Sunday, 16 June, 2019
صاحبزادہ نورالحق قادری کے اعزاز میں جماعت اہل حرم کا استقبالیہ

صاحبزادہ نورالحق قادری کے اعزاز میں جماعت اہل حرم کا استقبالیہ

تقریب میں علماّ مشائخ اور صحافی حضرات کی بڑی تعداد نے شرکت کی


رپورٹ: نمائندہ خصوصی

اسلام آباد ۔ گزشتہ روز وفاقی وزیر مذہبی امور صاحبزادہ نورالحق قادری کے اعزاز میں جماعت اہل حرم نے استقبالیہ کا اہتمام کیا۔ جس میں علماّ مشائخ اور صحافی حضرات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ یہ تقریب جامعہ نعیمیہ اسلام آباد  میں منعقد ہوئی۔ استقبالیہ سے صاحبزادہ صاحب نے بہت ہی کھل کے خوبصورت خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ مراد آباد سے لیکر اسلام آباد تک تمام نعیمینز کی جدو جہد اور قربا نیوں کو سلام پیش کرتا ہوں۔

صاحبزادہ نورالحق قادری کا کہنا تھا کہ میری جماعت تحریک انصاف دینی جماعت نہیں ہے لیکن یہ جماعت دین بیزار بھی نہیں ہے۔ یہ دین سے محبت کرنے والی جماعت ہے۔عقیدہ اور ایمان وزیر اعظم پاکستان کے نصب العین کا حصہ ہے۔ ہم نے عہد کیا ہے کہ ہم پاکستان کی تعمیر قائد اعظم کے فرامین اور علامہ اقبال کے خوابوں کے مطابق کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ دین کو دین پر عمل کرنے والوں کی ضرورت ہے۔ صرف دین دین کہنے سے کام نہیں چلے گا۔آپ دین کا یا اسلام کا نام رکھ لیں اور کام اور ہوں تو یہ کونسا دین ہے؟ ایک صاحب کہتے ہیں کہ میں دین کا ٹھیکیدار نہیں ہوں میں دین کا چوکیدار ہوں۔ تو چوکیدار صاحب سے پوچھا جائے کہ پچھلے ادوار میں جب آپ پارلیمنٹ میں تھے اور اہم عہدوں پر فائز تھے تو آپ نے اس وقت کب دین کی چوکیداری کی ہے۔؟ 

انہوں کا کہنا تھا کہ مدارس اور دینی اقدار آپ کو تب یاد آتے ہیں جب آپ حکومت کا حصہ نہیں ہوتے۔آپ نہ دین کے ٹھیکیدار ہیں اور نہ چوکیدار ہیں۔ اس دین کو نہ ٹھیکیدار کی ضرورت ہے اور نہ چوکیدار کی ضرورت ہے۔کسی نے مجھے پرائی شادی میں عبد اللہ دیوانہ کہا ہے۔ میں مفتی گلزار نعیمی کا شکر گزار ہوں کہ مجھ پر تنقید کرنے والے کو سوشل میڈیا پر بہت اچھا جواب دیا ہے۔ پرائی شادی میں اگر پاکستان بہتر بن جاتا ہے اور پاکستان ترقی کرتا ہے اور پاکستان مستحکم ہوتا ہے تو یہ پرائی شادی نہیں یہ ہماری اپنی شادی ہوگی۔ اور اس میں ہم سب دیوانے ہونگے چاہے کوئی عبد اللہ ہو یا عبد الرحمن۔

صاحبزادہ نے بہت دوٹوک انداز میں کہا کہ ہم نے عمران خان کا کلمہ نہیں پڑھا اور نہ ہم عمران خان پر ایمان لائے ہیں۔ ہم اپنے رب پر ایمان لائے ہیں اور ہماری وفا اپنے نبی جناب محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ ہے۔ جب تک عمران ان وفاؤں کو ساتھ لیکر چلیں گے تو عمران خان کے ساتھ ہیں۔ مجھے جماعت کی طرف سے یہ ذمہ داری دی گئی ہے کہ میں تمام مسالک کو ساتھ لیکر چلوں۔میں اس ذمہ داری کو بلا تفریق مسلک پوری کرونگا۔ان شاء اللہ۔ہم ان لوگوں کو ساتھ لیکر چلنا چاہتے ہیں جو پاکستان کو خوشحال دیکھنا چاہتے ہیں۔

استقبالیہ تقریب میں خواجہ معین الدین کوریجہ، سید ثاقب اکبر، مظہر برلاس، پیر مقدس شاہ گیلانی، سبوخ سید، انتظار حیدری، نادر بلوچ اور دیگر علماء، مشائخ اور صحافیوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کالم نگار، بلاگر یا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ بھی ہمارے لیے کالم / مضمون یا اردو بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو قلم اٹھائیے اور 500 الفاظ پر مشتمل تحریر اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر اور مختصر تعارف کے ساتھ info@mubassir.com پر ای میل کریں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  22195
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
کل پارلیمنٹ میں پاکستان کی پارلیمانی تاریخ کا نہایت شرم ناک واقعہ پیش آیا جب حکومتی بنچوں سے ایک غیرمسلم ممبر پارلیمنٹ نے شراب پر پائبندی کا بل پیش کیا جسے پوری پارلیمنٹ نے متفقہ طور پر مسترد کردیا.صرف ایم ایم اے ممبرز نے رامیش
’’اختلاف‘‘ کا لفظ اتنا منفی مفہوم اختیار کر گیا ہے کہ بہت سے لوگ ہر قسم کا اختلاف ختم کرنے کے درپے ہوگئے ہیں حالانکہ اختلاف کے بعض خوبصورت اور اچھے پہلو بھی ہیں۔ تاہم بعض اختلافات ایسے ہوتے ہیں کہ جنھیں ختم کرنا چاہیے یا پھر جنھیں برداشت کرنا چاہیے۔
سوشل میڈیا پر 27 جولائی سے جس شخصیت کو سب سے زیادہ ٹارگٹ کیا جا رہا ہے یقینا وہ جناب مولانا فضل الرحمان ہی ہیں۔ ہر دوسرا تبدیلی کا دعوے دار، مخالف مسلک کا پیروکار، مولانا کا سیاسی مخالف، بس مولانا پر ہی لعن طعن کر کے ملک کے تمام مسائل حل اور نئی
پروردگار کا احسان عظیم ہے کہ ہمارے پیارے وطن پاکستان کو قیام میں آئے 71برس ہو رہے ہیں۔ اس مملکت خداداد کی اساس ان گنت قربانیوں پر استوار ہے جو ہمارے آباؤ اجداد نے اپنے لہو سے بنائی ہے اور ان قربانیوں کے ضمن میں مرد و خواتین دونوں نے

مقبول ترین
پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ جتنے کیس بنانے ہیں بنا لیں، میرے پورے خاندان کو جیل بھیج دیں، 1973 کے آئین، عوامی حقوق، لاپتاافراد ، سول کورٹس اور 18ویں ترمیم پر موقف نہیں بدلیں گے۔
قومی احتساب بیورو (نیب) نے میگا منی لانڈرنگ کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کو گرفتار کر لیا ہے۔ نیب نے فریال تالپور کے طبی معائنہ کیلئے ڈاکٹرز کی ٹیم کو طلب کر لیا ہے، انھیں کل احتساب عدالت میں پیش
سابق وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ عمران خان کا وقت پورا ہوچکا ہے اور وہ جلد انجام کو پہنچنے والے ہیں۔ کوٹ لکھپت جیل میں مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے سابق وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی، اس موقع پر رہنماؤں سے
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں اننت ناگ سے گزرنے والے بھارتی سیکیورٹی فورس (سینٹرل ریزرو پولیس فورس) کے قافلے پر 2 مسلح افراد نے فائرنگ کردی، ملزمان فائرنگ کے بعد فورسز کی گاڑی پر دستی بم بھی پھینک گئے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں