیاد آگیا
ثاقب اکبر کا کالم در خیال
چنانچہ اپنے انٹرویو میں محمد محیی کا کہنا ہے کہ امریکا اور صہیونی حکومت کی الحشد الشعبی سے دشمنی بالکل واضح ہے۔ وہ اسے اپنے لیے ایک سنجیدہ خطرہ سمجھتے ہیں۔ لہٰذا امریکا اور صہیونی حکومت اسے نشانہ بنانے کے لیے کوشاں رہتے ہیں۔
شہید کیپٹن آکاش کے نام والدہ کا خط
عباس بیگ مرزا کا کالم نشان حیدر
آکاش ایک اور سال گزر گیا اور میرا خدا گواہ ہے کہ یہ بھی کیسے گزرا سال شروع ہوتا ہے تو میں سوچتی ہوں کہ نہ جانے یہ سال کیسے گزرے گا اور کتنے عرصے میں گزرے گا؟ ہاں آکاش تم تو کہو گے کہ ظاہر ہے سال ہے تو سال کے عرصے میں ہی گزرے گا
’’میجر جنرل آصف غفور کے 2019ء میں ڈنکے‘‘
عمر چوہدری کا اگلا مورچہ
انٹرسروسز پبلک ریلیشنز کی اہمیت اور افادیت کا اہل وطن اور دُنیا بھر کو اِمسال اندازہ ہوا آئی ایس پی آر کی کمان کیلئے ڈائریکٹر جنرل متمکن کیا جاتا ہے تا ہم 1949ء سے لے کر آج تک جو پذیرائی میجر جنرل آصف غفور کو ملی وہ بھی آئی ایس پی آر
کیا نیا سال
طاہر یاسین طاہر کا قلم کلام
اسی طرح ہمارے ہاں جمہوری ادارے اپنی اصل میں ابھی خام ہیں۔جو ہلکا پھلکا جمہوریت زندہ باد کا نعرہ لگتا ہے وہ دو چار خاندانوں کی بادشاہت کے تحٖفظ کا نام ہے۔ہمارے ہاں تو جمہوریت کو ہمیشہ " کنٹرولڈ ڈیموکریسی" کے نام سے یاد کیا جاتا رہا ہے۔اسی طرح ہمارے عدالتی نظام پر عام آدمی کو اعتماد نہیں
’’دلت ۔۔۔ ملت اسلامیہ کی توجہ کے منتظر‘‘
عمر چوہدری کا کالم اگلا مورچہ
آخر کار انسانیت کی تذلیل کا نشانہ بننے والے بھارتی دلتوں نے ذلت کی گھٹیا ترین زندگی گزارنے کے بعد بڑا اعلان کر کے بھارت کی تاریخ میں بھونچال کھڑا کر کے رکھ دیا ہے بدقسمتی سے دلتوں کا شمار بھارت کے ان افراد میں ہوتا ہے جو کچرا اٹھانے والوں
نیا سوشل کنٹریکٹ ۔ اب یا کبھی نہیں
سلیم صافی کا کالم
ہمیں بتایا جاتا ہے کہ پاکستان کو اِس وقت مشرقی اور مغربی سرحدوں پر شدید خطرات کا سامنا ہے اور یقیناً ایسا ہی ہے۔ ہمیں بتایا جاتا ہے کہ امریکہ جیسی طاقتوں کو ایٹمی پاکستان ایک آنکھ نہیں بھاتا اور وہ دوست ہوکر بھی انڈیا کے ساتھ مل
پورے خطے میں زلزلہ ہے
مظہر برلاس کا کالم
چند روز پہلے لاہور میں پیپلز پارٹی کے ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات چوہدری منور انجم کے بیٹے کی دعوتِ ولیمہ ایک سیاسی اکٹھ کا منظر پیش کر رہی تھی۔ میں اپنے خوش لباس دوست نوید چوہدری، گورنر پنجاب چوہدری سرور اور سینیٹر اکبر خواجہ کے ساتھ بیٹھ گیا۔
یہ اتوار پچھلے اتوار سے بھی زیادہ پرہول لگ رہا تھا۔
محمود شام کا کالم
بچوں کے پاس بہت ہی مشکل سوالات ان کی نگاہوں کی چبھن ماتھے کے شکن مجھے خوفزدہ کررہے تھے۔ایسے ہی حالات تھے12اکتوبر1999کو بھی ،سہ پہر سے یہ
اس سزا پر عملدرآمد نہیں ہوگا
حامد میر کا کالم
یہ زخمی زخمی سا آئین ہے، اِسے بار بار توڑا گیا، یہ بار بار بحال ہوتا رہا کیونکہ یہ پاکستانی عوام کو میسر واحد متفقہ قومی دستاویز ہے جس نے تمام تر اندرونی و بیرونی سازشوں کے باوجود پاکستان
عمران خان! آپ تو کہتے تھے ۔۔۔۔
ثاقب اکبر کا کالم درخیال
عمران خان! آپ تو کہتے تھے کہ: اللہ تعالیٰ نے قرآن شریف میں فرمایا ہے: ’’اللہ اس قوم کی حالت نہیں بدلتا جو اپنی حالت خود تبدیل نہ کرے۔‘‘ آپ نے یہ آیت کتنی مرتبہ اور اپنے کتنے خطابات میں ہمیں یاد دلائی، لیکن جب آپ کو اپنی اور ملک ک
مقبول ترین
عرب میڈیا کے مطابق سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی صدر کی جانب سے مشرق وسطیٰ میں اسرائیل اور فلسطین کے درمیان تنازع کے خاتمے کے لیے امن منصوبہ ’ ڈیل آف سینچری‘ پیش کرنے اور فریقین کے درمیان امریکی سرپرستی میں
فلسطین کے صدر محمود عباس نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشرق وسطیٰ کے امن منصوبے کو ’’صدی کا تھپڑ‘‘ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا برطانوی خبررساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر کے اعلان کے بعد سے غزہ
دفتر خارجہ نے ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کے حالیہ متشدد بیانات کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس کا نوٹس لے۔ دفتر خارجہ کی جانب سے جاری اہم بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی انتہا پسند بیانیہ
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ جسے امن منصوبے کا نام دے رہے ہیں وہ دراصل” امن کے خلاف جنگ“ (War Against Peace )ہے ۔اسے عالمی قوانین کی

میرے پاس تم ہو ۔۔۔۔ کیا ہوگا؟
وفا اور جفا کی عجب کشمکش میں ہچکولے کھاتا دانش بالآخر اپنی محبت کا لاشہ اٹھائے جہان فانی سے کوچ کر گیا،
وہ ھستی کہ جس کے آنے پر رسالت مآب صلی اللہ علیہ و الہ وسلم کھڑے ہو جاتے، دنیا میں کسی بھی عورت کو چند ایک مرتبہ ملتے جو اس کے رشتوں کی وجہ سے ہوتے جیسے بیٹی ہے تو باپ کیلئے رحمت ، زوجہ ہے تو شوہر کیلئے نصف ایمان ، اور اگر ماں ہے تو اپنے بچوں کیلئے جنت
عورت اردو کے چار حروف پر مبنی ان لفظوں کا بھی کیا خوب امتزاج ہے، کہ ع،عزت دیتا ہے،تو و،وفا کی علامت بن کر نکھرتا ہے،ر،راحت کا سبب بنتا ہے تورونق بھی بخشتا ہے، ت،تعمیل بجا لا کرتعریف میں پھولے نہیں سماتا، ایسی ہے عورت جو عزت کی مورت ہو تو باوفا کہلاتی ہے اور جب وفا داری کی چمک رونق بخشتی ہے تو خوب تعریف سمیٹتی ہے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں