Friday, 10 July, 2020
کورونا وائرس اور ٹڈی دل کی یلغار: امتحان یاعذاب
ملک اس وقت ناگہانی آفات، بحرانوں،وباؤں اور آسمانی آفات کی زد میں ہے اورحالت جنگ کی سی کیفیت سے دوچار ہے۔ایک طرف مہلک کورونا وائرس تودوسری جانب ٹڈی دل کی ہولناک یلغارجاری و ساری ہے یوں کہیں کہ اللہ تعالٰی کی نا شکری کی بناء پرہم پرایک کے بعدایک عذاب مسلط ہو رہا ہے۔
ہیٹ اسٹروک سے بچائو کی احتیاطی تدابیر، علاج اورغذائیں

نیو ورلڈ آرڈ کا گریٹ گیم اور گلگت بلتستان
اسوقت جہاں دنیا ایک طرف کرونا سے جنگ لڑ رہا ہے وہیں دوسری طرف کرونا کی وجہ سے جس طرح سے عالمی حالات میں تبدیلی آرہی ہے اور دنیا کے طاقتور ممالک شدید معاشی بحران کا شکار ہوگیا ہے ۔اس تناطر میں عالمی میڈیا پر کچھ اسطرح کی خبریں گردش
ماں، ایک خوبصورت رشتہ
ماں دنیا میں خدا کا وہ روپ ہے جو بچپن سے لیکر جوانی تک، آپ کے سکول کا ٹفن بنانے سے لیکر آپ کو دفتر بھیجنے سے پہلے ناشتہ کروانے تک ہر لمحہ آپ کے ساتھ ہوتی ہے. آپ کے مشکل وقت میں، جب اللہ کے سوا کوئی نہیں ہوتا تب آپ کی ماں آپ کو سپورٹ دیتی ہے. آپ کو سہارا دیتی ہے، حوصلہ دیتی ہے. آپ پر تنقید بھی آپ کے بھلے کے لئے کرتی ہے.
’’عیدالفطر کے لذیذ پکوان اوران کی افادیت‘‘
عیدالفطرانتہائی خوشی ومسرت کااسلامی تہوارہے۔میٹھی عیدپرنمازعیدسے پہلے اوربعدمیں ہرگھرمیں انواع واقسام کی ڈشز تیارہوتی ہیں جنہیں بچے بڑے سب بہت ذوق و شوق سے کھاتے ہیں۔میٹھی عیدپرمیٹھی سویاں،پھینیاں،شیرخرما،سوجی کاحلوہ
خصوصی رپورٹ: مقبوضہ کشمیر میں 30 سال میں 19 صحافی جاں بحق
عالمی یوم آزادیِ صحافت کے حوالے سے خصوصی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ تیس برس میں انیس صحافی فرائض کی ادائیگی کے دوران جاں بحق ہوچکے ہیں۔ بھارتی فورسز کے مظالم اجاگر کرنے پر صحافیوں کو گرفتار کیاجاتا ہے اور تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔
اک تماشا ہے مزدور
یکم مئی' یومِ مزدور' وہ دن جسے مزدور کے علاوہ سب مناتے ہیں' اس بار شائد وہ رنگ نہ جما سکے کہ کورونا کے دربار میں سبھی ایک ہوئے ہیں مگر متاثر صرف مزدور۔ مزدور کہ جسے دو وقت کی روٹی کے لالے پڑے ہوتے تھے اب وقت کی بے رحم موجوں کے سہارے زندگی اور موت کی جنگ سے نبرد آزما ہے۔ خیر یہ قصہ پھر سہی ابھی فی الحال ایک طائرانہ نظر اس دن کی مناسبت سے۔
’’یکم مئی: شگاگو کے شہیدوں کو سلامِ عقیدت‘‘
اس کے جسم پر میلے کچیلے، پھٹے پرانے کپڑے تھے، چہرہ حسرت و یاس کاایک نمونہ لگ رہاتھا اسے دیکھ کر یوں محسوس ہوتا جیسے اس نے زندگی میں کبھی کوئی خوشی نہیں دیکھی۔ وہ ایک گھنٹے سے ڈیوڈ اینڈ ڈیوڈ انجیرٔ نگ نامی کارخانے کے مالک سے
مولانا طارق جمیل اور مولانا سید جواد نقوی کی حالیہ مخالفت کی وجہ کچھ اور ہے
آپ تبلیغی جماعت کے نصاب اور مولانا طارق جمیل کی ہر دور میں اپنائی گئی حکمت عملی سے اختلاف کریں- صرف موجودہ دور میں مولانا کے حالیہ حکمرانوں سے مراسم پر انگلی اٹھانا درست نہ ہوگا- اسی طرح مولانا سید جواد نقوی کے حالیہ بیان پر شور کرنے سے پہلے، مجالس کو علمی بنائیں کہ ان میں صرف اہل بیت اطہار کا ذکر ہو اور ان میں خطاب کرنے والے ذاکر و خطباء، فیس کے چکر سے ماوراء ہو کر، خلوص کے ساتھ شریک ہوں؛ تب مولانا کی بات غلط قرار پائے گی-
مولانا طارق جمیل کا میڈیا کے متعلق بیان اور سکینڈل
مولانا طارق جمیل ایک مشہور عالم دین ہونے کے ساتھ ساتھ وہ ہستی ہیں جو مسلک سے بالاتر ہو کر دین کی تبلیغ پر پچھلی کئی دہائیوں سےعمل پیرا ہیں ۔ میں اور میرے جیسے بہت سارے حضرات جو دوسرے مسالک سے تعلق رکھتے ہیں وہ بھی مولانا صاحب
روزہ، صحت اور سحروافطار کی غذائیں
پاکستان سمیت دنیا بھر میں رمضان المبارک کا آغاز ہوگیا ہے ۔روزہ کا مقصد انسان میں تقویٰ پیدا کرنا ہے۔روزہ کے بے شمارطبی فوائدبھی ہیں۔روزے سے جسمانی صحت بہترین ہوجاتی ہے۔غذائی ماہرین کے مطابق معدے کو کافی دیر کے لئے خالی رکھنا اور کھانا
اونچی ہے ثریا سے بھی یہ خاک پُر اسرار
عزیزان! یہ خود آشنائی کا سفر جو آپ کو رب آشنائی تک لے جائے اس کا راز خلوت ہے جو رات کی تیرگی میں پنہاں ہے جو اسے درک کر لے اُس کی رسائی رب تک ممکن ہو جاتی ہے۔ دعا ہے اللہ تعالٰی ہم سب کو تمسک بالدین و نماز شب عطا فرمائے۔ (آمین)
’’سوشل میڈیا اور کورونا وبا‘‘
آج کل خبریں شیئر کرنے کا ایک بہترین ذریعہ سوشل میڈیا ہے (کچھ لوگوں کے لئے خبروں کا یہ ایک واحد راستہ ہے)۔ خاص طور پر اگر آپ لوگوں کو انتہائی سنجیدہ طریقے سے کسی سنجیدہ چیز سے آگاہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ چاہے مختلف ممالک کے مطابق
سپیڈ بریکر
پیارے بابا جی۔۔۔ہماری ٹیچر کہتی ہیں یہ سپیڈ بریکر ہمیں حادثات سے بچاتے ہیں اور ڈرائیونگ کے دورآن ہمیں ذہنی توازن کو برقرار رکھنا سکھاتے ہیں۔۔۔۔منیر اپنی بیٹی کے معصومانہ طرز گفتگو پر ہنسی اڑا جاتا،پھر مسکراتا اور کہتا۔۔۔۔
کروناوائرس اورجڑی بوٹیوں کی چائے کی اہمیت
قدرت نے جڑی بوٹیوں میں شفا رکھی ہے۔ جڑی بوٹیاں مختلف خواص وفوائد کی حامل ہوتی ہیں۔آج پوری دنیاان دوائی پودوں سے بے حد فائدے حاصل کررہی ہے۔عالمی ادارہ صحت نے علاج کے لئے جڑی بوٹیوں کے اجزائے مؤثرہ نکال کراستعمال کرنے کی بجائے
کیا نادرا کا ڈیٹا قابلِ اعتبار ہے؟
شنید ہے کہ ابھی تک احساس پروگرام کے تحت دیئے جانے والے بارہ ہزار روپے، پہلے مرحلے میں اُن افراد کو دیئے گئے ہیں؛ جن کا نام بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام یا سابقہ ادوار میں کئے گئے، غربت کے حوالے سے مختلف سروے میں شامل تھا۔
’’کورونا وائرس سے پوری دنیا کی معیشت متاثر، کثیر الجہتی معاونت ناگذیر، ماہرین‘‘
کورونا وائرس کی وجہ سے ترقی پزیر اور ترقی یافتہ ملکوں کی معیشتیں شدید تنزلی کا شکار ہو رہی ہیں۔ 2008ء میں ہونے والی معاشی تنزلی کی نسبت کورونا وائرس کی وباء زیادہ متاثر کن ہے ۔اس کے اثرات سے چھوٹی معیشتوں کو محفوظ رکھنے
مقبول ترین
لاہور۔ کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈائون میں بھارت کے مختلف شہروں میں پھنسے80 پاکستانی شہری جبکہ پاکستان میں مقیم 114 بھارتی شہری واپس لوٹ گئے۔
پنجاب حکومت نے لاہور کے شمال میں نیا شہر بسانے کیلئے علیحدہ اتھارٹی کے قیام کا فیصلہ کیا ہے جس کے چیئرمین وزیراعلیٰ عثمان بزدار ہوں گے۔ پنجاب حکومت اتھارٹی کے قیام کیلئے آرڈیننس جاری کرے گی جو نیا شہر بسانے کے لیے کام کرے گی۔
نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کے چیئرمین نے کہا ہے کہ نجکاری کے باوجود کے الیکٹرک میں بہتری نہیں آ رہی۔ کے الیکٹرک نے گیارہ مہینے سے گرڈ اسٹیشنز کو اپ گریڈ نہیں کیا، اضافی بجلی اٹھانے کی صلاحیت نہیں۔
جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ قومی ادارے ایک پیج پر نہیں، سیاسی جماعتیں اس وقت ریاست کی بقا کی جنگ لڑ رہی ہیں۔ مولانا فضل الرحمان کا اے پی سی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اس وقت ملک

کرونا وائرس اور احتیاتی تدابیر
5 اگست کو جب بھارت کی پارلیمنٹ نے کشمیر کی آئینی خود مختیاری کو یکطرفہ اور غیر قانونی طور پر منسوخ کیا تقریباً 10 ہزار کشمیری جن میں بچے،بوڑھے اور خواتین سبھی شامل ہیں، کو ریاست سے باہر مختلف جیلوں میی رکھا گیا۔
ملک اس وقت ناگہانی آفات، بحرانوں،وباؤں اور آسمانی آفات کی زد میں ہے اورحالت جنگ کی سی کیفیت سے دوچار ہے۔ایک طرف مہلک کورونا وائرس تودوسری جانب ٹڈی دل کی ہولناک یلغارجاری و ساری ہے یوں کہیں کہ اللہ تعالٰی کی نا شکری کی بناء پرہم پرایک کے بعدایک عذاب مسلط ہو رہا ہے۔
ان دنوں پاکستان سمیت دنیاکے مختلف ممالک میں درجہ حرارت انتہائی زیادہ ہے ۔اس گرم موسم میں لُو اس وقت لگتی ہے جب جسم کا درجہ حرارت 40 ڈگری سیلسیئس یا اس سے بڑھ جائے۔ لُو لگ جانے کے بعد متاثرہ شخص کو فوری طبی امداد کی ضرورت ہوتی ہے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں