Friday, 14 August, 2020
اسرائیل نےمسجد اقصیٰ شہید کرنے کا خطرناک منصوبہ تیار کر لیا

اسرائیل نےمسجد اقصیٰ شہید کرنے کا خطرناک منصوبہ تیار کر لیا

بیت المقدس۔ اسلام اور مسلمانوں پر ایک اور کاری ضرب لگانے کیلئے  بے لگام اسرائیل نے مسجد اقصیٰ کو شہید کرنے کا  خطرناک منصوبہ تیار کرلیا ، منصوبے کے تحت مسجد اقصیٰ کے ارد گرد کھدائی کی جائیگی ، اس منصوبے کو پروان چڑھانے کیلئے اسرائیلی حکومت نے 7کروڑ امریکی ڈالر کی خطیر رقم بھی مختص کردی۔

عرب خبررساں ادارے کے مطابق اسرائیل کی جانب سے ایک خطرناک منصوبہ تیار کیا گیا ہے جس کے تحت  مسجد اقصیٰ کو شہید کرنے کیلئے  7 کروڑ امریکی ڈالر کی خطیر رقم مختص کی  گئی ہے ۔ دوسری جانب فلسطینی مبصرین نے اس بھاری بھرکم صہیونی منصوبے کو براہ راست قبلہ اول کے خلاف سازش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ رقم کھدائیوں کے لیے نہیں بلکہ مسجد اقصی کو شہید کرنے کے لیے مختص کی گئی ہے، کیونکہ اس رقم کے استعمال سے مسجد اقصی کے گرد کھدائیوں کے ذریعے مقدس مقام کی بنیادیں کھوکھلی کی جائیں گی۔ 

ایک اخبار نے  اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ اسرائیلی وزارت ثقافت و اسپورٹس نے مسجد اقصی کے گرد مزعومہ ہیکل سلیمانی کی بنیادوں کی تلاش اور کھدائیوں کے لیے 20 کروڑ 50 لاکھ شیکل کی رقم مختص کی ہے۔فلسطینی رکن پارلیمان اور القدس کے لیے قائم کردہ مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کے رکن طلب ابوعرار نے قبلہ اول کے گرد کھدائیوں کے لیے بھاری رقوم مختص کیے جانے کو انتہائی خطرناک منصوبہ قرار دیا ہے۔ 

ان کا کہنا ہے کہ الاقصی کے گرد اور اس کی بنیادوں تلے کھدائیاں مغربی، صہیونی ایجنڈے کا حصہ ہیں جس کا مقصد مسجد اقصی کے وجود کو خطرے میں ڈالنا ہے۔طلب ابو عرار نے کہا کہ قبلہ اول کیارد گرد کھدائیوں کا سلسلہ نیا نہیں بلکہ مذکورہ خطیر رقم کے منصوبے ظاہر ہوتا ہے کہ یہودی انتہا پسندوں کی حکومت قبلہ اول کے وجود کو ختم کرنے کی گھنانی سازش کی مرتکب ہو رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بہ ظاہر اسرائیلی حکومت نے پرانے بیت المقدس اور مسجد اقصی کے گرد کھدائیوں کو آثار قدیمہ کی تلاش کی اسکیموں کا نام دیا ہے مگر در پردہ اسرائیل مسجد اقصی کی بنیادیں کمزور کرکے مسلمانوں کے تیسرے مقدس ترین مقام کے وجود کو ختم کرنا چاہتا ہے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  39684
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس نے کہا ہے کہ صہیونی حکومت اسرائیل کے ناپاک منصوبے عرب ممالک کے آپس کے اختلافات کا نتیجہ ہیں اور حماس نے غاصب صیہونی حکومت کے مقابلے میں استقامت کے لئے جامع قومی منصوبے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔
صنعا: سعودی فوجی اتحاد کی جانب سے یمن کے خلاف جاری جنگ میں متعدد بار سیز فائر کے اعلان کے باوجود سعودی حملے جاری ہیں۔ سعودی عرب کے جارح اتحاد نے مغربی یمن کے الحدیدہ صوبے پر توپخانے سے شیلنگ کر کے بیس افراد کو شہید اور زخمی کر دیا ہے۔
سعودی عرب میں مسجد نبوی اور فلسطین میں مسجد اقصیٰ کو نمازیوں کے لیے کھول دیا گیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے دنیا بھر میں دیگر مساجد کی طرح مسجد نبوی اور مسجد اقصیٰ کو بھی نمازیوں کے لیے بند کردیا گیا تھا۔
فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے امریکہ اور صیہونی حکومت کے ساتھ طے پانے والے تمام معاہدوں کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔ انہوں نے واضح کیا ہے کہ جن معاہدوں کو ختم کیا گیا ہے ان میں اوسلو معاہدہ بھی شامل ہے جس پر 1993 میں دستخط کیے گئے تھے۔

مزید خبریں
مسجد اقصیٰ کے امام وخطیب الشیخ اسماعیل نواھضہ نے برما میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی شدید مذمت کی اور عالم اسلام پر زور دیا کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کو ریاستی جبر وتشدد سے نجات دلانے کے لیے موثر اقدامات کریں

مقبول ترین
لاک ڈاؤن نے جہاں ہماری زندگی میں معیشت کا پہیہ جام کیا وہیں بہت سارے سبق بھی دے گیا۔ لاک ڈاؤن نہ ہوتا تو ہم شاید اپنی مصروف زندگی میں اتنے مصروف ہو جاتے کہ رشتوں، ناطوں کی اہمیت اور فیملی سسٹم کی خوبصورتی اور چاشنی سے مزید دور ہوتے چلے جاتے۔ وہ جو اک زندگی ہے نا کہ جس میں بیٹا دفتر جا رہا ہے، بیٹی یونیورسٹی جا رہی ہے، سب گھر والے ادھرادھر بکھرے پڑے ہیں۔
قومی اسمبلی سے انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا، شرکت داری محدود ذمہ داری سمیت پانچ بلز منظور کرلئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا جس میں کمپنیز ترمیمی بل اور نشہ آور اشیا کی روک تھام کا بل بھی شامل ہے۔
وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نورالحق قادری نے کہا ہے کہ اسرائیل میں موساد کی ایک خاتون جعلی اکاؤنٹ سے فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے۔ یہ خاتون فرقہ وارانہ موادسوشل میڈیا پربھیج دیتی ہے اورپھر آگے شیعہ اور سنی خود سے اسے پھیلاتے ہیں۔
سعودی عرب کے سابق انٹیلجنس افسر کی شکایت پر واشنگٹن کی ایک امریکی عدالت نے سعودی بن سلمان ولی عہد کو طلب کرلیا ہے۔ سابق سعودی انٹیلی جنس ایجنٹ کو مبینہ طور پر ناکام قاتلانہ حملے میں نشانہ بنایا گیا تھا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں