Monday, 25 June, 2018
خبر میڈیا پر آنے کے بعد سعودی عرب کا قطر سے مذاکرات سے انکار

خبر میڈیا پر آنے کے بعد سعودی عرب کا قطر سے مذاکرات سے انکار

دوحہ ۔ سعودی عرب کے کراﺅن پرنس اور قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد الثانی کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں اختلافات ختم کرکے آگے بڑھنے پر اتفاق کیا گیا لیکن خبر میڈیا پر نشر ہونے کے بعد سعودی عرب نے مذاکرات سے انکار کردیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجسنی کے مطابق جمعہ کے روز  قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد الثانی نے سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فونک رابطہ کیا، ولی عہد کے ساتھ بات چیت میں امیر قطر کا کہنا تھا کہ ان کا ملک بائیکاٹ کرنےوالے چار ممالک کے اعتراضات دور کرنے اور مشترکہ مفادات کے تحفظ کی ضمانت پر بات چیت کے لیے تیار ہے۔ تین ماہ کے دوران دونوں ملکوں کے درمیان یہ پہلا انتہائی اعلیٰ سطح کا رابطہ تھا۔ ٹیلی فونک گفتگو کے دوران دونوں رہنماﺅں نے اختلافات کا حل تلاش کرنے پر اتفاق کیا۔

قطر کی سرکاری خبر ایجنسی نے اس ٹیلی فونک گفتگو کی خبر دی اور کہا کہ دونوں رہنماﺅں کے درمیان رابطہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وجہ سے ہوا جس میں دونوں رہنماﺅں نے تین ماہ سے جاری تنازعہ مذاکرات کے ذریعے ختم کرنے پر زور دیا تاکہ خطے میں اتحاد و استحکام قائم رہے۔ 

اس رابطے میں محمد بن سلمان نے تجویز دی کہ تنازعہ کے خاتمے کیلئے دونوں ملک خصوصی سفیر مقرر کریں جو مذاکرات کا راستہ نکال سکیں۔ قطر کے امیر نے سعودی ولی عہد کی اس تجویز سے اتفاق کیا۔ 

دوسری جانب اس ٹیلی فونک رابطے کی خبریں میڈیا پر آنے کے بعد سعودی عرب نے کہا ہے کہ قطر کے ساتھ مذاکرات کا امکان ختم ہوگیا ہے۔ سعودی عرب نے الزام عائد کیا ہے کہ قطر کی جانب سے دونوں رہنماﺅں کے مابین ہونے والے ٹیلی فونک رابطے کو غلط رنگ دینے کی کوشش کی گئی ہے اور حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا ہے۔

یاد رہے قبل ازیں امریکا کے دورے کے دوران امیر کویت الشیخ صباح الاحمد الصباح نے ایک پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ قطر دہشت گردی کے خلاف یکساں موقف رکھنے والے چار عرب ممالک کے تمام 13 مطالبات پرعمل درآمد کے لیے بات چیت پر تیار ہے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  53955
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
ریاض۔سعودی عرب اور خلیجی ممالک میں شوال کا چاند نظر آگیا جس کے بعد وہاں آج عیدالفطرمنائی جا رہی ہے۔
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق 24 جون سے خواتین پر گاڑی چلانے کی پابندی ختم ہونے والی ہے جس کے لیے سعودی خواتین کافی پُر جوش بھی دکھائی دے رہی ہیں بلکہ خواتین کا ایک گروہ ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے موٹر سائیکل چلانا سیکھ رہی ہیں۔
سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اکیس اپریل کو شاہی محل پر حملے کے بعد سے لاپتا ہیں. ایرانی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ حملے میں مبینہ طور پر سعودی ولی عہد بھی زخمی ہوئے ، ان کے زخمی ہونے سے متعلق خبر سعودی خفیہ رپورٹ سے ملی۔
عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے آگئي ہے فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلی شہزادے ملوث ہیں۔ ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ

مزید خبریں
مسجد اقصیٰ کے امام وخطیب الشیخ اسماعیل نواھضہ نے برما میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی شدید مذمت کی اور عالم اسلام پر زور دیا کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کو ریاستی جبر وتشدد سے نجات دلانے کے لیے موثر اقدامات کریں
سعودی عرب کے فرمانروا شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز نے ایک شاہی فرمان کے ذریعے انٹیلی جنس چیف شہزادہ بندر بن سلطان کو ان کی علالت کے پیش نظر عہدے سے ہٹا دیا ہے اور ان کی جگہ ان کے نائب یوسف الادریسی کو محکمہ سراغرسانی کا قائم مقام سربراہ مقرر کیا ہے۔
سعودی مفتی صالح الفیضان نے بوفے کیخلاف فتویٰ جاری کردیا۔جمعے کوسعودی مفتی نے سرکاری ٹی وی پرفتویٰ جاری کرتے ہوئے بوفے کوغیرشرعی قراردے دیا۔
سعودی ولی عہد شہزادہ سلمان بن عبدالعزیز نے چین پر زور دیا ہے کہ وہ دیرینہ فلسطینی تنازعے اور شام میں جاری بحران کو حل کرانے میں کردار ادا کرے۔

مقبول ترین
بین الاقوامی سفارتی حلقوں میں یہ تاثر عام ہو رہا ہے کہ مودی سرکار اپنی داخلی اور خارجہ پالیسیوں کے تناظر میں بڑی حد تک حواس باختہ ہو چکی ہے۔ اس کا اندازہ یوں کیا جا سکتا ہے کہ گذشتہ دنوں خود بھارتی میڈیا کے مطابق چنائی میں چائنہ سٹڈی سنٹر
پاکستان میں جب سے سوشل میڈیا پر خاص و عام کی رسائی ممکن ہوئی ہے ہم نے بحیثیت قوم جہاں سوشل میڈیا پر بہت سی غیر ضروری ابحاث میں وقت برباد کیا وہیں اسی سوشل میڈیا کے ذریعے کئی تحریکوں نے جنم لیا ، کئی اسی سوشل میڈیا
الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے بیلٹ پیپرز کی چھپائی کے حوالے سے تینوں پرنٹنگ پریس کی سیکیورٹی کےلیے فوج کی نفری مانگ لی۔ الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے لیے فوج کی معاونت حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے
چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ کچھ لوگ چاہتے ہیں کہ انہیں گرفتار کیا جائے تاکہ وہ سیاسی شہید بن جائیں۔ لاہور میں نیب کمپلکس کے دورے کے موقع پر افسران سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ بدعنوانی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں