Thursday, 09 July, 2020
’’بھارت اپنی ہی چال میں خود پھنس گیا‘‘
 
’’بھارت اپنی ہی چال میں خود پھنس گیا‘‘
 

کارٹون
دنیا کو تنگ کرنے والا خود تنگ آگیا
صدر ٹرمپ اور کورونا
رمضان المبارک میں اشیاء خورد نوش کی قیمتوں میں اضافہ
صدر ٹرمپ نے ڈبلیو ایچ او کی امداد روک دی
سماجی فاصلہ رکھیں
شوگر مافیا اور حکومت آمنے سامنے
کورونا، اپنے حصے کا کام کریں
اس سے آگے کوئی گریڈ نہیں ہے، گومل یونیورسٹی ۔۔۔۔ بشکریہ: ابو شان
’’بھارت اپنی ہی چال میں خود پھنس گیا‘‘
مذاکرات
بچے اسکول اور سیکیورٹی
سیکیورٹی سسٹم
سیاستدان اور گھریلو مسائل
کمیشن مافیا
پاکستانی سیاستدان اور عوام
سموگ کے فائدے
مقبول ترین
دفتر خارجہ کی جانب سے جاری کئے گئے ایک مشترکہ بیان میں تینوں ملکوں نے دہشتگرد مزاحمتی تحریک کے دوبارہ اٹھنے سے بچنے کےلئے افغانستان سے غیر ملکی فوجوں کے منظم، ذمہ دار اور حالات پر مبنی انخلا پر زور دیا۔
سرمایہ کاروں کی جانب سے سرمائے کو محفوظ بنانے کےلیے سونے میں بڑھتی ہوئی سرمایہ کاری کے باعث مقامی صرافہ مارکیٹوں میں سونے کی قیمت تاریخ کی نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی جبکہ بین الاقوامی بلین مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت
سپریم کورٹ نے کرپشن کے مقدمات جلد نمٹانے اور نیب ریفرنسز کے فیصلوں کیلئے 120 نئی احتساب عدالتوں کے قیام کا حکم دے دیا۔ سپریم کورٹ میں لاکھڑا کول مائننگ پاور پلانٹ کی تعمیر میں بے ضابطگیوں سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔
ملک بھر کے تعلیمی ادارے ستمبر کے پہلے ہفتے میں طے شدہ ضابطہ کار (ایس او پیز) کے ساتھ کھولنے پر اتفاق ہوگیا۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس ہوئی جس میں تعلیمی اداروں کو ایس او پیز کے ساتھ امتحانات

کرونا وائرس اور احتیاتی تدابیر
5 اگست کو جب بھارت کی پارلیمنٹ نے کشمیر کی آئینی خود مختیاری کو یکطرفہ اور غیر قانونی طور پر منسوخ کیا تقریباً 10 ہزار کشمیری جن میں بچے،بوڑھے اور خواتین سبھی شامل ہیں، کو ریاست سے باہر مختلف جیلوں میی رکھا گیا۔
ملک اس وقت ناگہانی آفات، بحرانوں،وباؤں اور آسمانی آفات کی زد میں ہے اورحالت جنگ کی سی کیفیت سے دوچار ہے۔ایک طرف مہلک کورونا وائرس تودوسری جانب ٹڈی دل کی ہولناک یلغارجاری و ساری ہے یوں کہیں کہ اللہ تعالٰی کی نا شکری کی بناء پرہم پرایک کے بعدایک عذاب مسلط ہو رہا ہے۔
ان دنوں پاکستان سمیت دنیاکے مختلف ممالک میں درجہ حرارت انتہائی زیادہ ہے ۔اس گرم موسم میں لُو اس وقت لگتی ہے جب جسم کا درجہ حرارت 40 ڈگری سیلسیئس یا اس سے بڑھ جائے۔ لُو لگ جانے کے بعد متاثرہ شخص کو فوری طبی امداد کی ضرورت ہوتی ہے

کیا ملک میں کرفیو نافذ ہونا چاہیے؟
نتائج ملاحظہ کریں
پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں