Thursday, 22 August, 2019
بھارت مقبوضہ کشمیر میں کیمیائی ہتھیار استعمال کر رہا ہے، مسعود خان

بھارت مقبوضہ کشمیر میں کیمیائی ہتھیار استعمال کر رہا ہے، مسعود خان

اسلام آباد ۔ آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ بھارتی سیکیورٹی فورسز مقبوضہ کشمیر میں صرف انسانی حقوق کی خلاف ورزی نہیں بلکہ معصوم افراد کے خلاف کیمیائی ہتھیار استعمال کر رہی ہیں لیکن عالمی اداروں نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیےکردار ادا نہیں کیا۔

اسلام آباد میں انسانی حقوق کے عالمی دن کی مناسبت سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مسعود خان نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی کوشش کی جارہی ہے اور آر ایس ایس کے انتہاپسند شہریوں کو ریاست چھوڑنے کے لیے دھمکیاں دے رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانیت کے خلاف جرائم کا ارتکاب کیا جارہا ہے اور بھارتی فورسز کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کر رہی ہیں۔

صدر آزاد کشمیر نے دعویٰ کیا کہ پلواما اور اننت ناگ میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی شہادتیں موجود ہیں۔

خیال رہے کہ رواں سال کے اوائل میں دفتر خارجہ نے مقبوضہ کشمیر میں شہریوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی جانب توجہ مبذول کرانے کی کوشش کی تھی تاہم پہلی مرتبہ بھارتی فورسز کی جانب سے کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کا الزام سامنے آیا ہے۔

بین الاقوامی قوانین اور کیمیائی ہتھیاروں کے کنونشن کے مطابق مسلح تنازعات سمیت کسی بھی صورت حال میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی اجازت نہیں ہے۔

غیرملکی دورں کا ذکر کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اپنے حالیہ دورہ برسلز اور واشنگٹن کے دوران مسئلہ کشمیرکے حل پر زور دیا۔

انھوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے مضبوط پاکستان کا ہونا بہت ضروری ہے جبکہ اقوام متحدہ سمیت کسی عالمی ادارے نے مسئلے کے حل کے لیے آواز بلند نہیں کی۔

صدر آزاد کشمیر کا کہنا تھا کہ کشمیریوں اور پاکستان کے درمیان رخنہ ڈالنے کی مہم کسی صورت کامیاب نہیں ہوگی۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  18066
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
بھارتی جارحیت کے خلاف ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے، تدفین میں ہزاروں افراد کی شرکت کی، شرکا کے بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں نعرے ، شرکاء پرآنسو گیس کی شیلنگ
صدرآزاد کشمیرمسعود احمد خان نے کہا ہے کہ پاکستان اورکشمیر کو ایک دوسرے سے علیحدہ نہیں کیا جاسکتا جب کہ کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے۔ بھارت کشمیریوں کی جدوجہد کو دہشت گردی سے ملانے کا پروپیگنڈا کر رہا ہے۔
مقبوضہ وادی کشمیر میں کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال معمول بن گیا، گزشتہ روز پلوامہ میں چار مکانات کو کیمیائی مواد سے اڑا دیا گیا جس میں شہید ہونے والے چار معصوم کشمیریوں کی لاشیں بھی ناقابل شناخت ہو گئیں۔
مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ کے گاؤں کنڈی اگلرمیں قابض بھارتی سیکیورٹی فورسز کی کارروائی میں کالعدم جیشِ محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کے بھتیجے طلحہ رشید کی اپنے دو ساتھیوں سمیت مبینہ طور پر جاں بحق ہونے کی اطلاعات ہیں۔

مقبول ترین
ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ جنرل قمر جاوید باجوہ پاکستان آرمی کے زبردست سپہ سالار ہیں۔ گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان نے جنرل قمر جاوید باجوہ کو مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر کیا تھا۔ اس حوالے سے پاکستان کے دیرینہ دوست
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ سفاک مودی سرکار تمام انسانی و بین الاقوامی قوانین و ضوابط روند رہی ہے اور کشمیریوں کو نشانہ ستم بنانے کی تیاریوں میں ہے۔ میڈیا کے مطابق تحریک انصاف نے مقبوضہ کشمیر پر بھارتی قبضے اور اہل کشمیر
پاک فوج نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ اور سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیوں کا منہ توڑ جواب دیا جس کے نتیجے میں ایک افسر سمیت 6 بھارتی فوجی ہلاک اور 2 بنکرز تباہ ہوگئے۔
پاکستان نے مسئلہ کشمیر کو عالمی عدالت انصاف میں لے جانے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے۔ میڈیا کے مطابق آئندہ ماہ جنیوا میں انسانی حقوق کمیشن اجلاس بلانے کیلئے وزارت خارجہ نے تیاری شروع کر دی ہے اور اس سلسلے میں سابق سیکرٹری

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں