Sunday, 19 November, 2017
مقبوضہ کشمیر، بھارتی فوج نے مزید 2 نوجوانوں کو شہید کردیا

مقبوضہ کشمیر، بھارتی فوج نے مزید 2 نوجوانوں کو شہید کردیا

سری نگر۔ قابض بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر کے ضلع کلگام کےعلاقے میں سرچ آپریشن کے دوران مزید 2 کشمیری نوجوانوں کو فائرنگ کرکے شہید اورایک لڑکی کوزخمی کردیا ہے۔ شہید ہونے والے نوجوانوں کی شناخت احمد وانی اور داؤد الٰہی خان کے نام سے ہوئی ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کےمطابق مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جانب سے نہتے کشمیریوں پر مظالم میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے اور طاقت کے نشے میں چور بھارتی فوج کشمیریوں کا قتل عام کررہی ہے۔

گزشتہ چند ماہ کے دوران سیکڑوں کشمیریوں کو شہید اور متعدد کو پیلٹ گن کے ذریعے آنکھوں کی روشنی سے محروم کیا جاچکا ہے۔ب

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے دورے کے خلاف احتجاج کے لیے مکمل ہڑتال کی گئی، کٹھ پتلی حکومت نے حریت رہنماؤں کو نظر بند کردیا جبکہ قابض فوج نے گھر گھر تلاشی کے دوران مزید 2 نوجوانوں کو شہید اور ایک لڑکی کوزخمی کردیا ہے، شہدا کی شناخت احمد وانی اور داؤد الٰہی خان کے نام سے ہوئی ہے۔

کشمیری نوجوانوں کی شہادت کے بعد کلگام میں مکمل ہڑتال ہے جب کہ قابض انتظامیہ نے کلگام میں موبائل اور انٹرنیٹ سروس بھی معطل کردی ہے۔  ہڑتال کی کال سید علی گیلانی ،میرواعظ عمرفاروق اور محمدیاسین ملک پر مشتمل مشترکہ مزاحمتی قیادت نے دی تھی۔ تمام دکانیں اورکاروباری مراکزبندرہے جبکہ سرینگر، اسلام آباد، کولگام، شوپیان، پلوامہ، بارہ مولہ ، بڈگام اور دیگرعلاقوں میں گاڑیوں کی آمدورفت معطل تھی۔

دوسری جانب راج ناتھ سنگھ ہفتے کو 4روزہ دورے پر سرینگر پہنچے۔ قابض انتظامیہ نے سری نگر کے رعناواری، خانیار، نوہٹہ ،مہاراج گنج، صفاکدل اور مائسمہ پولیس اسٹیشنوں کی حدود میںسخت پابندیاں عائد کردیں۔ سری نگر میں بھارت مخالف مظاہروں کو روکنے کے لیے بھارتی فورسز کی بھاری تعداد تعینات کی گئی تھی۔

قابض انتظامیہ نے سید علی گیلانی اور میر واعظ عمر فاروق کو مسلسل گھروں میں جبکہ جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک کو سینٹرل جیل سرینگر میں نظربند رکھا۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے ایک بیان میں کہا کہ مقبوضہ علاقے میں سیاسی سرگرمیوں پر پابندیاں مزاحمتی قیادت کی اخلاقی فتح ہے۔ انھوں نے اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فورسز کی طرف سے جاری انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں کا نوٹس لیں۔
بھارتی فوجیوں نے ضلع شوپیاں کے علاقے بارہ بگ میں رات بھر جاری رہنے والے محاصرے اور تلاشی کے آپریشن کے دوران 2 نوجوانوں کو شہید کردیا۔ نوجوانوں کی شناخت طارق احمد بٹ اور الطاف احمد کے طور پر ہوئی ہے۔ ضلع کے علاقے ہرمین میں بھارتی فوجیوں کی فائرنگ سے ایک لڑکی زخمی ہوئی جس کی شناخت خوشبو کے طورپر ہوئی ہے۔

ادھر ضلع بارہمولہ کے علاقے رفیع آباد میں مجاہدکمانڈر شاہد احمد شیخ کی نمازہ جنازہ میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی۔ نماز جنازہ میں شرکت کے لیے رفیع آباد، قاضی آباد اور زینہ گیر سے لوگوں کی بڑی تعدادنے شاہد احمد کے آبائی علاقے کاچھلو کی طرف مارچ کیا۔ ان کو آزادی اور پاکستان کے حق میں اور بھارت کے خلاف نعروں کی گونج میں سپرد خاک کیا گیا۔

شاہد احمد کو بھارتی فوجیوں نے گزشتہ روز سوپور میں محاصرے اور تلاشی کی ایک کارروائی میں شہید کیا تھا۔ بھارتی فوجیوں نے آپریشن کے دوران ایک مکان کوبھی تباہ کردیا۔ علاقے میں نوجوان سڑکوںپر نکل آئے اوربھارتی فوجیوں پر پتھراؤ کیا۔ضلع میں ٹرین سروس روک دی گئی جبکہ موبائل اور انٹرنیٹ سروسز معطل کردی گئیں۔

علاوہ ازیں سرینگر کے علاقے خیام میں بھارتی پیرا ملٹری سینٹرل ریزرو پولیس فورس کی ایک گاڑی نے ایک بزرگ شخص ثنا اللہ میر کو کچل کر شہید کردیا۔نامعلوم حملہ آوروں نے اسلام آباد قصبے میں پولیس پارٹی پر حملہ کرکے ایک اہلکار کو ہلاک اور2 کو شدید زخمی کردیا۔ حملہ آوروں نے پولیس پارٹی پر بس اسٹینڈ کے نزدیک شدید فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک اہلکار امتیاز احمدموقع پر ہی ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے۔

بھارتی فورسز نے علاقے کو محاصرے میں لے کر حملہ آوروں کی تلاش شروع کردی ہے جب کہ مقبوضہ کشمیر میں جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ نے پارٹی چیئرمین یاسین ملک کی گرفتاری اورکل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی اور میرواعظ عمر فاروق کی گھر میں نظر بندی کے خلاف سری نگر میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔

واضح رہے کہ عید الاضحیٰ کے روز بھی قابض بھارتی فوج کی فائرنگ سے ایک کشمیری نوجوان شہید ہوا تھا۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  36708
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوج کا نہتے کشمیریوں پر ظلم و بربریت کا سلسلہ برقرار ہے اور گھر گھر تلاشی اور سرچ آپریشن کے نام پر چادر اور چاردیواری کا تقدس پامال کرنے اور جعلی مقابلوں میں نوجوانوں کو شہید کیا جارہا ہے۔
بھارتی فوج نے پاکستانی علاقے آزاد جموں و کشمیرمیں لائن آف کنٹرول کے تیتری نوٹ اور ستوال سیکٹر پر بلا اشتعال فائرنگ کی ہے جس کے نتیجے میں ایک خاتون شہید اور نوجوان زخمی ہوگیا ہے۔جسے علاج کے لیے عباس پورہ کے شیخ خلفیہ بن زیاد النہیان ہسپتال میں منتقل کردیا گیا ہے۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فورسز نے ایک بار پھر ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے، بھارتی فوج نے چری کوٹ سیکٹر میں بلا اشتعال
مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج نے دو کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا ہے۔ مظالم کے خلاف احتجاج کرنیوالوں کو تشدد کرکے ڈیڑھ سو کو زخمی کردیا ہے۔ شہید ہونے والے جوانوں کی شناخت عاشق احمد بٹ اور طیب مجید میر کے ناموں سے ہوئی ہے۔

مزید خبریں
وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر چوہدری عبدالمجید نے کہاہے کہ وکلاء براردی کے جملہ مسائل حل کرنے کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ وکلاء اپنی سفارشات تحریری طور پر بھجوائیں۔ وہ پیر کے

مقبول ترین
اجلاس کی صدارت مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمان نے کی۔ اجلاس میں زونل کمیٹی کے اراکین اور محکمہ موسمیات کے نمائندے شریک ہوئے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق، آج کراچی سمیت سندھ کے ساحلی علاقوں میں چاند نظر
نواز شریف نے کہا کہ پاناما کیس کی نظرثانی اپیل کے عدالتی فیصلے میں سوال اٹھایا گیا کہ قافلے کیوں لٹتے رہے، ہمیں معلوم ہے اور اس قوم کو بھی معلوم ہے کہ آپ نے کبھی راہزنوں سے کوئی گلہ نہیں کیا، آپ نے تو 70 سال میں کسی راہزن سے سوال تک نہ کیا اور کسی راہزن کو کٹہرے میں بھی نہیں لائے۔
دھرنا مظاہر کے خلاف آپریشن کسی بھی وقت ہوسکتا ہے لیکن یہ آخری آپشن ہے۔ وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ختم نبوت یہ تاثر دینا کہ ختم نبوت کے
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوج کا نہتے کشمیریوں پر ظلم و بربریت کا سلسلہ برقرار ہے اور گھر گھر تلاشی اور سرچ آپریشن کے نام پر چادر اور چاردیواری کا تقدس پامال کرنے اور جعلی مقابلوں میں نوجوانوں کو شہید کیا جارہا ہے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں