Tuesday, 16 October, 2018
کمال کی اپوزیشن ہے

کمال کی اپوزیشن ہے
تحریر: شہباز علی عباسی

 

پاکستانی حالیہ انتخابات نے اس وقت پوری دنیا میں ہلچل مچا رکھی ہے کہیں سے نئے متوقع آمدہ وزیراعظم کو مبارکباد کے پیغامات موصول ہو رہے ہیں تو کوئی اپنے برج پر عمران خان کی تصاویر آویزاں کرکے تہنیت پیش کررہا ہے گذشتہ روز برطانوی ہائی کمشنر نے بھی وزیراعظم سے ملاقات کی اور مبارکباد دی۔ اس امید اور سوچ کے ساتھ کہ شاید حسب سابق یہ بھی ماضی کے قصے دہرا کر اپنی عزت اور وقار میں اضافہ محسوس کریں گے اور بتائیں گے کہ میرا ماضی برطانیہ سے وابستہ تھا اور مستقبل بھی۔ کبھی علاج معالجے تو کبھی لوٹی ہوئی دولت کی حفاظت اور اپنی اولادوں کے سکھ آرام کی خاطر برطانیہ سے ہی جوڑنا پڑے گا۔ مگر خان نے اس کے برعکس خبروں کے مطابق برطانوی ہائی کمشنر سے لوٹی ہوئی دولت کو واپس لانے کے لیے مدد مانگ لی۔ 

خان اس قسم کے جارحانہ اقدامات کے باعث پاکستان اور پوری دنیا میں خاص شہرت کاحامل ہے۔ مگر اس کے علاوہ ایک اور بات بھی اس وقت انتہائی توجہ طلب ہے کہ خلاف ماضی اس دفعہ تحریک انصاف کو ملنے والی اپوزیشن بھی انتہائی اہم ہیں۔ اس دفعہ اپوزیشن کی سیٹوں پر براجمان ہونے والے وہ عالی مرتبت اکٹھے ہوں گے جو انتخابی جلسوں میں ایک دوسرے کے پیٹ پھاڑنے اور روڈوں پر گھسیٹنے کی بات کرتے تھے۔ 

ایک دوسرے کو عوام دشمن اور چور اچکا کہتے تھے مگر حالیہ سونامی میں جب بہتی ناؤ اور چڑھتا پانی دکھائی دیا تو کرسئ اقتدار اور اسمبلیوں کے مزے لوٹنے کی خاطر نہ صرف ماضی کو قصہ پارینہ بنا دیا گیا بلکہ آپس میں شیر وشکر ہو گئے اور اس بات کا اظہار برملا کرتے نظر آئے کہ ہم اس بننے والی حکومت کو کیوں چلنے دیں جو پروٹوکول کو مسترد کرتی ہے جو خود کو عوام کے ٹیکس کا محافظ کہتی ہے۔ 

جس کا منشور نوکریاں اور گرتی معیشت کو سہارا دینا ہے جس کی تمام تر کوششیں اور کاوشیں ملکی استحکام، بقا اور سلامتی کی ضامن ہیں لیکن گذشتہ سالوں میں یہ سب کچھ فقط تقریروں اور نعروں کی حد تک تھا۔ ملکی خزانہ اور عوام کا پیسہ فقط خرمستیوں پر بہانے کے لیے تو اب اگر کوئی حکومت اسے عوام کی فلاح و بہبود کے لیے استعمال کرنے کی بات کرے یا عوامی حقوق ان کی دہلیز پر پہنچانے کی تو مخالفت تو بنتی ہے اور اپوزیشن کا رول بھی۔ خیر کچھ بھی ہو اس تناظر میں کمال کی اپوزیشن ہے۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کالم نگار، بلاگر یا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ بھی ہمارے لیے کالم / مضمون یا اردو بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو قلم اٹھائیے اور 500 الفاظ پر مشتمل تحریر اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر اور مختصر تعارف کے ساتھ info@mubassir.com پر ای میل کریں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  66198
کوڈ
 
   
مزید خبریں
دنیا بھر میں بولی اور سمجھی جانی والی زبانوں میں سے اردو ہندی دنیا کی دوسری بڑی زبان بن چکی ہے، جبکہ اول نمبر پر آنے والی زبان چینی ہے اور انگریزی کا نمبر تیسرا ہے۔ روزنامہ ’واشنگٹن پوسٹ‘ نے یونیورسٹی آف ڈیسلڈرف الرچ کی 15 برس کی مطالعاتی رپورٹ
ہمارے نیم حکیموں کو کون سمجھائے کہ بلکتے، سسکتےعوام کو جمہوریت سے بدہضمی ہونے کا خوف دلانا چھوڑ دیجئے حضور! 144 معالجین کے مطابق انسانی معدے کی خرابی تمام بیماریوں کی ماں ہوتی ہے اور معدے کی خرابی سے ہی بدہضمی، ہچکی، متلی، قے، ہاتھوں میں جلن کا احساس، بھوک کا نہ لگنا، پژمردگی اور چہرے پر افسردگی کے اثرات چھائے
یہ سوال انتہائی اہم ہے کہ پارلیمنٹ لاجز میں ہونے والی غیر اخلاقی حرکتوں کے متعلق جمشید دستی کو کس نے ویڈیو ثبوت اور ”ناقابل تردید“ ثبوت فراہم کیے ہیں؟ یہ سوال بھی اہم ہے کہ آخر جمشید دستی نے یہ ا یشو کیوں چھیڑا ؟ اس کے نتیجے میں جو صورتحال پیش آسکتی ہے اس کے دور رس نتائج نکل سکتے ہیں۔
دہشت گردوں کی طرف سے جنگ بندی کے اعلان کے صرف 48 گھنٹے بعد ہی دارالحکومت اسلام آباد کودہشت گردی کا نشانہ بنادیا گیا۔

مقبول ترین
لندن کی وارک یونیورسٹی میں خطاب کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ دنیا میں القاعدہ کو کبھی بھی پاکستان کی مددکے بغیر شکست نہیں ہوسکتی تھی دہشتگردی کے خاتمے کے لیے دنیا کو پاکستان کا شکریہ ادا کرنا چاہیے۔
وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ حکومت نے مسلم لیگ (ن) کے دور حکومت میں لگائے گئے بجلی کے تمام منصوبوں کے آڈٹ کا فیصلہ کیا ہے جب کہ 2 منصوبے کے آڈٹ کا آغاز بھی ہوچکا ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران فواد چوہدری نے
بین الاقوامی برادری میں یہ تاثر عام ہے کہ بھارتی قیادت علاقائی بالادستی حاصل کرنے کے زعم میں یوں مبتلا ہو چکی ہے کہ اس پر کسی نفسیاتی غلبہ اور سیاسی و سفارتی عارضہ کا گمان ہوتا ہے۔ وزیراعظم مودی نے اپنے دور حکومت میں نیپال، بنگلہ دیش
غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فرانس کے شمالی علاقے ٹریب میں سیلاب کے باعث 13 افراد ہلاک اورمتعدد زخمی ہوگئے۔ فرانسیسی وزارت داخلہ کے مطابق متاثرہ علاقوں میں محض چند گھنٹوں کے دوران اتنی بارش ہوئی جو عام طورپر3 ماہ سے زائد

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں