Saturday, 11 July, 2020
قومی سلامتی اور فوج کا نقطہ نظر

قومی سلامتی اور فوج کا نقطہ نظر
آج کی بات / غلام اکبر

 

کیا قومی سلامتی کے بارے میں
فوج کا نقطہ نظرتبدیل ہوگیا ہے؟

سردیاں گزر گئیں۔۔۔ گرمیاں آچکی ہیں۔۔۔ اور یہ بات سردیاں شروع ہونے سے پہلے کی ہے جب ڈان میں سرل المیڈا کی ایک رپورٹ چھپی تھی جس میں وزیراعظم ہاﺅس کے اندر ہونے والی ایک حساس میٹنگ کے حوالے سے یہ موقف بیان کیا گیا تھا کہ نوازشریف کی حکومت اس سرپرستی سے سخت نالاں ہے جو ہماری فوج انتہا پسند اور شر پسند عناصر کو مہیا کرتی ہے ۔۔۔ 

شرپسند اور انتہا پسند عناصر سے مراد لشکر طیبہ اور دیگر ایسی تنظیموں کی قیادتیں تھیں جو کشمیر کی تحریکِ آزادی سے اپنا ناطہ جوڑے ہوئے ہیں۔۔۔ 

متذکرہ خبر کا واحد مقصد دنیا کو یہ تاثر دینا تھا کہ میاں صاحب کی حکومت تو ایسے ” ناپسندیدہ“ عناصر کی سرکوبی کے لئے کوشاں ہے مگر فوج راستے کی دیوار بنی ہوئی ہے۔۔۔ یہ بیانیہ بھارتی حکومت کا تھا اور ہے۔۔۔ چنانچہ اس بیانیہ کو بھارتی میڈیا اور حکومت نے اپنے اس موقف کا ٹھوس ثبوت بنا لیاکہ پاکستان کی فوج دراصل Rogue Army یعنی غنڈہ فوج ہے۔

یہ امر واقعہ ہے کہ پرائم منسٹر ہاﺅس میں ایک اہم میٹنگ ہوئی ضرور تھی جس میں آئی ایس آئی اور فوج کے اعلیٰ افسران بھی موجود تھے۔۔۔ اس میٹنگ میں نیشنل سکیورٹی کے حوالے سے اہم موضوعات زیرِ بحث آئے تھے جنہیں توڑ مروڑ کر اس شرانگیز خبر کے سانچے میں ڈھال دیا گیا۔۔۔

یہ سانچہ کس نے تیار کیا ۔۔۔؟ اور اس سانچے میں ڈھل کر متذکرہ خبر سرل المیڈا تک کیسے پہنچی ؟ ڈان کی انتظامیہ کو اس خبر کی اشاعت کے لئے کس نے تیار کیا ؟ 

یہ وہ سوالات تھے جن کا جواب ہماری فوج کی اعلیٰ قیادت کو درکار تھا۔۔۔ اس ضمن میں کور کمانڈرز کے متعدد اجلاس بھی ہوئے۔۔۔ فوج نے اسے پاکستان کی سلامتی کے خلاف سازش قرار دیا۔۔۔خود وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اعلان کیا کہ اس سازش میں شریک کسی بھی فرد کو معاف نہیں کیا جائے گا۔۔۔

پھر کیا ہوا کہ کل جو خبر ملکی سلامتی پر ایک خوفناک وار تھی ` آج اس پر ہماری فوج خاموش ہے۔۔۔ اور ایک مہم یہ چلائی جارہی ہے کہ ایسی خبریں شائع ہوتی ہی رہتی ہیں انہیں دردِ سر یا دل کا روگ نہیں بنایا جانا چاہئے۔۔۔

کیا قومی سلامتی کے بارے میں فوج کا نقطہء نظر تبدیل ہوگیا ہے۔۔۔؟

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کالم نگار، بلاگر یا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ بھی ہمارے لیے کالم / مضمون یا اردو بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو قلم اٹھائیے اور 500 الفاظ پر مشتمل تحریر اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر اور مختصر تعارف کے ساتھ info@mubassir.com پر ای میل کریں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  40921
کوڈ
 
   
متعلقہ کالم
عالمی ادارہ صحت نے خدشہ کا اظہار کیا ہے کہ جولائی کے وسط تک پاکستان میں 2 لاکھ کورونا وائرس کے کیسز ہوسکتے ہیں، ڈبیلو ایچ او کو اس پر بھی تشویش ہے کہ سندھ اور پنجاب میں عالمی وبا سے متاثر افراد کی تعداد تیزی سے بڑھ رہی ،اس پر یہ دلیل بھی سامنے آچکی کہ لاک ڈاؤن میں مذید 2 ہفتوں کی توسیع کی ایک وجہ دراصل یہی ڈبلیو ایچ او کی وارننگ ہے
سعودی اور اماراتی معیشت دن بدن زبوں حالی کا شکار ہورہی ہے۔ ایسے میں انصار اللہ کے سپاہیوں نے مختلف محاذوں پر کامیابی حاصل کی ہے لہٰذا یمن پر آگ برساتی جنگ بندی تو اس جنگ کے خاتمے کا ذریعہ بنتی دکھائی نہیں دیتی لیکن دست قدرت کی کار فرمائی سے مظلوموں کو آخرکار نجات ضرور ملے گی۔
جب سے کرونا وائرس(covid-19) پاکستان میں آیا ہے تب سے حکومت اور مذہبی طبقہ کے درمیان رسہ کشی جاری ہے۔علمائے کرام کرونا وائرس کے حملہ کو مذہب پر حملہ تصور کررہے ہیں۔ان کے خیال کے مطابق وائرس کے پھیلاؤ کے خدشہ کی آڑ میں مساجد اور مدارس
شاید سکول کے زمانے سے یہ شعر مجھے یاد ہے۔ مجھ جیسے بے شمار دوسرے لوگوں کو بھی جو اردو جانتے ہیں۔اردو ادب کے قبیلے کے تو ہر فرد کو یہ شعر یاد ہے، اور انھیں بھی جنھیں ادب سے تو کوئی واسطہ نہیں لیکن سیاسی دکان کا سودا بیچنے کے

مزید خبریں
سید منور حسن مسلم امہ کا اثاثہ و سرمایہ تھے۔ ان کی وفات سے پیدا ہونے والا خلاء پر نہیں ہو سکے گا۔
کورونا وائرس پاکستان ہی نہیں ہی دنیا بھر میں اپنی پوری بدصورتی کے ساتھ متحرک ہے ، تشویشناک یہ ہےاس عالمی وباء کے نتیجے میں ہمارے ہاں اموات کا سلسلہ بھی شروع ہوچکا،
وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کورونا وائرس کے مزید پھیلاؤ کے خطرے کو مدنظر رکھتے ہوئے اضلاع کی سطح پر قرنطینہ مرکز بنانے کی ہدایت کردی ہے۔
وزارت قانون و انصاف نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی منظوری سےخالد جاوید خان کو انور منصور کی جگہ پاکستان کا نیا اٹارنی جنرل تعینات کرنے کا باضابطہ نوٹی فیکیشن جاری کر دیا ہے۔

مقبول ترین
پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت مافیاز جبکہ مافیاز حکومت کی مدد سے چل رہی ہیں۔ پاکستان مسلم لیگ ن کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹر پر اپنے ایک بیان میں قومی
وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کراچی میں کل سے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کےخاتمے کا اعلان کردیا۔ گورنر ہاؤس عمران اسماعیل کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا تھا کہ کےالیکٹرک کیلئے فرنس آئل اور گیس کی سپلائی
قومی ایئر لائنز (پی آئی اے) میں پائلٹس کے جعلی لائسنس اور ڈگریوں کے معاملے پر سول ایوی ایشن اتھارٹی نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروا دی ہے۔ یاد رہے کہ 25 جون کو سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے پائلٹس
وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز کا کہنا ہے کہ اپوزیشن کے اکٹھ کا مقصد محض پریشر ڈالنا ہے، انہیں ملک کی نہیں، اپنے مال کی فکر ہے، انہیں ڈر ہے حکومت کامیاب ہو گئی تو یہ سب جیل میں ہونگے، وزیراعظم عمران خان کسی دباؤ میں نہیں آئیں گے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں