Thursday, 04 June, 2020
سپر پاورامریکہ
آج یہ کہتے ہوئے دل کر رہا ہے کہ مسلسل ہنستی رہوں کہ سپر پاورامریکہ۔۔۔ جی ہاں! وہی امریکہ جس نے افغانستان کو کھنڈرات میں بدل دیا وہی امریکہ جس نے عراق پر ایک عرصہ جنگ مسلط کیے رکھی، کبھی بمباری کر کے تو کبھی داعش کی شکل میں کیڑے مکوڑوں کی فوج بنا کے، عراق پر اپنا تسلط برقرار رکھنا چاہا۔
مہدویت، انسانیت کا روشن مستقبل

عورت کی آزادی۔۔۔ہم سے ہے
کبھی کبھی ہم اتنا کچھ کہنا چاہتے ہیں کہ من ہی من بہت کچھ کہ جاتے ہیں اور وہ سب کہنے کے لئے لب تو ساتھ دے رہے ہوتے ہیں لیکن زبان اخلاقیات اور اقدار و روایات کے تالوں میں ایسی جکڑی ہوتی ہے کہ جیسے قید و بند کی صعوبتیں کاٹ رہی ہو۔ہمبالآخر تھک ہار کر بیٹھ جاتے ہیں۔ ایک ہی بات سننے میں آتی ہیکہ کائنات کی رنگینی ہم سے ہے۔یعنی وجود زن سے،تو ہم ہیں کون؟
’’شہزادوں کی گرفتاریاں: کیا شاہ سلمان زندہ ہے؟‘‘
شاہ سلمان کے واحد زندہ بھائی احمد بن عبدالعزیز کا نام بھی سعودی عرب کے آئندہ ممکنہ حکمران کے طور پر سامنے آ رہا تھا۔ ذرائع کے مطابق احمد بن عبدالعزیز کو شاہی خاندان، دیگر اہم شخصیات اور کچھ مغربی طاقتوں کی بھی ممکنہ طور پر حمایت حاصل ہو سکتی تھی۔
رانگ سائیڈ
جب سچ جھوٹ کی تفریق ختم ہوجائے تو رانگ سائیڈ چلنے والے شرمندہ نہیں ہوتے اور غاصب عزت دار قرار پاتے ہیں۔ ہمارے یہاں ڈھٹائی ایک صلاحیت تصور کی جاتی ہے آپ نے اکثر سڑک پر چلتے وقت رانگ سائیڈ سے آنیوالی گاڑیوں اور موٹرسائیکلز کا سامنا کیا ہو گا۔
بدگمانی شر کی بنیاد ہے
عزیزان! ایک واقعہ ایک جوان کا جو کہ ایک شراب سے بھرا ہوا مرتبان اٹھا کر جا رہا تھا کہ راستے میں پیغمبر خدا ص سے ملاقات ہو گئی وہ جوان سخت پریشان ہو گیا کیونکہ اس وقت شراب کے حرام ہونے کا حکم آ چکا تھا۔
عشق اللہ ۔۔۔۔
وہ جو کہتے ہیں دانا: پہلے سلام پھر کلام،وہ درست اور بجا فرماتے ہیں۔ آخر بات سے بات بنانے کا ہنر بھی تو ایک سلام ہی سکھاتا ہے،تو کیوں نہ آج کی مجلس کا آغاز اچھی طرح سلام کر کہ کیا جائے، تو میرے پڑھنے والو! اسلام علیکم،امید رکھتی ہوں کہ
امریکی امن منصوبہ کی حقیقت
حال ہی میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے صہیونیوں کی جعلی ریاست اسرائیل کے وزیر اعظم نیتن یاہو کے ساتھ ملاقات میں میڈیا کے سامنے ایک امن منصوبہ کا اعلان کیا ہے جس کو مغربی ذرائع ابلاغ پر مغربی ایشیاء کے لئے امن پلان کا نام دے کر تشہیرکی گئی۔
عشق کرو تو خدا سے
عزیزان آپ کے سامنے مولانا روم کے فارسی کے اشعار ہیں ۔ رومیؒ اس میں ایک کہانی میں ایک عورت کا واقع بیان کرتا ہے جس کے پیچھے ایک اوباش مرد لگا ہوا تھا ۔اس کو اس عورت نے امتحان کے لئے ایک اور عورت کی طرف متوجہ کیا کہ وہ اس سے زیادہ خوبصورت ہے ۔
بھارت کے کشمیریوں پر بڑھتے مظالم اور یوم یکجہتی کشمیر کی اہمیت
تحریک آزادی کشمیر کئی ادوار پر محیط ہے جدوجہد آزادی نے کئی نشیب و فراز دیکھے ہیں19 جولائی 1947 پاکستان بننے سے قبل ہی کشمیریوں کی نمائندہ جماعت آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس نے ایک اجلاس منعقد کر کے قرار داد الحاق پاکستان منظور
استاد کی مٹھی میں ہے، میرا مستقبل
استاد،دنیا کا وہ معتبر ترین رشتہ ہے جو ماں باپ کے بعد بچے کے لیے سب سے زیادہ محترم،بھروسے مند اور شفقت و محبت کے احساس سے بھرپور ہوتا ہے،
پاکستانی عورت اور”میرے پاس تم ہو“
وفا اور جفا کی عجب کشمکش میں ہچکولے کھاتا دانش بالآخر اپنی محبت کا لاشہ اٹھائے جہان فانی سے کوچ کر گیا،
عقیدہ و عقیدت علامہ اقبال ؒ سیدۃ النساء العالمین سلام اللہ علیھا
وہ ھستی کہ جس کے آنے پر رسالت مآب صلی اللہ علیہ و الہ وسلم کھڑے ہو جاتے، دنیا میں کسی بھی عورت کو چند ایک مرتبہ ملتے جو اس کے رشتوں کی وجہ سے ہوتے جیسے بیٹی ہے تو باپ کیلئے رحمت ، زوجہ ہے تو شوہر کیلئے نصف ایمان ، اور اگر ماں ہے تو اپنے بچوں کیلئے جنت
عورت کب صحیح معنوں میں عورت ہے؟
عورت اردو کے چار حروف پر مبنی ان لفظوں کا بھی کیا خوب امتزاج ہے، کہ ع،عزت دیتا ہے،تو و،وفا کی علامت بن کر نکھرتا ہے،ر،راحت کا سبب بنتا ہے تورونق بھی بخشتا ہے، ت،تعمیل بجا لا کرتعریف میں پھولے نہیں سماتا، ایسی ہے عورت جو عزت کی مورت ہو تو باوفا کہلاتی ہے اور جب وفا داری کی چمک رونق بخشتی ہے تو خوب تعریف سمیٹتی ہے۔
سوشل میڈیا، سیاسی پارٹیاں اور وضاحتیں
کی سڑک کے کنارے ایک ہوٹل میں چائے پینے کے لیے رکا تو ایک مقامی صحافی دوست سے ملاقات ہوگئی جنہیں سب شاہ جی کہتے ہیں سلام دعا کے بعد شاہ جی سے پوچھا کہ ٹیکنالوجی کی وجہ سے پاکستان کتنا تبدیل ہوچکا ہے تو کہنے لگے کہ سوشل میڈیا کی وجہ سےعدم برداشت میں بہت اضافہ ہوا ہے۔
ماں باپ کی آغوش میں کھلتے ہیں گلاب۔۔۔۔۔
میرے پڑھنے والو،میں ایک عام سی،نا سمجھ ایک الہڑ سی لڑکی ہوا کرتی تھی، بات بات پہ رو دینا تو جیسے میری فطرت کا حصہ تھا، اور پھربات بے بات ہنسنا میری کمزوری، یہ لڑکی دنیا کے سامنے وہی کہتی اور وہی کرتی تھی جو یہاں کے لوگ سن اور سمجھ کر خوش ہوتے تھے
جنت کی چڑیا۔۔۔۔میری ماں۔۔۔۔
ماں۔۔۔۔مجھے معلوم تھا کہ آپ میرے اس عارضی دنیا میں واپس آنے کے لیے کتنی پرجوش تھیں۔۔۔۔۔یہ لیں، آج آپ کی دیرینہ خواہش پوری کیے دے رہی ہوں۔۔۔۔ارے دیرینہ یوں بولا ہے کہ جب سے میرا آپ کا ساتھ چھوٹا، وہ بندھن ٹوٹا جس نے مجھے آپ کی سانسوں کی ڈور سے باندھ رکھا تھا،تب سے محسوس ہونے لگا کہ اب مجھ میں کچھ باقی نہیں رہا۔
مقبول ترین
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا ہے کہ لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر کچھ عرصے سے صورتحال بہت تشویشناک ہے، بھارت آگ سے نہ کھیلے، فوجی مہم جوئی کے نتائج ناقابل کنٹرول ہوں گے۔
اسلام آباد: یوٹیلٹی اسٹورکارپوریشن آف پاکستان نے اس سال تاریخ کی سب سے زیادہ سیل کی ہے۔ یوٹیلٹی اسٹورنے 22 ارب روپے کی ریکارڈ سیل کی ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے ہمراہ آئی ایس آئی ہیڈ کوارٹرز کا دورہ کیا ہے جہاں انھیں اہم امور پر بریفنگ دی گئی۔ میڈیا کے مطابق وفاقی وزرا شاہ محمود قریشی، اسد عمر اور معاون خصوصی ڈاکٹر معید یوسف بھی ہمراہ تھے۔
مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی شوکت چیمہ کورونا وائرس کےباعث انتقال کرگئے۔ پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ (پی کےایل آئی) لاہور انتظامیہ کے مطابق ممبر صوبائی اسمبلی شوکت چیمہ گذشتہ کئی دنوں سے کورونا کے باعث زیر علاج تھے اور عید کے روز

کرونا وائرس اور احتیاتی تدابیر
آج یہ کہتے ہوئے دل کر رہا ہے کہ مسلسل ہنستی رہوں کہ سپر پاورامریکہ۔۔۔ جی ہاں! وہی امریکہ جس نے افغانستان کو کھنڈرات میں بدل دیا وہی امریکہ جس نے عراق پر ایک عرصہ جنگ مسلط کیے رکھی، کبھی بمباری کر کے تو کبھی داعش کی شکل میں کیڑے مکوڑوں کی فوج بنا کے، عراق پر اپنا تسلط برقرار رکھنا چاہا۔
علامہ محمداقبال رحمۃ اللہ تعالی علیہ نے فرمایا ہے کہ”ثبات ایک تغیرکو ہے زمانے میں“،گویا اس آسمان کی چھت کی نیچے کسی چیز کو قرارواستحکام نہیں۔تاریخ گواہ ہے کہ اس زمین کا جغرافیہ ایک ایک صدی میں کئی کئی مرتبہ کروٹیں بدلتارہا ہے۔سائنس کی بڑھتی ہوئی رفتار کے ساتھ جغرافیے کی تبدیلی کا عمل بھی تیزتر ہوتاجارہاہے،چنانچہ گزشتہ ایک صدی نے تین بڑی بڑی سپر طاقتوں کے ڈوبنے کا مشاہدہ کیا،
نظریہ مہدویت ایسا موضوع ہے، جو صدیوں سے انسانوں کے درمیان زیر بحث رہا ہے۔ اس اعتقاد کے ساتھ انسان کا مستقبل روشن ہے، یہ عقیدہ کسی ایک قوم، کسی فرقے یا کسی مذہب کے ساتھ مخصوص نہیں ہے بلکہ مہدویت ایک ایسی عالمگیر حکومت کا نام ہے کہ جس کی بنیاد تمام انسانوں کے مابین عدل و انصاف اور اخلاق و محبت پر ہوگی۔ مہدویت ایسی آواز ہے، جو کہ ہر روشن خیال انسان کے اندر فطری طور پر موجود ہے۔ ایسی امید ہے، جو زندگی کو تروتازہ اور غم و اندیشہ سے دور کرکے نور الٰہی کی طرف لے جاتی ہے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں