Sunday, 26 May, 2019
امریکہ، ایران کے علاقائی تعلقات کو ختم نہیں کرسکتا، حسن روحانی

امریکہ، ایران کے علاقائی تعلقات کو ختم نہیں کرسکتا، حسن روحانی

تہران ۔ ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ امریکا باز نہ آیا تو دنیا کو خلیجی ممالک سے پٹرول کی سپلائی کو بند کردیں گے۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی صدر حسن روحانی نے صوبے سمنان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکا اچھی طرح جان لے اگر ایران سے چھیڑ چھاڑ کی گئی تو خلیجی ممالک سے دنیا کو پٹرول کی سپلائی ممکن نہیں رہے گی۔

روحانی نے امریکہ کو مخاطب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ایران اپنا تیل فروخت کرتا ہے اور آئندہ بھی کرتا رہے گا لہذا اگر امریکہ کسی دن ایرانی تیل کی فروخت کو روکنا چاہے تو وہ جان لے کہ خلیج فارس سے کسی کا تیل نہیں گزر سکے گا.

انہوں نے ایران کے عالمی تعلقات کو متاثر کرنے کی امریکی کوششوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آج ایران کے اپنے پڑوسی ممالک عراق، ترکی، جمہوریہ آذربائیجان، روس، قازقستان، ترکمانستان، افغانستان، پاکستان، عمان، قطر اور کویت کے ساتھ گہرے اور دوستانہ تعلقات قائم ہیں اور رہیں گے بھی، لہذا امریکہ ایران اور علاقائی ممالک کے درمیان تعلقات کو متاثر نہیں کرسکتا۔

ایرانی صدر نے کہا کہ امریکہ جان لے ایرانی عوام اپنے عالمی اور علاقائی ثقافتی، اقتصادی اور پالیسی تعلقات کو تحفظ فراہم کرنا جانتے ہیں اور ہم اپنے اسلامی اور عالمی تعلقات کو فروغ دیں گے.

حسن روحانی نے عالمی میڈیا کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ امریکا کی جانب سے عائد پابندیوں پر ایران کی معیشت کی صورت حال کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جا رہا ہے، ایرانی معیشت مستحکم ہے اور کوئی بحرانی کیفیت نہیں۔

ایرانی صدرنے اس سے قبل رواں برس جولائی میں بھی سوئٹزرلینڈ کے دورے کے دوران دنیا کو پٹرول کی سپلائی بند کرنے کی دھمکی تھی تاہم اس پر عمل درآمد نہیں کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ امریکا ایران پر دہشت گردی کا الزام عائد کرتے ہوئے جوہری توانائی کے عالمی معاہدے سے دستبردار ہوگیا تھا اور ایران پر معاشی پابندیاں عائد کردی تھیں تاہم دیگر عالمی قوتوں نے ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کو برقرار رکھا تھا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  98830
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق کابل کے مغربی علاقے میں ایک درس گاہ موعود اکیڈمی کے باہر زور دار بم دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 25 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہو گئے، ہلاک و زخمی ہونے والوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔
مرکزی حکومت کی طرف سے تجویز کردہ تین طلاق بل کو شریعت کے خلاف قرار دیتے ہوئے مسلم پرسنل لا بورڈ نے کہا ہے کہ قانون کے ذریعے مسلمانوں کے طلاق دینے کے حق کو چھیننے کی کوشش کی جا رہی ہے۔
افغانستان کے نائب وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر کارروائی شروع کردی ہے، جائے وقوعہ سے فائرنگ کی شدید آوازیں سنائی دے رہی تھیں۔
حسن روحانی کا کہنا تھا کہ ’’پہلے صیہونیوں سے غلط دوستی ترک کریں اور دوسرے یمن پر غیر انسانی بمباری بند کرے۔ ہم سعودی عرب سے اپنے تعلقات بحال کر سکتے ہیں اور ان سے اچھا رشتہ رکھ سکتے ہیں۔‘‘

مزید خبریں
بھارت میں شدید گرمی کے باعث مرنے والوں کی تعداد 134ہوگئی بھارتی میڈیا کے مطابق شدید گرمی کے باعث بھارت کی ریاست تلنگانہ ،آندھرا پردیش اور اڑیسہ میں مرنے والوں کی تعداد 134 ہوگئی ہے۔
افغان حکومت نے باچاخان یونیورسٹی حملے میں افغان سرزمین استعمال ہونے کا امکان مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان نے کسی دہشت گرد گروپ کو پناہ نہیں دی جب کہ افغانستان کسی دہشت گرد گروپ کی حمایت بھی نہیں کرتا۔

مقبول ترین
قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی آڈیو ویڈیو اسکینڈل کے مرکزی کرداروں کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کردیا گیا۔ نیب کی طرف سے دائر کیا جانے والا ریفرنس 630 صفحات پر مشتمل ہے جس میں آڈیو
لاڑکانہ میں چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹوزرداری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے رتو ڈیرو میں بچوں سمیت سیکڑوں افراد کے ایڈز مبتلا ہونے کے مسئلے پر گفتگو کی۔ انہوں نے کہا کہ ایچ آئی وی اور ایڈز میں بہت فرق ہے، ایچ آئی وی کا علاج نہ ہو تو دس
اسلام آباد میں وفاقی وزراء اور چیئرمین ایف بی آر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے عبدالحفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ موجود حکومت نے اقتدار سنبھالا تو معاشی حالت بہت بری تھی، جب حکومت آئی تو قرضہ 31 ہزار ارب روپے سے زیادہ تھا، برآمدات گر رہی تھیں
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی اور خطے میں استحکام کے لیے پاکستان کے مثبت کردار کو سراہا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں