Wednesday, 20 February, 2019
مقبوضہ کشمیر، مقبول بٹ کی شہادت کی برسی پر مکمل ہڑتال

مقبوضہ کشمیر، مقبول بٹ کی شہادت کی برسی پر مکمل ہڑتال

سرینگر۔ مقبوضہ کشمیر میں ممتاز کشمیری رہنما محمد مقبول بٹ کی شہادت کی برسی پرآج مکمل ہڑتال ہے۔ سرینگر اور دیگر تمام بڑے قصبوں میں بازار اورکاروباری مراکز بند ہیں جبکہ سڑکوں پر ٹریفک معطل ہے۔کٹھ پتلی انتظامیہ نے حریت قیادت کی طرف سے ہونے والے اقوام متحدہ کے دفتر کی طرف مارچ روکنے کے لیے سخت پابندیاں عائد کر دی ہیں،اور حریت رہنماؤں کو انکے گھروں میں نظر بندکر دیا گیا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ہڑتال کی کال سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے دی ہے۔ حریت قیادت نے آج سرینگر کے علاقے سونہ وار میں قائم اقوام متحدہ کے مبصرین دفتر کی طرف پر امن مارچ کی بھی کال دے رکھی ہے جسکا مقصد شہید مقبول بٹ اور ایک اور کشمیری رہنماشہید محمد افضل گورو کی میتوں کو انکے اہلخانہ کے حوالے کرنے کے کشمیریوں کے مطالبے پر زور دینا ہے۔ 

 کٹھ پتلی انتظامیہ نے مارچ کو روکنے کیلئے سرینگر اور دیگر قصبوں میں بڑی تعداد میں بھارتی فوجی اور پولیس اہلکارتعینات کر دیئے ہیں جبکہسید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق، محمد یاسین ملک ، محمد اشرف صحرائی، مختار احمد وازہ، غلام احمد گلزار، محمد یوسف نقاش، بلال صدیقی، محمد اشرف لایہ، عمر عادل ڈاراور سید امتیاز حیدر کو مارچ کی قیادت سے روکنے کیلئے گھروں ، تھانوں اور جیلوں میں نظر بندکر دیا ہے۔ 

 دریں اثنا مشترکہ مزاحمتی قیادت نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ محمد مقبول بٹ اور محمد افضل گورو کی پھانسی عدالتی تاریخ کا ایک سیاہ باب ہے ۔ بیان میں لوگوں کو شہید رہنماﺅں کی برسیوں کے سلسلے میں مختلف پروگراموں کے انعقاد سے روکنے کیلئے پابندیوں کے نفاذ پر کٹھ پتلی انتظامیہ کی شدید مذمت کی گئی ہے۔

 کل جماعتی حریت کانفرنس کےچیئرمین سید علی گیلانی نے ممتاز کشمیر ی رہنما شہید محمد مقبول بٹ کو شہادت کی 34ویں برسی پر شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہید ایک بہادر اور باہمت حریت پسند تھے، جنہوں نے اپنی جان کا نذرانہ دیکر باطل کے خلاف مزاحمت کا عملی نمونہ پیش کیا۔

 سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں نئی دلی کی تہاڑ جیل میں دفن شہید محمد مقبول بٹ اور شہید محمد افضل گورو کی میتوں کو انکے اہلخانہ کے حوالے کرنے کا مطالبہ دہراتے ہوئے کہا کہ یہ سراسر ایک انسانی مسئلہ ہے۔ سید علی گیلانی نے کہا کہ میتوں کو انکے اہلخانہ کے حوالے کرنے کے بجائے جیل کے احاطے میں دفنانے کے عمل سے بھارتی جمہوریت کا اصل چہرہ بے نقاب ہو چکا ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ زندہ قومیں ان سرفروشوں کو کبھی فراموش نہیں کرتیںجو اپنا آج قوم کے روشن کل کے لیے قربان کرتے ہیں۔حریت چیئرمین نے کہا کہ شہید محمد مقبول بٹ ،شہید محمد افضل گورو اور دیگر لاکھوں شہداءکو خراج پیش کرنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ اس مشن کے ساتھ وفا کی جائے اور اس کو ہر صورت میں آگے بڑھایا جائے۔ 

سیدعلی گیلانی صاحب نے کہا کشمیری بھارت کے غیر قانونی تسلط سے نجات کیلئے بیش بہا قربانیاں دے رہے اور ان قربانیوں کی حفاظت ایک اہم اور مقدس فریضہ ہے۔انہوں نے کہا کہ آزادی کی منزل پانے اور قربانیوں کا ثمر حاصل کرنے کے لیے ضروری ہے کہ کشمیری مقبوضہ علاقے میں موجود بھارت کی کٹھ پتلیوں اور اس کے ایجنٹوں سے مکمل کنارہ کشی اختیار کریں کیونکہ ان بھارت نواز سیاستدانوں کی وجہ سے ہی ہماری آزادی کی منزل دور ہورہی ہے۔ سید علی گیلانی نے کہا کہ یہ بھارت نواز سیاست دان اپنی کرسیوں اور عیاشیوں کے عوض بھارت کے آگے اپنی خودداری کا سودا کرچکے ہیں اور یہ لوگ بے گناہ کشمیریو ں کے قتل عام میں برابر کے شریک ہیں۔ 

دریں اثنا سید علی گیلانی کی ہدایت پر تحریک حریت جموںوکشمیر کا ایک وفد محمد رفیق اویسی کی قیادت میں شہید محمد افضل گورو کے گھر گیا اور شہید کے فرزند غالب گورو کو تفہیم القرآن کا نسخہ پیش کیا۔ وفدمیں رفیق اویشی کے علاوہ مختار احمد اور رمیز راجہ شامل تھے۔ 

خیال رہے کہ بھارت نے محمد مقبول بٹ کو 11فروری1984کو جبکہ محمد افضل گورو کو 9 فروری2013 کو جدو جہدآزادی میں انکے بھر پورکردار کی پاداش میں نئی دلی کی بدنام زمانہ تہاڑ جیل میں پھانسی دیکر انکی میتوں کو جیل کے احاطے میںہی دفن کر دیا تھا۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  28064
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
بھارتی فورسز نے پاکستانی آبادی کو اپنی بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کا نشانہ بنایا، پاکستانی فوج نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے 3 ہندوستانی فوجیوں کو جہنم واصل کر دیا۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر شاہ کوٹ کے مقام پر شہری آبادی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ایک خاتون شہید ہوئی جن کی شناخت آسیہ بی بی کے نام سے ہوئی۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کیے گئے بیان کے مطابق بھارتی فوج نے تھب سیکٹر پر بلا اشتعال فائرنگ کی، جس کی زد میں آکر سپاہی ظہیر احمد نے جام شہادت نوش کیا۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کا سلسلہ جاری ہے اور تازہ واقعے میں بھارتی فوج نے ایک بار پھر لائن آف کنٹرول پر آبادی کو نشانہ بنایا۔

مزید خبریں
وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر چوہدری عبدالمجید نے کہاہے کہ وکلاء براردی کے جملہ مسائل حل کرنے کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ وکلاء اپنی سفارشات تحریری طور پر بھجوائیں۔ وہ پیر کے

مقبول ترین
عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو سے متعلق کیس کی سماعت دوسرے روز بھی جاری رہی، ایڈہاک جج جسٹس (ر) تصدق جیلانی ناسازی طبع کے باعث عدالت نہیں آئے۔ پاکستان کے اٹارنی جنرل انور منصور نے تصدق حسین جیلانی کی علالت
پلوامہ حملے پر قوم سے خطاب میں وزیر اعظم نے کہا کہ چند دن پہلے مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں واقعہ ہوا،بھارت نے بغیرسوچے سمجھے پاکستان پر الزام لگادیا، ہم سعودی ولی عہد کے دورے کی تیاری کررہے تھے، اس لئے اب بھارتی
سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان دو روزہ دورہ مکمل کر کے پاکستان سے روانہ ہو گئے۔ روانگی سے قبل نور خان ایئربیس پر وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے سعودی ولی عہد کا کہنا تھا کہ پاکستان جیو اسٹریٹجک اعتبار
سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان کے دورے پاکستان کے بعد جاری مشترکہ اعلامیے میں دونوں برادر ممالک کے درمیان تاریخی تعلقات کی تجدید کرتے ہوئے تمام شعبوں میں باہمی تعلقات کی بڑھتی ہوئی رفتار پر اطمینان کا اظہار کیا گیا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں