Wednesday, 17 October, 2018
’’سانحہ قصور: انسانی شرف کی دھجیاں‘‘

’’سانحہ قصور: انسانی شرف کی دھجیاں‘‘
تحریر: مفتی امجد عباس

 

کل جب قومی علماء کانفرنس سے فارغ ہوا،موبائل آن کیا تو ایک دوست نے کچرے کے ڈھیر پر پڑی مقتولہ مظلومہ زینب کی دلخراش تصویر بھیجی ہوئی تھی ۔ میں کل سے بار بار کچھ لکھنے کی ہمت کر رہا ہوں۔

خدا گواہ ہمت نہیں پڑ رہی کہ کچھ لکھوں ۔زینب کا المیہ لکھوں کہ انسانیت کا۔۔۔۔!!!! کیا کوئی درندہ اس حد تک بھی جا سکتا ہے کہ ایک معصوم بچی کو اپنی ہوس کا نشانہ بنا کر ،اسکا گلہ گھونٹ کر اسے اس کچرے کے ڈھیر پر پھینک کر چلا جائے جہاں مرے ہوئے کتوں اور بلیوں کو پھینکا جاتا ہے۔۔؟؟؟؟؟الامان  الحفیظ۔۔

یہ تو وہ انسان ہے جسے کائنات کی تمام مخلوقات سے کہیں بڑھ کر حرمت وکرامت عطاکی گئی ہے۔اگر کوئی بچہ اپنی ماں کے پیٹ  میں سانس لیتا مار دیا جائے تو اس پر بھی سزا اور تاوان لیا جاتا ہے بلکہ یہاں تک کہ اگر تولد کے بعد ماں کے پہلو میں سوتا بچہ ماں کے پہلو بدلتے ہوئے ماں کے نیچے آکر خدانخواستہ مر جائے تو ماں کو بطور جرمانہ شریعت دو مہینے کے روزے رکھنےپر مجبور کرتی ہے۔بچوں کےمسجد نبوی صلعم میں رونے کی آواز سن کر سرکار دوجہاں اپنی  نماز مختصر فرمادیتے تھے۔یہ وہ بچے ہیں جن کے بارے میں فرمایا:جو ان پر رحم نہ کرے وہ ہم سے نہیں ہے۔سرکار جہاں سے گزرتے بچوں کو سلام کیا کرتے تھے۔

لیکن آج ان بچوں کی تکریم کا یہ عالم ہے کہ ان کے ساتھ ظلم کر کے ،انکو قتل کر کےکچرے کے ڈھیروں پر پھینک  دیا جارہا ہے اور کوئی انکا پرسان حال نہیں ہے۔یہ کوئی پہلا کیس  نہیں ہے اس سے پہلے گیارہ کیس ہو چکے ہیں۔لیکن ظلم بالائے ظلم کے ان پچھلے گیارہ گھناؤنے جرائم کرنے والوں میں سے کسی ایک کو بھی سزا نہیں ہوئی،ان مجرموں سے کوئی ایک بھی جیل میں نہیں ہے۔کیوں نہیں ہوئی اس لیے کہ یہ لوگ اپنے  آقاؤں   ایم این ایز اور ایم پی ایز کے ذریعے پولیس کو خرید لیتے ہیں اور اپنی مرضی کا چالان بنوا کر عدالت میں پیش کروا کر ،وکیل کرنے کے بجائے جج کر کے بری ہو جاتے ہیں۔عدالت ناکافی ثبوتوںکی بنیاد انہیں "باعزت"بری کر دیتی ہے۔

ان عدالتوں میں بیٹھے ہوئے منصفوں پر حقیقت بالکل عیاں ہوتی ہےاس کے باوجود مجرم بچ نکلتے ہیں۔منصفوں ،ممبران اسمبلی اور حکمرانان وقت کو یہ ذھن میں ضرور رکھنا چاہیے کہ خدا کی لاٹھی بے آواز ہے اور اسکی پکڑ بہت شدید ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کالم نگار، بلاگر یا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ بھی ہمارے لیے کالم / مضمون یا اردو بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو قلم اٹھائیے اور 500 الفاظ پر مشتمل تحریر اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر اور مختصر تعارف کے ساتھ info@mubassir.com پر ای میل کریں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  46639
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
تخلیق کائنات کے وقت اللہ تعالیٰ نے تمام مخلوقات کو پیدا کیا مگر ان میں سب سے اشرف انسان کو ٹھہرایا گیا جس کی بنیادی وجہ انسان میں دوسری مخلوقات کی نسبت زیادہ عقل و شعور، فہم و فراست، حکمت و دانائی ،صبر و شکر، تہذیب و تمدن
یورپی یونین اور تہران کے مابین مذاکرات اسی موسم خزاں میں ہوں گے لیکن ایران میں انسانی حقوق کی صورت حال میں بہتری کی کوششوں کے حوالے سے ابھی تک ایک بڑا سوال یہ ہے کہ اگر ایسا ہو گا بھی، تو کب تک؟

مزید خبریں
دنیا بھر میں بولی اور سمجھی جانی والی زبانوں میں سے اردو ہندی دنیا کی دوسری بڑی زبان بن چکی ہے، جبکہ اول نمبر پر آنے والی زبان چینی ہے اور انگریزی کا نمبر تیسرا ہے۔ روزنامہ ’واشنگٹن پوسٹ‘ نے یونیورسٹی آف ڈیسلڈرف الرچ کی 15 برس کی مطالعاتی رپورٹ
ہمارے نیم حکیموں کو کون سمجھائے کہ بلکتے، سسکتےعوام کو جمہوریت سے بدہضمی ہونے کا خوف دلانا چھوڑ دیجئے حضور! 144 معالجین کے مطابق انسانی معدے کی خرابی تمام بیماریوں کی ماں ہوتی ہے اور معدے کی خرابی سے ہی بدہضمی، ہچکی، متلی، قے، ہاتھوں میں جلن کا احساس، بھوک کا نہ لگنا، پژمردگی اور چہرے پر افسردگی کے اثرات چھائے
یہ سوال انتہائی اہم ہے کہ پارلیمنٹ لاجز میں ہونے والی غیر اخلاقی حرکتوں کے متعلق جمشید دستی کو کس نے ویڈیو ثبوت اور ”ناقابل تردید“ ثبوت فراہم کیے ہیں؟ یہ سوال بھی اہم ہے کہ آخر جمشید دستی نے یہ ا یشو کیوں چھیڑا ؟ اس کے نتیجے میں جو صورتحال پیش آسکتی ہے اس کے دور رس نتائج نکل سکتے ہیں۔
دہشت گردوں کی طرف سے جنگ بندی کے اعلان کے صرف 48 گھنٹے بعد ہی دارالحکومت اسلام آباد کودہشت گردی کا نشانہ بنادیا گیا۔

مقبول ترین
لندن کی وارک یونیورسٹی میں خطاب کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ دنیا میں القاعدہ کو کبھی بھی پاکستان کی مددکے بغیر شکست نہیں ہوسکتی تھی دہشتگردی کے خاتمے کے لیے دنیا کو پاکستان کا شکریہ ادا کرنا چاہیے۔
وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ حکومت نے مسلم لیگ (ن) کے دور حکومت میں لگائے گئے بجلی کے تمام منصوبوں کے آڈٹ کا فیصلہ کیا ہے جب کہ 2 منصوبے کے آڈٹ کا آغاز بھی ہوچکا ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران فواد چوہدری نے
بین الاقوامی برادری میں یہ تاثر عام ہے کہ بھارتی قیادت علاقائی بالادستی حاصل کرنے کے زعم میں یوں مبتلا ہو چکی ہے کہ اس پر کسی نفسیاتی غلبہ اور سیاسی و سفارتی عارضہ کا گمان ہوتا ہے۔ وزیراعظم مودی نے اپنے دور حکومت میں نیپال، بنگلہ دیش
غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فرانس کے شمالی علاقے ٹریب میں سیلاب کے باعث 13 افراد ہلاک اورمتعدد زخمی ہوگئے۔ فرانسیسی وزارت داخلہ کے مطابق متاثرہ علاقوں میں محض چند گھنٹوں کے دوران اتنی بارش ہوئی جو عام طورپر3 ماہ سے زائد

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں