Monday, 27 January, 2020
کرپشن کے الزام میں گرفتاربیشترسعودی شہزادے ڈیل کرنے پر رضامند

کرپشن کے الزام میں گرفتاربیشترسعودی شہزادے ڈیل کرنے پر رضامند

ریاض ۔ انسداد کرپشن مہم میں گرفتار سعودی شہزادے اور دیگر افراد رہائی کے بدلے ڈیل کرنے پر رضامند ہوگئے ہیں۔ کرپشن کے الزام میں قید 320 افراد نے سعودی حکومت سے ڈیل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔کرپشن کے الزام میں قید سعودی شہزادوں اور تاجروں سے ڈیل ولی عہد محمد بن سلمان آئندہ چند ہفتوں میں کریں گے۔ 

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوٹر سعود المعجب کا کہنا ہے کہ بیشتر افراد معاملہ نمٹانے پر راضی ہوچکے ہیں اور اس سلسلے میں ضروری کارروائی عمل میں لائی جارہی ہے۔ کرپشن کے الزام میں قید سعودی شہزادوں اور تاجروں سے ڈیل ولی عہد محمد بن سلمان آئندہ چند ہفتوں میں کریں گے۔ 

سرکاری پراسیکیوٹر کے مطابق زیرِ حراست افراد کے خلاف کارروائی کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے، پہلے مرحلے میں جو لوگ لوٹی ہوئی قومی دولت واپس کرنے پر رضا مند ہیں، ان کی رہائی عمل میں لائی جارہی ہے جبکہ جو افراد تصفیے پر تیار نہیں ان کے خلاف مقدمہ چلایا جائے گا۔ ڈیل کرنے والے پر تمام چارچز ختم کرکے تحقیقات بھی ختم کردی جائیں گی۔

پبلک پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ کرپشن کے خلاف قائم کئے گئے کمیشن نے 320 افراد کو معلومات فراہم کرنے کی پیشکش کی، جبکہ 159 افراد زیر حراست رہیں گے، جن میں سے متعدد کو مقدمے کی کارروائی کے لیے پبلک پراسیکیوشن کے سپرد کردیا گیا ہے۔

گزشتہ دنوں کرپشن کے الزام میں قید سعودی شہزادہ متعب بن عبداللہ ایک ارب ڈالر کے عوض رہائی حاصل کرچکے ہیں۔

خیال رہے کہ گذشتہ ماہ 4 نومبر کو سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی سربراہی میں انسداد کرپشن کمیٹی نے موجودہ اور سابق وزراء سمیت کئی شہزادوں کو گرفتار کیا تھا۔ گرفتار سعودی شہزادوں میں ولید بن طلال بھی شامل تھے، جنہوں نے دنیا کے نامور ترین مالیاتی اداروں میں سرمایہ کاری کررکھی ہے، وہ شاہ سلمان کے سوتیلے بھتیجے ہیں جن کا شمار دنیا کے امیر ترین افراد میں ہوتا ہے۔ شہزادہ ولید بن طلال پر منی لانڈرنگ اور رشوت ستانی کے الزامات عائد کئے گئے ہیں۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  32746
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
جدید عرب دنیا میں سب سے طویل عرصے تک برسر اقتدار رہنے والے رہنما اور عمان کے سلطان قابوس 79 سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔
سعودی عرب میں صحافی جمال خشوگی قتل کیس میں 5 افراد کو موت کی سزا سنا دی گئی، جمال خشوگی کو استنبول میں واقع سعودی قونصل خانے میں قتل کر دیا گیا تھا۔
سعودی عرب اور پاکستان کے تعلقات ایسے نہیں، جہاں دھمکیوں کی زبان استعمال ہوتی ہو، سعودی سفارت خانے نے ملائیشیا سمٹ سے متعلق ترک صدر کے بیان کی تردید کرتے ہوئے کہا۔
سعودی عرب میں پولیس کی چھاپہ مار ٹیم اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ میں 8 دہشت گرد مارے گئے۔ سعودی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سعودی عرب کے شہر القطیف میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر پولیس نے چھاپہ مارا جس پر ملزمان

مزید خبریں
مسجد اقصیٰ کے امام وخطیب الشیخ اسماعیل نواھضہ نے برما میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی شدید مذمت کی اور عالم اسلام پر زور دیا کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کو ریاستی جبر وتشدد سے نجات دلانے کے لیے موثر اقدامات کریں

مقبول ترین
ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے پاکستان میں کرپشن سے متعلق اپنی رپورٹ پر وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ انڈیکس میں کہیں نہیں کہا کہ پاکستان میں کرپشن بڑھی، اخبارات اور کچھ سیاستدانوں نے رپورٹ کو غلط انداز میں بیان کیا ہے، موجودہ حکومت
میڈیا کے مطابق اسلام آباد کے فیصل چوک پر سنگل بند ہونے کے باوجود امریکی سفارت خانے کی گاڑی کے ڈرائیور نے گاڑی آگے بڑھا دی، تیز رفتاری کے باعث گاڑی سامنے سے آنے والے دوسری کار سے ٹکرا گئی۔ جس کے نتیجے خاتون جاں بحق
خیبرپختونخوا حکومت میں اختلافات پروزیراعلیٰ محمود خان نے ایکشن لیتے ہوئے 3 صوبائی وزراءکو کابینہ سے نکال دیاگیا اورگورنر خیبرپختونخواشاہ فرمان کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ دنیا مسئلہ کشمیرکو آسان نہ لے اور دنیا اب برملا تسلیم کررہی ہے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر اور بھارت میں غیرجمہوری اور فاشسٹ نظریہ مسلط کیاجارہا ہے۔ یہ خطے کی سلامتی اور امن کیلئے سب سے بڑا خطرہ ہے۔ بھارتی آرمی چیف کا کشمیر پر قبضے کا بیان غیر مناسب ہے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں