Wednesday, 11 December, 2019
ایل او سی، بھارتی فوج کی شیلنگ سے 2 افراد شہید

ایل او سی، بھارتی فوج کی شیلنگ سے 2 افراد شہید

راولپنڈی ۔ بھارتی فوج نے ایک بار پھر لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرتے ہوئے چری سیکٹرکے چھفر گاؤں میں ایک جنازے پربلااشتعال فائرنگ کی ہے جس کے نتیجے میں 2 پاکستانی شہری شہید اور ایک  بزرگ خاتون زخمی ہوگئی ہیں۔ پاک فوج کی موثرجوابی کارروائی میں ایک بھارتی فوجی ہلاک اور 4 سے 5 زخمی ہو گئے ہیں جبکہ ایک بھارتی چیک پوسٹ تباہ ہو گئی ہے۔ شہید ہونے والوں کی شناخت محمد اقبال کیانی اور ان کے کزن شوکت کیانی کے ناموں سے ہوئی ہے، جو قریبی گاؤں ’چھفر‘ کے رہائشی تھے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارت کی جانب سے ایک بار پھر سیزفائر معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی ہے، بھارتی فورسز نے لائن آف کنٹرل کے چری سیکٹرکے ضلع پونچھ کے عباس پور سیکٹر کے چھفر گاؤں میں جنازہ کو نشانہ بنائے جانے کے نتیجے میں 2 افراد شہید اور بزرگ خاتون زخمی ہوگئیں ہیں۔ پاک فوج کی موثرجوابی کارروائی میں ایک بھارتی فوجی ہلاک اور 4 سے 5 زخمی ہو گئے۔ جب کہ جوابی کارروائی میں بھارتی پوسٹ بھی تباہ کردی گئی ہے۔ بھارتی فوج کی جانب سے فائرنگ و گولہ باری اس وقت کی گئی، جب مقامی افراد ایک شخص کی تدفین میں مصروف تھے۔ بھارتی فوج نے مقامی گراؤنڈ میں تدفین کرنے والوں کو نشانہ بنایا۔ شہید ہونے والوں کی شناخت محمد اقبال کیانی اور ان کے کزن شوکت کیانی کے ناموں سے ہوئی ہے، جو قریبی گاؤں ’چھفر‘ کے رہائشی تھے۔

عباس پور میں وکیل افضل کیانی نے میڈیا کو بتایا کہ مقامی افراد نے ابھی میت کو قبر میں اتارا ہی تھا کہ شیلنگ شروع ہوگئی۔ لوگوں نے درختوں کے پیچھے پناہ لینے کی کوشش کی لیکن اس کے باوجود 2 افراد مارٹر گولے کے اسپلنٹرز لگنے سے شہید ہوگئے۔ بھارتی فوج کی شیلنگ سے شفر گاؤں میں اپنے گھر کے باہر روز مرہ کا کام کرنے والی 65 سالہ بیوہ حَسیرا بیگم زخمی ہوئیں، جنہیں ’ٹی ایچ کیو‘ منتقل کیا گیا ہے، جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

شہید ہونے والوں کی شناخت محمد اقبال کیانی اور ان کے کزن شوکت کیانی کے ناموں سے ہوئی ہے، جو قریبی گاؤں ’شافر‘ کے رہائشی تھے۔ علاقہ مکینوں کا کہنا تھا کہ شوکت کیانی نام کمیشنڈ افسر (صوبیدار) تھے جو چھٹیاں گزارنے اپنے گھر آئے تھے۔ ان کی لاش کو ضابطے کی کارروائی کے لیے عباس پور کے تحصیل ہیڈکوارٹرز ہسپتال (ٹی ایچ کیو) منتقل کردیا گیا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج کی جانب سے بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کا بھرپور جواب دیا گیا اور جوابی فائرنگ میں ایک بھارتی فوجی ہلاک جب کہ 5 زخمی ہوگئے ہیں جب کہ جوابی کارروائی میں بھارتی پوسٹ بھی تباہ کردی گئی ہے۔

ریاستی ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر سعید قریشی نے کہا کہ تازہ واقعے کے بعد رواں برس بھارت کی جانب سے اب تک 1300 سے زائد مرتبہ ورکنگ باونڈری کی خلاف وزری کی جاچکی ہے، جس کے نتیجے میں شہید ہونے والے شہریوں کی تعداد 46 ہوچکی ہے، جبکہ 257 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

پاکستان اور بھارت کے درمیان ایل او سی پر جنگ بندی کے لیے 2003 میں ایک معاہدے پر دستخط ہوئے تھے، لیکن اس کے باوجود بھی جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری ہے۔

گذشتہ ماہ بھی چری کوٹ سیکٹر میں بھارتی فورسز کی بلا اشتعال فائرنگ سے خاتون کی شہادت پر بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو دفترخارجہ طلب کرکے احتجاج ریکارڈ کروایا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  39540
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
دفتر خارجہ کی جانب سے اس دورے کا اہتمام کیا گیا تاکہ آزاد کشمیر میں دہشت گردوں کے اڈے تباہ کرنے کے بھارتی جھوٹ کو بے نقاب کیا جاسکے۔ اس موقع پر ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل بھی موجود تھے۔
لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کا ایک جوان شہید ہوگیا۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق ایل او سی پر بھارت کی جانب سے سیز فائر معاہدے کی خلاف
مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی جبری پابندیوں اور لاک ڈاؤن کو ایک ماہ گزر گیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ وادی میں ایک ماہ سے سب کچھ بند، مواصلاتی رابطے معطل ہیں جس کے باعث بیرونی دنیا سے رابطہ منقطع ہے۔
وادی میں بھارتی فوج کے خلاف زبردست مظاہرہ کیا گیا، کشمیری نوجوانوں نے سر پر کفن باندھ لیا۔ خواتین بھی احتجاج میں شریک ہوئیں، بھارتی فوج کی فائرنگ اور پیلٹ گن سے درجنوں کشمیری زخمی ہوگئے۔ ظالم بھارتی فوج نے گھروں میں محصور

مقبول ترین
امریکا نے پاکستان میں جعلی انکاؤنٹرز کے لیے بدنام سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار پر پابندیاں عائد کر دیں۔امریکی محکمہ خزانہ سے جاری بیان کے مطابق راؤ انوار، سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) ملیر کے طور پر متعدد جعلی پولیس
وزیراعظم عمران خان سمیت متعدد وفاقی وزراء نے مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کی مخالفت کردی۔ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں ملکی
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی زیر صدارت کور کمانڈرز کانفرنس ہوئی جس میں مسلح افواج کے پیشہ وارانہ اور آپریشنل امور پر تبادلہ خيال کیا گیا، اس کے علاوہ کانفرنس میں خطے کی سلامتی
پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں بنیادی انسانی حقوق کی پامالی عروج پر ہے، عالمی برادری اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کے حل میں اپنا کردار ادا کرے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں