Thursday, 20 January, 2022
زندگی مکافات عمل ہے

زندگی مکافات عمل ہے
تحریر : علینا کمیر

اس بات کو کسی بھی صورت نظر انداز نہیں کیا جاسکتا کہ یہ زندگی مکافات عمل ہے۔ کچھ لوگ اپنا کیا اسی دنیا میں کاٹ لیتے ہیں اور کچھ لوگ آخرت میں۔ مگر کوئی اس سے بچ نہیں سکتا یہ بات تو واضح ہے اسے کسی بھی صورت میں جھٹلایا نہیں جا سکتا۔

مگر یہ انسان اس سب کو فراموش کرکے غلطیوں پر غلطیاں کیے جاتا ہے یہاں تک کہ وہ خدا کے عذاب کا شکار بن جاتا ہے اور اسے خبر تک بھی نہیں ہو پاتی۔
آج آپ جیسا کرو گے ویسا ضرور دیکھو گے چاہے خود کے ساتھ یا اپنی اولاد میں سے۔ مگر افسوس کی بات تو یہ یے کہ اس معصوم اور ننی جان کا کیا قصور ہے جسے تمہارے گناہ اپنی ضد میں لے لیں گے یا تمہارا ہی کیا اسے بھگتنا پڑے گا۔
اب چاہے آپ کسی کو طعنہ دو اور وہی طعنہ آپ کو گھیر لے، یا چاہے کسی کو بےاولاد کہو اور بے اولادی آپ کا پیچھا نا چھوڑے، کسی کو موٹا کہو اور وہ موٹاپا آپ کو اپنا شکار بنا لے، یا کسی کو غریب کہو اور اس کی آہ سے آپ کا مال آپ کا نا رہے، یا پھر کسی کی بیٹی کے  ساتھ اتنا برا سلوک کرو کہ کل کو آپ کی بیٹی بھی اسی سب سے دوچار ہو۔ یا اس سب سےمواثلت رکھتا ہوا کوئی بھی پہلو جسے ہم اپنی عام زندگی میں کوئی معنی نہیں دیتے مگر ہم یہ نہیں جانتے کہ یہ سب باتیں بہت معنی رکھتی ہیں خدا کی بارگاہ میں۔
یہ کوئی چھپا ڈھکا پہلو نہیں جس کا ذکر میں آج آپ کے ساتھ کر رہی ہوں۔ یہ ایک کھلی کتاب کی طرح پہلو ہے جس سے ہر کوئی بخوبی واقف ہے بس فرق اتنا ہے ہے کہ ہم اسے وقعت نہیں دیتے۔
اگر آج ہم ان معمولی معمولی باتوں کو اہمیت دینے لگیں گے تو ‌ہم خدا کے قہر سے محفوظ ہو سکتے ہیں اور اپنی آنے والی نسل کو بھی اس سب سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔
پس کچھ غور طلب ہے ! 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کالم نگار، بلاگر یا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ بھی ہمارے لیے کالم / مضمون یا اردو بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو قلم اٹھائیے اور 500 الفاظ پر مشتمل تحریر اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر اور مختصر تعارف کے ساتھ info@mubassir.com پر ای میل کریں۔ ادارہ

 

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  99464
کوڈ
 
   
مقبول ترین
نیشنل اسمال اینڈ میڈیم انٹر پرائزز (ایس ایم ای ڈی اے) پالیسی کے اجرا کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ صدی میں ایک مرتبہ ایسی صورتحال ہوتی ہے، عالمی مالیاتی ادارے (ڈبلیو ایچ او) سمیت دیگر اداروں نے تسلیم کیا
وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے سانحہ مری کی تحقیقاتی رپورٹ کی روشنی میں 15 افسران کو معطل کرکے انضباطی کارروائی کا حکم جاری کردیا۔ میڈیا کے مطابق سانحہ مری کی تحقیقاتی کمیٹی نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار
وزیراعظم عمران خان نے سانحہ مری میں متعدد افراد کی اموات پر تحقیقات کا حکم دے دیا۔ میڈیا کے مطابق مری اور گلیات میں شدید برفباری اور ٹریفک جام کے باعث سردی سے ٹھٹھر کر مرنے والے افراد کی تعداد 21 ہوچکی ہے
مری میں برفباری میں پھنسے 21 سیاح شدید سردی سے ٹھٹھر کر جاں بحق ہوگئے ہیں جبکہ وزیرداخلہ شیخ رشید نے فوج اور سول آرمڈ فورسز کو طلب کرلیا ہے۔ملک کے پُرفضا مقام مری میں شدید برف باری کے باعث ہزاروں سیاح پھنس کر رہ گئے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں