Wednesday, 29 January, 2020
اشتہارات کی پالیسی

مبصر ڈاٹ کام ایک بین الاقوامی نیوز ویب سائیٹ ہے۔ادارہ نے اشتہارات کے لئے باقاعدہ ایک جگہ مخصوص رکھی ہوئی ہے تاکہ دنیا بھر میں پھیلے ہوئے قارئین اور سامعین کرام اس سے مستفید ہو سکیں۔ مبصر ڈاٹ کام پر اشتہارات شائع کرنے کے لئے جو شرائط مرتب کی گئی ہیں وہ درج ذیل ہیں۔

1)  تمام اشتہارات نیک نیتی سے شائع کئے جاتے ہیں تاہم تکنیکی یا مواصلاتی خرابی کے باعث کسی بھی غلطی کا ادارہ ذمہ دار نہیں ہو گا۔انتظامیہ کسی اشتھار کے غیر حقیقی ہونے سے متعلق کوئی ذمہ داری نہیں لیتی۔

2)  تمام اشتہارات روزانہ، ہفتہ، ماہانہ اور سالانہ بنیادوں پر بک کرائے جا سکتے ہیں۔

3)  اوور رائیٹنگ اور مشکوک الفاظ والے مسودے کے غلط ہونے کی شکایت قابل قبول نہ ہو گی۔

4)  ایڈورٹائزنگ ایجنسیاں تام اشتھارات کی ڈیزائینگ کی خود ذمہ دار ہو گی۔

5)  غلط اشتھار شائع ہونے کی صورت میں تین دن کے اندر اندر تحریری شکایت درج کرنا ضروری ہے ورنہ ادارہ ذمہ دار نہ ہو گا۔

6)  تمام اشتھارات کی بکنگ ایڈوانس ادائیگی یا پوسٹ ڈیٹیڈ چیک کے ذریعے ہو گی۔

7)  تمام کاروباری لین دین پاکستانی کرنسی یا امریکن ڈالرز کے ذریعے کی جائے گی۔

8)  اشتہارات کے سائز میں تبدیلی نہیں ہو گی اور اشتھارات کی زبان سنجیدہ اور کاروباری ہو گی۔

9)  اگر کسی وجہ سے کوئی اشتہار شائع ہونے سے رہ گیا تو ادارہ اس کو دوسرے دن شائع کرنے کا مجاز ہو گا۔

10)  ادارہ کسی بھی اشتھار کو روکنے کا مجاز ہو گا۔ مشتہرین سے پیشگی اجازت لینے کا پابند نہیں ہو گا۔

11)  تمام اشتہارات براہ راست ہیڈآفس، ای میل یا دنیا بھر میں پھیلے ہوئے ہمارے نامہ نگاروں کے ذریعے بک کرائے جا سکتے ہیں۔

مقبول ترین
عرب میڈیا کے مطابق سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی صدر کی جانب سے مشرق وسطیٰ میں اسرائیل اور فلسطین کے درمیان تنازع کے خاتمے کے لیے امن منصوبہ ’ ڈیل آف سینچری‘ پیش کرنے اور فریقین کے درمیان امریکی سرپرستی میں
فلسطین کے صدر محمود عباس نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشرق وسطیٰ کے امن منصوبے کو ’’صدی کا تھپڑ‘‘ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا برطانوی خبررساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر کے اعلان کے بعد سے غزہ
دفتر خارجہ نے ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کے حالیہ متشدد بیانات کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس کا نوٹس لے۔ دفتر خارجہ کی جانب سے جاری اہم بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی انتہا پسند بیانیہ
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ جسے امن منصوبے کا نام دے رہے ہیں وہ دراصل” امن کے خلاف جنگ“ (War Against Peace )ہے ۔اسے عالمی قوانین کی

میرے پاس تم ہو ۔۔۔۔ کیا ہوگا؟
وفا اور جفا کی عجب کشمکش میں ہچکولے کھاتا دانش بالآخر اپنی محبت کا لاشہ اٹھائے جہان فانی سے کوچ کر گیا،
وہ ھستی کہ جس کے آنے پر رسالت مآب صلی اللہ علیہ و الہ وسلم کھڑے ہو جاتے، دنیا میں کسی بھی عورت کو چند ایک مرتبہ ملتے جو اس کے رشتوں کی وجہ سے ہوتے جیسے بیٹی ہے تو باپ کیلئے رحمت ، زوجہ ہے تو شوہر کیلئے نصف ایمان ، اور اگر ماں ہے تو اپنے بچوں کیلئے جنت
عورت اردو کے چار حروف پر مبنی ان لفظوں کا بھی کیا خوب امتزاج ہے، کہ ع،عزت دیتا ہے،تو و،وفا کی علامت بن کر نکھرتا ہے،ر،راحت کا سبب بنتا ہے تورونق بھی بخشتا ہے، ت،تعمیل بجا لا کرتعریف میں پھولے نہیں سماتا، ایسی ہے عورت جو عزت کی مورت ہو تو باوفا کہلاتی ہے اور جب وفا داری کی چمک رونق بخشتی ہے تو خوب تعریف سمیٹتی ہے۔

کیا تعلیمی اداروں میں لسانی اور قومی بنیاد پر کونسلز بنانے کی اجازت ہونی چاہیے ؟
نتائج ملاحظہ کریں
پاکستان