Thursday, 09 July, 2020
شہید بینظیربھٹو ہیومن رائٹس سینٹر فار وومن فیصل آباد

شہید بینظیربھٹو ہیومن رائٹس سینٹر فار وومن فیصل آباد

فیصل آباد ۔ شہید بینظیربھٹو ہیومن رائٹس سینٹر فار وومن سے گزشتہ 10 سال کے دوران 43سوسے زائد خواتین نے رابطہ کیا اور 3707 خواتین کو گھریلو تشدد،جسمانی ہراساں کرنے، پراپرٹی میں حصہ نہ دینے کی شکایات پرریلیف فراہم کیا گیا جبکہ 594 درخواستوں پر محکمانہ کارروائی جاری ہے۔

یہ بات شہید بینظیر بھٹو ہیومن رائٹس سنٹر فار وومن کے قیام کی دس سالہ تقریب کے دوران بتائی گئی۔ ارکان صوبائی اسمبلی ڈاکٹر نجمہ افضل اور فاطمہ فریحہ اس موقع پر مہمان خصوصی تھیں جبکہ ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر محمد شاہد رانا،ڈپٹی ڈائریکٹر چوہدری محمد اشرف،مینجروومن سینٹر کنول شہزادی،سوشل ویلفیئر آفیسر صنم زہرا،مسز انجم عالم شاہ،شمائلہ عثمان اوردیگرخواتین ممبران بھی موجود تھیں۔

اس موقع پر وومن سینٹر کے قیام کے دس سال مکمل ہونے پر کیک بھی کاٹا گیا۔ارکان اسمبلی نے اظہار خیال کرتے ہوئے خواتین کی فلاح و بہبود کے لئے شہید بینظیر بھٹو ہیومن رائٹس سینٹر فار وومن کے اقدامات کو سراہا اور کہا کہ ادارہ نے درخواستوں کو تیز رفتاری سے نمٹا کر درخواست گزار خواتین کی دادرسی کی ہے۔انہوں نے خواتین کی ترقی و بہبود کے لئے حکومت پنجاب کے عملی اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وومن پروٹیکشن آرڈیننس کے حوصلہ افزا نتائج حاصل ہورہے ہیں اورسرکاری اداروں میں ملازمت پیشہ خواتین کو پرسکون ماحول کی فراہمی کو یقینی بنایا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سنٹر کی بھرپور سرپرستی جاری رکھی جائے گی۔ڈائریکٹر سوشل ویلفےئر نے کہاکہ حکومت پنجاب خواتین کے اداروں کی ترقی کیلئے خصوصی اقدامات کررہی ہے اور فیصل آباد میں وومن پروٹیکشن سنٹر کا قیام بھی عمل میں لایا جا رہا ہے۔

انہوں نے وومن سنٹر کی دس سالہ کارکردگی کو سراہا اور امید ظاہر کی کہ آئندہ بھی خواتین کو انصاف کی فراہمی میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے۔ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفئر نے کہا کہ خواتین ملکی آبادی کا نصف سے زائد ہیں جنہیں قومی ترقی کے دھارے میں شامل کرنے کیلئے اقدامات جاری رہنے چاہیں۔مینجروومن سنٹر نے ادارہ کی دس سالہ کارکردگی رپورٹ سے آگاہ کیا اور کہا کہ سنٹر سے رجوع کرنے والی خواتین کو ریلیف کی فراہمی اولین ترجیح ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کالم نگار، بلاگر یا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ بھی ہمارے لیے کالم / مضمون یا اردو بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو قلم اٹھائیے اور 500 الفاظ پر مشتمل تحریر اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر اور مختصر تعارف کے ساتھ info@mubassir.com پر ای میل کریں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  45953
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
ان دنوں پاکستان سمیت دنیاکے مختلف ممالک میں درجہ حرارت انتہائی زیادہ ہے ۔اس گرم موسم میں لُو اس وقت لگتی ہے جب جسم کا درجہ حرارت 40 ڈگری سیلسیئس یا اس سے بڑھ جائے۔ لُو لگ جانے کے بعد متاثرہ شخص کو فوری طبی امداد کی ضرورت ہوتی ہے
آن لائن ایجوکیشن سسٹم تقریباً پوری دنیا میں رائج ہے ۔پاکستان میں بھی دو بڑی یونیورسٹیاں علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی اورورچوئل یونیورسٹی اس وقت ہزاروں اسٹوڈنٹ کو آن لائن ایجوکیشن فراہم کر رہی ہیں۔
صدی کی ڈیل (deal of century) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی طرف سے مسئلہ فلسطین کا پیش کیا جانے والا نام نہاد حل ہے ۔اس منصوبہ کے تحت اسرائیل اور فلسطین کے درمیان ایک نئی حد بندی کی جائے گی ۔جس کے نتیجے میں ایک جدید فلسطین تشکیل دیا جائے گا ۔اگر اس صدی کی ڈیل کے بعد کے فلسطین کو دیکھا جائے تو مکمل طور پہ تبدیل ہو جائے گا۔
سعودی عرب کے ایک ایم بی سی چینل پر رمضان کے شروع میں ایک ڈرامہ "ام ہارون" کے نام سے نشر کیا جا رہا ہے، جس میں یہودیت کو مظلوم بنا کر پیش کیا گیا ہے۔

مزید خبریں
کورونا وائرس پاکستان ہی نہیں ہی دنیا بھر میں اپنی پوری بدصورتی کے ساتھ متحرک ہے ، تشویشناک یہ ہےاس عالمی وباء کے نتیجے میں ہمارے ہاں اموات کا سلسلہ بھی شروع ہوچکا،
کی سڑک کے کنارے ایک ہوٹل میں چائے پینے کے لیے رکا تو ایک مقامی صحافی دوست سے ملاقات ہوگئی جنہیں سب شاہ جی کہتے ہیں سلام دعا کے بعد شاہ جی سے پوچھا کہ ٹیکنالوجی کی وجہ سے پاکستان کتنا تبدیل ہوچکا ہے تو کہنے لگے کہ سوشل میڈیا کی وجہ سےعدم برداشت میں بہت اضافہ ہوا ہے۔
میرے پڑھنے والو،میں ایک عام سی،نا سمجھ ایک الہڑ سی لڑکی ہوا کرتی تھی، بات بات پہ رو دینا تو جیسے میری فطرت کا حصہ تھا، اور پھربات بے بات ہنسنا میری کمزوری، یہ لڑکی دنیا کے سامنے وہی کہتی اور وہی کرتی تھی جو یہاں کے لوگ سن اور سمجھ کر خوش ہوتے تھے
صبح سویرے اسکول جاتے وقت ہم عجیب مسابقت میں پڑے رہتے تھے پہلا مقابلہ یہ ہوتا تھا کہ کون سب سے تیز چلے گا دوسرا شوق سلام میں پہل کرنا۔ خصوصاً ساگری سے آنیوالے اساتذہ کو سلام کرنا ہم اپنے لیے ایک اعزاز تصور کرتے تھے۔

مقبول ترین
دفتر خارجہ کی جانب سے جاری کئے گئے ایک مشترکہ بیان میں تینوں ملکوں نے دہشتگرد مزاحمتی تحریک کے دوبارہ اٹھنے سے بچنے کےلئے افغانستان سے غیر ملکی فوجوں کے منظم، ذمہ دار اور حالات پر مبنی انخلا پر زور دیا۔
سرمایہ کاروں کی جانب سے سرمائے کو محفوظ بنانے کےلیے سونے میں بڑھتی ہوئی سرمایہ کاری کے باعث مقامی صرافہ مارکیٹوں میں سونے کی قیمت تاریخ کی نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی جبکہ بین الاقوامی بلین مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت
سپریم کورٹ نے کرپشن کے مقدمات جلد نمٹانے اور نیب ریفرنسز کے فیصلوں کیلئے 120 نئی احتساب عدالتوں کے قیام کا حکم دے دیا۔ سپریم کورٹ میں لاکھڑا کول مائننگ پاور پلانٹ کی تعمیر میں بے ضابطگیوں سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔
ملک بھر کے تعلیمی ادارے ستمبر کے پہلے ہفتے میں طے شدہ ضابطہ کار (ایس او پیز) کے ساتھ کھولنے پر اتفاق ہوگیا۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس ہوئی جس میں تعلیمی اداروں کو ایس او پیز کے ساتھ امتحانات

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں