Thursday, 22 August, 2019
’’ایٹمی پاکستان کشمیر کے حوالے سے کردار ادا کرے، ڈاکٹر خالد محمود خان‘‘

’’ایٹمی پاکستان کشمیر کے حوالے سے کردار ادا کرے، ڈاکٹر خالد محمود خان‘‘

ڈڈیال۔  جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بد ترین خلاف ورزیاں کی جا رہی ہیں ، آئے روز نہتے شہریوں کو گرفتار کر کے ٹارچر سیلوں میں ڈالا جا رہا ہے ، بچوں ، خواتین اور بوڑھوں کو بد ترین تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے پیلٹ گن جیسے ممنوعہ ہتھیاروں سے نوجوانوں کو بینائی سے محروم کیا جا رہا ہے ۔ٹرمپ کا موجودہ فیصلہ امریکہ کے زوال کا سبب بنے گا ۔ ایٹمی پاکستان کو آگے بڑھ کر فلسطین اور کشمیر کے حوالے سے کردار ادا کرنا چاہیے ۔ 

ان خیالات کا اظہار انہوںنے عالمی انسانی حقوق کے عالمی دن کے حوالے سے تحریک کشمیر برطانیہ کے زیر اہتمام ڈڈیال میں کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

اس موقع پر تحریک کشمیر برطانیہ کے صدر فہیم کیانی ، خواجہ سلیمان ، راجہ جہانگیر خان ، چوہدری سعید ، فاروق قادری ، نبیلہ ایوب ایڈووکیٹ ، بشیر شگو سمیت دیگر قائدین نے بھی خطاب کیا ۔ 

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد محمود نے کہا کہ طیب اردگان مبارک باد کے مستحق ہیں جنہوںنے او آئی سی کا سربراہی اجلاس طلب کیا ۔ امریکہ سے معاشی بائیکاٹ اور تعلقات معطل کیے جائیں مسجد حرم اور مسجد نبوی کے بعد مسجداقصیٰ مسلمانوں کا تیسرا بڑا مقدس مقام ہے ، قبلہ اول سوا ارب مسلمانوں کے ایمان کا مسئلہ ہے امریکہ اس حوالے سے پالیسی بناتے ہوئے مسلمانوں کے ایمانی جذبات اور احساسات کا احسا کرے ۔ 

انہوں نے کہاکہ کشمیری اپنی آزادی کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں ، کشمیریوں کی جدوجہد اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ہے ، عالمی برادری اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم اور بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لیں ، 

انہوں نے کہا کہ نریندر مودی اور ٹرمپ انسانیت کے ماتھے پر بد نما داغ ہیں ۔ اس موقع پر تحریک کشمیر برطانیہ کے صدر راجہ فہیم کیانی نے کہا کہ برطانیہ اور یورپ میں مسئلہ کشمیر کو بھرپور انداز سے اجاگر کیا ہے ، آئندہ بھی اجاگر کرتے رہیں گے ۔ یورپی پارلیمنٹس ، اہل دانش اور میڈیا کے ذریعے عوام الناس تک حقیقی آواز پہنچانے کی کوشش کر رہے ہیں ، ہندوستان کے چہرے کو یورپ کے کونے کونے میں بے نقاب کریں گے۔ 

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  30111
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آئین کا آرٹیکل 370 ختم کر دیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق صدارتی حکم نامے کے ذریعے آرٹیکل 370 کو ختم کر دیا گیا ہے جس کے تحت مقبوضہ کشمیر اب ریاست نہیں کہلائے گی۔
تحریک اتحاد امت پاکستان کے سربراہ علامہ پیر سید چراغ الدین شاہ نے کہا ہے کہ بیت المقدس کو یہودیت سے آزاد کروانے کے لیے ملت اسلامیہ ٹرمپ پالیسیوں کے خلاف متحد ہو جائے
صدرآزاد کشمیرمسعود احمد خان نے کہا ہے کہ پاکستان اورکشمیر کو ایک دوسرے سے علیحدہ نہیں کیا جاسکتا جب کہ کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے۔ بھارت کشمیریوں کی جدوجہد کو دہشت گردی سے ملانے کا پروپیگنڈا کر رہا ہے۔
مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیراعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ کشمیر کے معاملے پر بھارتی پالیسی پر پھٹ پڑے اور کہا ہے کہ بھارت سے مقبوضہ کشمیر تو سنبھالا نہیں جارہا اور اگر اس نے آزاد کشمیر پر ہاتھ ڈالا تو نئی مصیبت آجائیگی، بھارت جنگ سے کشمیر نہیں لے سکتا، ا مریکا سے ثالثی کرالے،

مقبول ترین
ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ جنرل قمر جاوید باجوہ پاکستان آرمی کے زبردست سپہ سالار ہیں۔ گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان نے جنرل قمر جاوید باجوہ کو مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر کیا تھا۔ اس حوالے سے پاکستان کے دیرینہ دوست
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ سفاک مودی سرکار تمام انسانی و بین الاقوامی قوانین و ضوابط روند رہی ہے اور کشمیریوں کو نشانہ ستم بنانے کی تیاریوں میں ہے۔ میڈیا کے مطابق تحریک انصاف نے مقبوضہ کشمیر پر بھارتی قبضے اور اہل کشمیر
پاک فوج نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ اور سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیوں کا منہ توڑ جواب دیا جس کے نتیجے میں ایک افسر سمیت 6 بھارتی فوجی ہلاک اور 2 بنکرز تباہ ہوگئے۔
پاکستان نے مسئلہ کشمیر کو عالمی عدالت انصاف میں لے جانے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے۔ میڈیا کے مطابق آئندہ ماہ جنیوا میں انسانی حقوق کمیشن اجلاس بلانے کیلئے وزارت خارجہ نے تیاری شروع کر دی ہے اور اس سلسلے میں سابق سیکرٹری

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں