Sunday, 24 March, 2019
اردو اور ہندی دنیا کی دوسری بڑی زبان، واشنگٹن پوسٹ

اردو اور ہندی  دنیا کی دوسری بڑی زبان، واشنگٹن پوسٹ

واشنگٹن ۔ دنیا بھر میں بولی اور سمجھی جانی والی زبانوں میں سے اردو ہندی دنیا کی دوسری بڑی زبان بن چکی ہے، جبکہ اول نمبر پر آنے والی زبان چینی ہے اور انگریزی کا نمبر تیسرا ہے۔ روزنامہ ’واشنگٹن پوسٹ‘ نے یونیورسٹی آف ڈیسلڈرف الرچ کی 15 برس کی مطالعاتی رپورٹ شائع کی ہے، جس کے مطابق دنیا بھر میں بولی جانے والی زبانوں کو ساتوں براعظموں میں نقشے اور چارٹ کی مدد سے تقسیم کیا گیا ہے۔

اس رپورٹ کے مطابق، سب سے زیادہ، یعنی 2301 زبانیں براعظم ایشیا میں بولی جاتی ہیں، جبکہ دوسرے نمبر پر براعظم افریقہ ہے جہاں 2138 زبانیں بولی جاتی ہیں۔ بحر الکاہل کے خطے میں بولی جانے والی زبانوں کی تعداد ایک ہزار تین سو تیرہ بتائی جاتی ہے اور  ساوتھ اور نارتھ امریکہ میں بولی جانے والی زبانوں کی تعداد ایک ہزار چونسٹھ ہے، جبکہ یورپ جہاں بہت سی قومیں آباد ہیں لیکن اس براعظم میں صرف دو سو چھاسی زبانیں بولی جاتی ہیں۔


رپورٹ کے مطابق، بارہ زبانیں ایسی ہیں کہ جنھیں دنیا کی دو تہائی آبادی بولتی اور سمجھتی ہے۔ ان میں سے پانچ ایشیائی زبانیں ہیں جن میں چینی زبان  سرفہرست ہے جسے ایک ارب انتالیس کروڑ لوگ بولتے سمجھتے ہیں، ان کے مقابلے میں اردو اور ہندی اٹھاون کروڑ پچاس لاکھ سے زائد لوگ بولتے اور سمجھتے ہیں۔

اس کے بعد نمبر آتا ہے انگریزی کا۔۔۔ جی ہاں، انگریزی زبان باون کروڑ   ستر لاکھ لوگ بول اور سمجھ سکتے ہیں۔ ان کے مقابلے میں عربی بولنے اور سمجھنے والوں کی تعداد بھی کم نہیں  جو چھالیس کروڑ ستر لاکھ کے قریب ہے جبکہ ہسپانوی زبان بولنے والوں کی تعداد بھی اڑتیس کروڑ نوے لاکھ کے قریب پہنچ چکی ہے۔
اس رپورٹ نے واضح کیا ہے کہ امریکہ میں سب سے زیادہ زبانیں نہیں بولی جاتی  اس کے مقابلے میں کئی دیگر ممالک میں زیادہ زبانیں بولی جاتی ہیں۔ کئی زبانیں ایسی ہیں کہ جو کئی ممالک میں بولی اور سمجھی جاتی ہیں۔ جن میں بلاشبہ انگریزی سب سے زیادہ ممالک یعنی  ایک سو ایک ممالک میں بولی اور سمجھی جاتی ہے جبکہ دوسرے نمبر پر عربی زبان ہے جو دنیا کے ساٹھ ممالک میں بولی اور سمجھی جاتی ہے۔ فرانسیسی زبان اکیاون ممالک میں، چینی زبان تیتس ممالک میں ، ہسپانوی زبان اکتیس ممالک میں۔فارسی انتیس ممالک میں جرمنی اٹھارہ ممالک میں روسی سولہ ممالک میں، ملائیشن تیرہ ممالک میں پرٹیگیز بارہ ممالک میں  بولی اور سمجھی جاتی ہے، انگریزی اور دیگر مغربی زبانوں کے زیادہ  ممالک میں بولے جانے کی وجہ ان ممالک پر ان کی حکمرانی تھی جبکہ انگریزی بشتر ممالک میں سرکاری زبان ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بہت سی زبانیں ایسی ہیں کہ جنھیں بہت تھوڑے سے لوگ بولتے ہیں۔،لیکن، وہ ساتھ ہی دوسری زبان بھی بولتے اور سمجھتے ہیں اسی لئے اس صدی کے اختتام تک ان  میں سے نصف زبانوں کے ختم ہوجانے کا خدشہ ہے۔

مستقبل میں بولی جانے والی زبانوں کا ڈھانچہ پیش کرتے ہوئے رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ دنیا کے ڈیڑھ ارب لوگ انگریزی زبان سیکھ رہے ہیں ان کے مقابلے میں فرنچ سیکھنے والوں کی تعداد آٹھ کروڑ بیس لاکھ، چینی زبان سکھنے والوں کی تعداد تین کروڑ، ہسپانوی سیکھنے والوں کی ایک کروڑ پتالیس لاکھ، جرمن سیکھنے والوں کی تعداد بھی ایک کروڑ ہے پتالیس لاکھ ہے، جبکہ اطالوی زبان صرف اسی لاکھ اور جاپانی زبان صرف تیس لاکھ لوگ سیکھ رہے ہیں۔ جس سے ان زبانوں کے مستقبل کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ بہ شکریہ وی او اے

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  99405
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
شام کی سات سالہ جنگ میں اس وقت ایک اہم ترین پیش رفت سامنے آئی ،جس نے پوری دنیا کو انگشت بدنداں کر دیا ہے ۔ شامی فوج نے اپنی سرحدی حدود کی خلاف ورزی کرنے والے صہیونی ایف16طیارے کو تباہ
روس کے ساتھ تعلقات دوستانہ، خوشگوار اور پائیدار بنانے کے سلسلے میں عوامی اور سیاسی سطح پر اتفاق رائے پایا جاتا ہے۔ یہی وہ بنیادی نکتہ ہے کہ عالمی سیاسی حلقوں اور تزویراتی موضوع پر قائم تھنک ٹینکس
پاکستان مشرق وسطی سے متصل اور خلیج فارس کے دہانے پر واقع ہے۔ مغربی ایشیا کے ساتھ تعلقات کے بارے میں پاکستان ہمیشہ حساس رہا ہے۔ اس خطے کے ساتھ پاکستان مذہبی، تاریخی، تہذیبی، سیاسی اور معاشی رشتوں میں بندھا ہوا ہے۔
سعودی عرب اور ایران کے مابین براہ راست تصادم کا اگرچہ دور دور تک کوئی امکان نہیں تاہم یہاں پاکستان میں دونوں ممالک کے حامی گروہ آستین چڑھا کر منہ سے کف بہاتے ہوئے ایک دوسرے کے خلاف یوں صف آرا ہیں گویا پاک سرزمین پر اہل تشیع کا بس

مزید خبریں
ہمارے نیم حکیموں کو کون سمجھائے کہ بلکتے، سسکتےعوام کو جمہوریت سے بدہضمی ہونے کا خوف دلانا چھوڑ دیجئے حضور! 144 معالجین کے مطابق انسانی معدے کی خرابی تمام بیماریوں کی ماں ہوتی ہے اور معدے کی خرابی سے ہی بدہضمی، ہچکی، متلی، قے، ہاتھوں میں جلن کا احساس، بھوک کا نہ لگنا، پژمردگی اور چہرے پر افسردگی کے اثرات چھائے
یہ سوال انتہائی اہم ہے کہ پارلیمنٹ لاجز میں ہونے والی غیر اخلاقی حرکتوں کے متعلق جمشید دستی کو کس نے ویڈیو ثبوت اور ”ناقابل تردید“ ثبوت فراہم کیے ہیں؟ یہ سوال بھی اہم ہے کہ آخر جمشید دستی نے یہ ا یشو کیوں چھیڑا ؟ اس کے نتیجے میں جو صورتحال پیش آسکتی ہے اس کے دور رس نتائج نکل سکتے ہیں۔
دہشت گردوں کی طرف سے جنگ بندی کے اعلان کے صرف 48 گھنٹے بعد ہی دارالحکومت اسلام آباد کودہشت گردی کا نشانہ بنادیا گیا۔
تھر کے بچوں کو بھوک اور افلاس نگل رہی اور الزامات کی سیاست عروج پر ہے۔ انسانوں کو کھا نا میسر ہے نا ہی مویشوں کو چارہ۔ تھر میں اب تک ایک سو اکیتس سے

مقبول ترین
یوم پاکستان کی مرکزی تقریب میں صدر، وزیراعظم، آرمی چیف، ملائیشین وزیراعظم مہاتیر محمد سمیت دیگر ممالک کی معزز شخصیات نے بھرپور شرکت کی۔ سپیکر قومی اسمبلی، چیئرمین سینیٹ، وفاقی وزراء، وزرائے اعلی، شوبز ستارے
نیوزی لینڈ کی تاریخ کی بدترین دہشت گردی کے ایک ہفتے بعد نہ صرف سرکاری طور پر اذان نشر کی گئی بلکہ مسجد النور کے سامنے ہیگلے پارک میں نمازِ جمعہ کے اجتماع میں وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کے علاوہ ہزاروں غیر مسلم افراد نے بھی شرکت کی۔
ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد کا سرمایہ کاری کانفرنس سے خطاب میں کہنا تھا کہ آزادی کے وقت ملائیشیا غریب ملک تھا۔ آزادی کے وقت طے کیا تھا کہ ملائیشیا ترقی کے مراحل طے کرے گا۔ ہم نے کوریا اور جاپانی لوگوں سے سبق لیا اور کام کیا۔
کراچی کی نیپا چورنگی پر ممتاز عالم دین مفتی تقی عثمانی قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے جب کہ ان کے دو گارڈ جاں بحق ہو گئے۔ ابتدائی طور پر اطلاعات تھیں کہ مختلف مقامات پر فائرنگ کے دو واقعات پیش آئے ہیں لیکن ایس ایس پی گلشن اقبال طاہر

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں