Friday, 14 August, 2020
بابری مسجد کی زمین پر بھارتی تنظیم کا مندر قائم کرنے کا اعلان

بابری مسجد کی زمین پر بھارتی تنظیم کا مندر قائم کرنے کا اعلان

نئی دہلی ۔ بھارت میں ایودھیا میں بابری مسجد کی زمین کے تنازع سے متعلق مقدمے کی سپریم کورٹ میں آخری سماعت سے قبل ملک کی بڑی قوم پرست تنظیم راشٹریہ سوائم سویک ساینگ (آر ایس ایس) نے اعلان کیا ہے کہ اس متنازع زمین پر صرف رام مندر تعمیر کیا جائے گا۔ معروف مسلم رہنما اور آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی ایگزیکٹو کمیٹی کے رکن اسدالدین اویسی کا کہنا ہے کہ یہ ماحول کو خراب کرنے کی دانستہ سازش ہے،امید ہے سپریم کورٹ اس معاملے کا نوٹس لے گی۔  بھارتی سپریم کورٹ میں اس مقدمے کی آخری سماعت 5 دسمبر کو متوقع ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایک صدی سے زائد عرصے سے بھارتی ریاست اتر پردیش میں ایودھیا کے مقام پر ہندو اور مسلمانوں کے درمیان بابری مسجد کے معاملے پر جھگڑا چل رہا ہے۔ ہندو دعویٰ کرتے ہیں کہ مسجد ان کے بھگوان رام کی جائے پیدائش کی جگہ پر ہے اور اسے مسلمان بادشاہ بابر نے 1582 میں مندر کو تباہ کرکے تعمیر کیا تھا۔

خیال رہے کہ الہ آباد ہائی کورٹ کے اس فیصلے کو جس میں انہوں نے 2.77 ایکڑ متنازع اراضی کو مرکزی دیوتا رام لالا، سنی وقف اور نرموہی اکھاڑا کے درمیان تقسیم کرنے کا حکم دیا تھا جسے چیلنچ کیا گیا۔

یاد رہے کہ 25 برس قبل 6 دسمبر 1992 کو بابری مسجد کو زمین بوس کردیا گیا تھا، جس کے نتیجے میں ہونے والے فسادات میں 2 ہزار لوگ مارے گئے تھے۔

مسلمانوں کا کہنا تھا کہ وہ دسمبر 1949 تک اس مسجد میں نماز پڑھتے تھے جبکہ کچھ بتوں کو مسجد میں رکھا گیا تھا، برطانوی حکمران نے 1859 میں تنازعات کو روکنے کے لیے عبادت کے لیے حصہ تیار کیا تھا جبکہ بھارتی حکومت کی جانب سے 1949 میں اس کے دروازے بند کردیے گئے تھے۔

1984 میں ہندؤوں کی جانب سے مندر تعمیر کرنے کے لیے ایک کمیٹی قائم کی گئی جبکہ دو برس بعد عدالت کے حکم پر متنازع مسجد کے دروازے ہندؤوں کی عبادت کے لیے کھول دیے گئے، جس پر مسلمانوں نے بابری مسجد ایکشن کمیٹی کے ساتھ احتجاج شروع کیا۔

2014 میں بھارتی جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کے سانگھ خاندان کی جانب سے ایودھیا میں مندر کی تعمیر کے لیے ریلی نکالی گئی جبکہ اتر پریش کے لیے تیار کیے گئے انتخابی منشور میں بھی اس بات کا وعدہ کیا گیا۔

ان سرگرمیوں کے بعد حکمران جماعت بی جے پی کو رواں سال اتر پردیش میں بڑی کامیابی ملی جس کے نیتجے میں ادتیا ناتھ کو وزیر اعلیٰ کے طور پر منتخب کیا گیا جس کے بعد مندر کی تعمیر کے معاملے کو مزید فروغ ملا۔

واضح رہے کہ ادتیا ناتھ ایک متنازع ہندو مذہبی رہنما ہیں جو مسلمانوں کے خلاف بیانات کی وجہ سے جانے جاتے ہیں۔

گزشتہ ہفتے آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھگوت نے تمام شک و شہبات کو دور کرتے ہوئے اعلان کیا کہ ایودھیا میں مندر کی تعمیر اب حقیقت بننے جارہی ہے۔

معروف مسلم رہنما اور آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی ایگزیکٹو کمیٹی کے رکن اسدالدین اویسی کا کہنا تھا کہ یہ قدم ماحول کو خراب کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ ماحول کو خراب کرنے کی دانستہ سازش ہے، کوئی ایسا بیان کیسے دے سکتا جب کہ معاملہ سپریم کورٹ میں ہے اور آر ایس ایس اسے ایمان کا معاملہ کہہ رہی ہے جو خطر ناک ہے، امید ہے سپریم کورٹ اس معاملے کا نوٹس لے گی۔

اس سے قبل بھارتی چیف جسٹس جے ایس کھیہر نے مشورہ دیا تھا کہ اس تنازع میں شامل پارٹیاں عدالتی جنگ لڑنے کے بجائے اس معاملے کا مذاکرات کے ذریعے پر امن حل نکالیں۔

صدیوں پرانے اس معاملے میں ایک نیا موڑ اس وقت پیش آیا جب ایک شیعہ وقف بورڈ مسجد کے نئے دعویدار کے طور پر سامنے آئے، انہوں نے دعویٰ کیا کہ سنی بادشاہ بابر کی فوج کے کمانڈر مق بقی شیعہ تھے، جنہوں نے یہ مسجد تعمیر کی تھی۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  66572
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
چینی اور بھارتی افواج کے درمیان متنازع علاقے لداخ میں جھڑپ کے بعد کشیدگی میں اضافہ ہوگیا ہے۔ چینی فوج نے بھارتی فوجی دستے کا اسلحہ بھی قبضے میں لے لیا تاہم مذاکرات کے بعد انہیں رہا کردیا گیا۔
کورونا وائرس کی وباء نے دنیا بھر میں اپنے پنجے گاڑے ہوئے ہیں، اس وباء سے دو سو زائد ممالک متاثر ہو چکے ہیں۔ بھارت سے ایک خبر آئی ہے جہاں پر بھارتی دفاعی حکام نے ممبئی کے ایک بحری اڈے پر کورونا وائرس وبا پھیلنے کی تصدیق کی ہے۔
طالبان نے افغان حکومت کی جانب سے تشکیل دی گئی 21 رکنی ٹیم کو مسترد کرتے ہوئے انٹرا افغان مذاکرات سے انکار کر دیا۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے صدر اشرف غنی کی جانب سے ’بین الافغان مذاکرات
بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں امریکی صر ڈونلڈ ٹرمپ کی موجودگی کے دوران بھارتی متنازع شہریت قانون کیخلاف احتجاج پر تشدد شکل اختیار کر گیا، نئی دہلی میں دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے جبکہ جھڑپوں کے دوران پولیس اہلکار سمیت

مزید خبریں
اسپیکٹیٹر انڈیکس نے سال 2019 کی د نیا میں رہائش کے لیے خطرناک ترین ممالک کی فہرست جاری کر دی ہے۔ اس فہرست کے مطابق بھارت رہائش کے لیے خطرناک ترین ممالک کی فہرست میں پانچویں نمبر پر آ گیا ہے جبکہ پہلے نمبر پر برازیل، دوسرے پر ساؤتھ افریقہ، تیسرے پر نائجیریا اور چوتھے پر ارجنٹینا ہے۔
بھارت میں شدید گرمی کے باعث مرنے والوں کی تعداد 134ہوگئی بھارتی میڈیا کے مطابق شدید گرمی کے باعث بھارت کی ریاست تلنگانہ ،آندھرا پردیش اور اڑیسہ میں مرنے والوں کی تعداد 134 ہوگئی ہے۔
افغان حکومت نے باچاخان یونیورسٹی حملے میں افغان سرزمین استعمال ہونے کا امکان مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان نے کسی دہشت گرد گروپ کو پناہ نہیں دی جب کہ افغانستان کسی دہشت گرد گروپ کی حمایت بھی نہیں کرتا۔

مقبول ترین
لاک ڈاؤن نے جہاں ہماری زندگی میں معیشت کا پہیہ جام کیا وہیں بہت سارے سبق بھی دے گیا۔ لاک ڈاؤن نہ ہوتا تو ہم شاید اپنی مصروف زندگی میں اتنے مصروف ہو جاتے کہ رشتوں، ناطوں کی اہمیت اور فیملی سسٹم کی خوبصورتی اور چاشنی سے مزید دور ہوتے چلے جاتے۔ وہ جو اک زندگی ہے نا کہ جس میں بیٹا دفتر جا رہا ہے، بیٹی یونیورسٹی جا رہی ہے، سب گھر والے ادھرادھر بکھرے پڑے ہیں۔
قومی اسمبلی سے انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا، شرکت داری محدود ذمہ داری سمیت پانچ بلز منظور کرلئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا جس میں کمپنیز ترمیمی بل اور نشہ آور اشیا کی روک تھام کا بل بھی شامل ہے۔
وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نورالحق قادری نے کہا ہے کہ اسرائیل میں موساد کی ایک خاتون جعلی اکاؤنٹ سے فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے۔ یہ خاتون فرقہ وارانہ موادسوشل میڈیا پربھیج دیتی ہے اورپھر آگے شیعہ اور سنی خود سے اسے پھیلاتے ہیں۔
سعودی عرب کے سابق انٹیلجنس افسر کی شکایت پر واشنگٹن کی ایک امریکی عدالت نے سعودی بن سلمان ولی عہد کو طلب کرلیا ہے۔ سابق سعودی انٹیلی جنس ایجنٹ کو مبینہ طور پر ناکام قاتلانہ حملے میں نشانہ بنایا گیا تھا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں