Monday, 21 October, 2019
حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا

حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا

اسلام آباد ۔ تین سال میں 33 کھرب قرضہ لینے والی حکومت پاکستان نے 31 جنوری تک پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کااعلان کردیا جس کے تحت پٹرول اور ڈیزل دونوں مہنگے کیے جارہے ہیں ، پٹرول کی قیمت ایک روپے 77پیسے اضافے کیساتھ 68روپے چار جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی فی لٹر قیمت روپے اضافے کیساتھ 77روپے 22پیسے ہوگئی ۔ نئی قیمتوں کا اطلاق آج رات سے ہوگا۔ 

وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایاکہ لائٹ ڈیزل اور کیروسین آئل (مٹی کا تیل) مہنگا نہیں کیے جارہے ، ان پر حکومت سیلز ٹیکس نہیں لے رہی ، پٹرول کی قیمت ایک روپے 77پیسے اضافے کیساتھ 68روپے چار جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی فی لٹر قیمت روپے اضافے کیساتھ 77روپے 22پیسے ہوگئی ۔ 

وزیرخزانہ کا کہناتھا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی سطح پر اوپر جارہی ہیں اور پاکستان میں اضافہ ناگزیر ہے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  32392
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
وزارت خزانہ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کردیا۔ میڈیا کے مطابق وزارت خزانہ نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کردیا ہے جس کے تحت پٹرول کی قیمت میں 4 روپے 59 پیسے فی لیٹر کمی کی گئی ہے اور
حکومت نے عوام پر ایک بار پھر پٹرول بم گرا دیا ہے، وفاقی حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 5 روپے 19 پیسے تک اضافہ کردیا ہے جس کا نوٹی فکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔ نئی قیمتوں کا اطلاق آج رات 12 بجے سے ہو گیا ہے، پٹرول کی قیمتوں میں لگاتار تیسرے ماہ اضافہ ہوا ہے۔
وفاقی حکومت نے ڈیزل اور پٹرول کی قیمتوں میں ایک روپیہ 50پیسے کمی کا اعلان کیا ہے ۔ مٹی کے تیل اور لائٹ ڈیزل کی قیمتیں برقرار رہیں گی ۔ پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں سے خزانہ کو تقریباً 2.4 بلین روپے کا بوجھ برداشت کرنا پڑے گا۔
بینک آف چائنہ نے پاکستان میں اپنی شاخیں کھولنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور ا س ضمن میں سٹیٹ بینک آف پاکستان نے بھی منظوری دیدی ہے۔ بینک کی پہلی شاخ جلد کراچی میں کھولی جائے گی۔

مقبول ترین
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ یہ پہلی اسمبلی ہے جو’ڈیزل‘ کے بغیر چل رہی ہے اگر فضل الرحمان کے لوگ میرٹ پر ہوئے تو انہیں بھی قرضے دیے جائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے نوجوانوں کے لیے ’کامیاب جوان پروگرام‘ کا افتتاح کردیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پنجاب اور خیبر پختونخوا کے وزرائے اعلیٰ اورتین گورنرز نے شرکت کی۔ حکومت نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کے لیے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے
اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ نوکریاں حکومت نہیں نجی سیکٹر دیتا ہے یہ نہیں کہ ہر شخص سرکاری نوکر ی ڈھونڈے ، حکومت تو 400 محکمے ختم کررہی ہے مگرلوگوں کا اس بات پر زور ہے کہ حکومت نوکریاں دے۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خطے میں امن اور استحکام کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ایرانی صدر سے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ پاکستان اور

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں