Friday, 18 October, 2019
ٹرمپ فیصلے کے خلاف دنیا بھر میں احتجاج کا سلسلہ جاری

ٹرمپ فیصلے کے خلاف دنیا بھر میں احتجاج کا سلسلہ جاری

غزہ۔ امریکا کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے پر دنیا بھر میں احتجاج  جاری ہے ،فلسطین میں بچے، بوڑھے اور خواتین ہزاروں کی تعداد میں سڑکوں پر نکل آئے،لبنان کے دارالحکومت بیروت میں امریکی سفارت خانے کے قریب سکیورٹی فورسز اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں ہوئی ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکا کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے پر دنیا بھر میں احتجاج کیا جا رہا ہے۔ فلسطین میں بچے، بوڑھے اور خواتین ہزاروں کی تعداد میں سڑکوں پر نکل آئے۔ 

غزہ کے علاقے میں اسرائیلی فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں چار فلسطینی شہید 1200 سے زائد زخمی ہو گئے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے پر احتجاج کا سلسلہ دنیا بھر میں پھیلتا جا رہا ہے۔ 

اسرائیلی وزیرِ اعظم بینجمن نتن یاہو کے دورہ فرانس سے پہلے پیرس میں مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے فلسطین کے حق میں نعرے لگائے۔دوسری جانب یونان کے دارالحکومت ایتھنز میں فلسطینیوں کے حق میں احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ 

مظاہرین نے شہر کی سڑکوں پر مارچ کیا اور امریکی سفارتخانے کے سامنے امریکی پرچم بھی نذر آتش کیا۔ 

جرمنی کے دارالحکومت برلن میں بھی امریکا کے سفارتخانے کے سامنے فلسطین کے حق میں مظاہرہ کیا گیا۔

ادھر غزہ کی پٹی، مغربی کنارے اور بیت اللحم میں اسرائیلی فورسز کی فائرنگ سے شہید فلسطینیوں کی تعداد چار ہو گئی۔ 

احتجاجی ریلی پر اسرائیلی فورسز نے پر آنسو گیس اور ربڑ کی گولیوں کا بے دریغ استعمال کیا۔ شہدا کے جنازے میں ہزاروں افراد نے شرکت کی، بچے، بوڑھے اور خواتین زار و قطار روتے رہے۔

ادھر عرب لیگ نے امریکہ پر زود دیا ہے کہ وہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے کو منسوخ کرے کیونکہ اس سے خطے میں تشدد میں اضافہ ہو گا۔

قاہرہ میں عرب ممالک کے 22 وزرائے خارجہ کے ہنگامی اجلاس کے بعد اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بدھ کو کیا گیا اعلان عالمی قوانین کی خطرناک خلاف ورزی ہے اور اس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

انڈونیشیا کے دارالحکومت جکارتہ میں بھی امریکی سفارت خانے کے باہر ہزاروں افراد نے صدر ٹرمپ کے فیصلے کے خلاف احتجاج کیا۔ 

ان کے ہاتھوں میں موجود بینرز پر یہ جملہ تحریر تھا کہ فلسطین ہمارے دلوں میں ہے۔سویڈن کے شہر گوتھنبرگ میں سنیچر کی رات گئے ایک جلتی ہوئی چیز کو یہودیوں کی عبادت گاہ پر پھینکا گیا۔ 

پولیس کا کہنا تھا کہ آگے لگانے کی یہ کوشش ناکام رہی تاہم یہودی کمیونٹی کے ایک رہنما ایلن سٹٹزنسکے نے انپے بیان میں اسے بڑا خطرہ قرار دیا ہے۔ 

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  72732
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
اسرائیلی جیلوں میں قید فلسطینیوں کو گرم کپڑے فراہم کرنے کی کوشش کی گئی مگرقابض جیل انتظامیہ نے اسیران کے لواحقین کو اسیران تک گرم کپڑے اور دیگر ضروریات کی فراہمی پر پابندی عاید کردی۔
صہیونی ریاست کی قید مغربی کنارے کے شہرالخلیل سے تعلق رکھنے والے 45 سالہ اسیر علا الدین فہمی فہد الکرکی قید کے چوبیس سال مکمل کرنے کے بعد اب 25 ویں سال میں داخل ہوچکے ہیں۔
مشرق وسطیٰ میں ایرانی سرگرمیوں کے خاتمے کے لیے ممکنہ امریکی فوج کے آپریشن سے معتلق سوال پر امریکا کے وزیر دفاغ جیمز میٹس نے کہا کہ ‘تاحال فوجی کارروائی کا کوئی امکان نہیں’۔
سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اسرائیل, یسرائیل کاٹز, سربراہ لیفٹینٹ جنرل گیڈی ائزنکوٹ, اسرائیل فلسطین تنازعہ, مسئلہ فلسطین,

مزید خبریں
مسجد اقصیٰ کے امام وخطیب الشیخ اسماعیل نواھضہ نے برما میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی شدید مذمت کی اور عالم اسلام پر زور دیا کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کو ریاستی جبر وتشدد سے نجات دلانے کے لیے موثر اقدامات کریں

مقبول ترین
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ یہ پہلی اسمبلی ہے جو’ڈیزل‘ کے بغیر چل رہی ہے اگر فضل الرحمان کے لوگ میرٹ پر ہوئے تو انہیں بھی قرضے دیے جائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے نوجوانوں کے لیے ’کامیاب جوان پروگرام‘ کا افتتاح کردیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پنجاب اور خیبر پختونخوا کے وزرائے اعلیٰ اورتین گورنرز نے شرکت کی۔ حکومت نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کے لیے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے
اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ نوکریاں حکومت نہیں نجی سیکٹر دیتا ہے یہ نہیں کہ ہر شخص سرکاری نوکر ی ڈھونڈے ، حکومت تو 400 محکمے ختم کررہی ہے مگرلوگوں کا اس بات پر زور ہے کہ حکومت نوکریاں دے۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خطے میں امن اور استحکام کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ایرانی صدر سے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ پاکستان اور

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں