Friday, 18 October, 2019
ایران، ہمیشہ برادر ملک پاکستان اور اس کے عوام کے ساتھ کھڑا ہے، صدر روحانی

ایران، ہمیشہ برادر ملک پاکستان اور اس کے عوام کے ساتھ کھڑا ہے، صدر روحانی

تہران ۔ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے سیکورٹی کو خطے کی حالیہ صورتحال کا اہم مسئلہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، پاکستان کی سیکورٹی کو اپنی سیکورٹی سمجھتا ہے. انھوں نے یہ بات  پیر کے روز تہران میں پاکستان کے چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی اور ان کے ہمراہ پارلیمانی وفد کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی. پاکستان کے چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے ڈاکٹر روحانی کوایران کا  دوسری مرتبہ صدر بننے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکسانی عوام آپ کو اپنا ذہین اور قابل اعتماد دوست سمجھتے ہیں.

تفصیلات کے مطابق ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، پاکستان کی سیکورٹی کو اپنی سیکورٹی سمجھتا ہے. اس موقع پر انہوں نے کہا کہ پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کو فروغ دینا اسلامی جمہوریہ ایران کی خارجہ پالیسی کا اہم جز ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران، ہمیشہ اپنے دوست اور برادر ملک پاکستان اور اس کے عوام کے ساتھ کھڑا ہے اور ہم دونوں ملکوں کے درمیان باہمی تعلقات کے فروغ کا خیرمقدم کرتے ہیں. صدر روحانی نے کہا کہ ایران اور پاکستان کی اقوام کے درمیان ثقافتی اور تاریخی مشترکات کے تناظر میں ایک دوسرے کے مفادات کے حصول کے لئے باہمی تعاون کو مزید فروغ دینا چاہئے.

انہوں نے دونوں ممالک سے مطالبہ کیا کہ خطے میں قیام امن و سلامتی بالخصوص مشترکہ سرحدوں کی حفاظت کے لئے مشترکہ تعاون کو مزید بڑھائیں. دہشتگردی کو خطے کا سب سے بڑا چیلنج قرار دیتے ہوئے ایرانی صدر نے علاقائی ممالک سے مطالبہ کیا کہ دہشتگردی کے خاتمے کے لئے اجتماعی تعاون کریں.

انہوں ںے اس بات پر زور دیا کہ ایران اور پاکستان کے درمیان انسداد دہشتگردی اور علاقائی سیکورٹی کے حوالے سے باہمی مشاورت اور تعاون کی فضا کو مزید وسعت دینی ہوگی. ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ ایران اور پاکستان گہری اسٹریٹجک پوزیشن کے مالک ہیں لہذا دونوں ممالک کی ترقی اور خوشحالی ایک دوسرے کے لئے اہم ہے جس کی وجہ سے خطے میں قیام امن بھی مضبوط ہوگا.

انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، برادر ملک پاکستان کے ساتھ تمام شعبوں بالخصوص ٹیکنالوجی، ثقافتی، تعلیمی اور توانائی کے شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو بڑھانے کے لئے آمادہ ہے. صدر روحانی نے ایران اور پاکستان کے درمیان موجودہ تعاون کے معاہدوں کے فوری نفاذ کا مطالبہ کیا اور مزید کہا کہ بینکاری تعاون کی بحالی سے دونوں ممالک کے درمیان تجارتی اور اقتصادی سرگرمیوں کو قابل قدر فروغ ملے گا.

اس ملاقات میں پاکستان کے چیئرمین سینیٹ نے ڈاکٹر روحانی کو دوسری مرتبہ ایران کا صدر بننے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکسانی عوام آپ کو اپنا ذہین اور قابل اعتماد دوست سمجھتے ہیں. میاں رضا ربانی نے مزید کہا کہ پاک،ایران تعلقات نا صرف مشترکہ تاریخ اور ثقافتت میں جڑے ہوئے ہیں بلکہ دونوں ممالک مختلف علاقائی اور بین الاقوامی معاملات پر یکساں مؤقف رکھتے ہیں.

انہوں نے کہا کہ پاکستان، ایران کے ساتھ روابط کے فروغ کے لئےکسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرے گا اور اس مقصد کے لئے ہم اقتصادی، پارلیمانی، توانائی، سیکورٹی اور انسداد دہشتگردی کے شعبوں میں باہمی تعاون کو بڑھانے کے خواہاں ہیں.

میاں رضا ربانی نے کہا کہ پاکستان، مشترکہ سرحدوں میں قیام امن و سلامتی کو اہم سمجھتا ہے اور اس حوالے سے پاک،ایران اعلی سرحدی کمیشن کا اجلاس جلد مستقبل میں منعقد ہوگا.

انہوں نے مشکل حالات میں پاکستانی عوام کی مدد کرنے پر حکومت اسلامی جمہوریہ ایران اور ایرانی قوم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان دونوں ممالک کے درمیان موجودہ معاہدوں پر عمل درآمد کو یقینی بنائے گا.

یاد رہے کہ پاکستان کے چیئرمین سینیٹ ایک پارلیمانی وفد کی قیادت میں جمعہ کے روز ایران کے پانچ روزہ دورے پر پہنچے. میاں رضا ربانی نے ایران کے 12ویں صدر ڈاکٹر حسن روحانی کی تقریب حلف برداری میں شرکت کی جس میں دنیا کے 100 سے زائد ممالک کے رہنما اور اعلی حکام بھی شریک تھے.

پاکستانی چیئرمین سینیٹ نے اس کے علاوہ گزشتہ روز ایرانی اسپیکر علی لاریجانی، گارڈین کونسل آیت اللہ احمدی جنتی اور چیف جسٹس آیت اللہ صادق آملی لاریجانی کے ساتھ بھی ملاقاتیں کیں.

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  3795
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خطے میں امن اور استحکام کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ایرانی صدر سے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ پاکستان اور
افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک شادی کی تقریب میں خودکش دھماکے کے نتیجے میں 63 افراد جاں بحق اور 180 سے زائد زخمی ہوگئے۔ افغان میڈیا کے مطابق کابل میں شادی کی تقریب کے دوران خودکش دھماکا ہوگیا جس کے نتیجے میں 63 افراد
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے مغربی صوبے فراہ میں ہرات ہائی وے پر نصب بم اُس وقت دھماکے سے پھٹ گیا جب ایک مسافر بردار بس وہاں سے گزر رہی تھی جس کے نتیجے میں بس میں سوار 34 مسافر ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے۔
افغانستان میں وزارت دفاع اور فٹبال فیڈریشن کی عمارتوں کے نزدیک خود کش حملے میں 10 افراد ہلاک اور 68 زخمی ہوگئے جبکہ جوابی کارروائی میں 2 حملہ آور بھی مارے گئے۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق دارالحکومت کابل میں واقع وزارت دفاع

مزید خبریں
بھارت میں شدید گرمی کے باعث مرنے والوں کی تعداد 134ہوگئی بھارتی میڈیا کے مطابق شدید گرمی کے باعث بھارت کی ریاست تلنگانہ ،آندھرا پردیش اور اڑیسہ میں مرنے والوں کی تعداد 134 ہوگئی ہے۔
افغان حکومت نے باچاخان یونیورسٹی حملے میں افغان سرزمین استعمال ہونے کا امکان مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان نے کسی دہشت گرد گروپ کو پناہ نہیں دی جب کہ افغانستان کسی دہشت گرد گروپ کی حمایت بھی نہیں کرتا۔

مقبول ترین
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ یہ پہلی اسمبلی ہے جو’ڈیزل‘ کے بغیر چل رہی ہے اگر فضل الرحمان کے لوگ میرٹ پر ہوئے تو انہیں بھی قرضے دیے جائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے نوجوانوں کے لیے ’کامیاب جوان پروگرام‘ کا افتتاح کردیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پنجاب اور خیبر پختونخوا کے وزرائے اعلیٰ اورتین گورنرز نے شرکت کی۔ حکومت نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کے لیے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے
اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ نوکریاں حکومت نہیں نجی سیکٹر دیتا ہے یہ نہیں کہ ہر شخص سرکاری نوکر ی ڈھونڈے ، حکومت تو 400 محکمے ختم کررہی ہے مگرلوگوں کا اس بات پر زور ہے کہ حکومت نوکریاں دے۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خطے میں امن اور استحکام کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ایرانی صدر سے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ پاکستان اور

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں