Tuesday, 19 November, 2019
کابل، افغان خفیہ ادارے کے ٹریننگ سینٹر پر داعش کا حملہ

کابل، افغان خفیہ ادارے کے ٹریننگ سینٹر پر داعش کا حملہ

کابل،افغانستان کے دارالحکومت کابل میں دہشت گردوں نے افغان خفیہ ایجنسی نیشنل ڈائریکٹریٹ آف سیکیورٹی (این ڈی ایس) کے ٹریننگ سینٹر پر حملہ کردیا تاہم افغان سیکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں حملہ آور ہلاک ہوگئے۔

خبر رساں اداروں کے مطابق عالمی شدت پسند تنظیم داعش نے کابل میں ٹریننگ سینٹر پر حملے کی ذمہ داری قبول کی جہاں پولیس اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ ہوئی۔

افغان وزارتِ داخلہ کے ترجمان نجیب دانش نے غیر ملکی خبر رساں ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ کچھ مسلح افراد تقریباً صبح 10 بجے این ڈی ایس کے ٹریننگ سینٹر میں زیر تعمیر عمارت میں داخل ہوئے تھے۔

افغانستان کے نائب وزیر داخلہ نصرت رحیم کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر کارروائی شروع کردی ہے اور جائے وقوعہ سے بھاری اور چھوٹے ہتھیاروں سے فائرنگ کی شدید آوازیں سنائی دے رہی تھیں۔

وزارتِ داخلہ کے ترجمان نے بتایا کہ داعش کی جانب سے کیے گئے اس حملے میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔

کابل پولیس کے ترجمان بصیر مجاہد نے اے ایف پی کو بتایا کہ دہشت گردوں کے خلاف آپریشن ختم کیا جاچکا ہے جس میں 2 دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا جبکہ 2 پولیس اہلکار اس آپریشن میں زخمی ہوئے۔

دوسری جانب داعش کے میڈیا ادارے عمق نے دعویٰ کیا کہ کابل میں افغان خفیہ ادارے کے دفتر پر حملہ کرنے والوں کی تعداد 2 تھی۔

افغان سیکیورٹی کے اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا جبکہ جائے وقوعہ پر میڈیا سمیت کسی بھی شخص جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔

خیال رہے کہ رواں برس افغانستان بالخصوص دارالحکومت کابل میں طالبان اور داعش کی جانب سے سیکیورٹی فورسز پر کئی جان لیوا حملے دیکھنے میں آئے ہیں جبکہ اس کے علاوہ جنگ زدہ ملک میں مساجد کو بھی نشانہ بنایا گیا۔

شمالی افغانستان میں قائم افغان فوجی اڈے پر طالبان نے حملہ کر کے وہاں موجود 150 سے زائد فوجی اہلکاروں کو ہلاک و زخمی کردیا تھا۔

یاد رہے کہ افغانستان کے دارالحکومت کابل میں جرمن سفارت خانے کے قریب کار بم دھماکے کے نتیجے میں 90 افراد ہلاک جبکہ 400 افراد زخمی ہوگئے۔

افغانستان کے جنوب مشرقی صوبے پکتیا میں قائم پولیس ٹریننگ سینٹر پر ہونے والے خود کش حملے اور مسلح جھڑپ کے نتیجے میں 32 افراد ہلاک اور 200 سے زائد زخمی ہوگئے۔

ہلاک ہونے والوں میں صوبے پکتیا کے پولیس چیف طوریالانی عبدیانی بھی شامل تھے۔

17 دسمبر کو افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں طالبان کی جانب سے پولیس چیک پوسٹ پر کیے گئے حملے میں 11 اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  24976
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
سیکیورٹی اہلکار کی فائرنگ سے سی آر پی ایف کے 4 اہلکار موقع پر ہی ہلاک جبکہ ایک اسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) زخمی ہوگیا
افغانستان کے دارالحکومت کابل اور صوبے قندھار میں مسلح افراد نے دو مختلف حملوں میں امام بارگاہ اور سیکیورٹی چیک پوسٹ کو نشانہ بنایا ہے جس کے نتیجے میں 4 سیکیورٹی اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔ امام بارگاہ میں تاحال مسلح چھڑپیں جاری ہیں۔
ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے سیکورٹی کو خطے کی حالیہ صورتحال کا اہم مسئلہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، پاکستان کی سیکورٹی کو اپنی سیکورٹی سمجھتا ہے. انھوں نے یہ بات پیر کے روز تہران میں پاکستان کے چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی
بھارت کے مغربی اور شمال مشرقی علاقوں میں شدید بارشوں کے بعد آنے والے سیلاب نے بڑے پیمانے پر تباہی مچادی ہے۔ ان علاقوں میں سیلاب کے باعث مرنے والوں کی تعداد 700 تک جاپہنچی ہے۔

مزید خبریں
بھارت میں شدید گرمی کے باعث مرنے والوں کی تعداد 134ہوگئی بھارتی میڈیا کے مطابق شدید گرمی کے باعث بھارت کی ریاست تلنگانہ ،آندھرا پردیش اور اڑیسہ میں مرنے والوں کی تعداد 134 ہوگئی ہے۔
افغان حکومت نے باچاخان یونیورسٹی حملے میں افغان سرزمین استعمال ہونے کا امکان مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان نے کسی دہشت گرد گروپ کو پناہ نہیں دی جب کہ افغانستان کسی دہشت گرد گروپ کی حمایت بھی نہیں کرتا۔

مقبول ترین
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ عدلیہ طاقتور اور کمزور کےلیے الگ قانون کا تاثر ختم کرے۔ ہزارہ موٹروے فیز 2 منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پچھلے دنوں کنٹینر
لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالتے کا حکم دیتے ہوئے انہیں 4 ہفتے کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت دیدی جبکہ عدالت کی طرف سے کوئی گارنٹی نہیں مانگی گئی۔
وفاقی دارالحکومت اسلام آباداور کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں جمعیت علماء اسلام (ف) کے کارکنوں نے دھرنے دے کر سڑکیں بلاک کردیں۔ مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ کے ’پلان بی‘ کے تحت ملک بھر میں دھرنوں کا سلسلہ
وفاقی حکومت اور نیب کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ لاہور ہائیکورٹ کو درخواست پر سماعت کا اختیار نہیں جبکہ نواز شریف کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ عدالت کے پاس کیس سننے کا پورا اختیار ہے۔ عدالت نے درخواست کو قابل سماعت قرار

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں