Saturday, 19 September, 2020
بھارتی فوج کو اراضی الاٹ کرنا کشمیریوں کے خلاف گہری سازش ہے''

بھارتی فوج کو اراضی الاٹ کرنا کشمیریوں کے خلاف گہری سازش ہے''

سری نگر۔ جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر کا کہنا ہے کہ کٹھ پتلی حکمرانوں کی طرف سے ضلع بڈگام کے علاقے ہمہامہ میں بھارتی فوج کو درپردہ 1600 کنال اراضی الاٹ کرنا فلسطین کی طرز پر مقامی باشندوں کو اٴْن کی اراضی سے بے دخل کرنے کی ایک گہری سازش ہے جو انتہائی تشویشناک اور افسوسناک معاملہ ہے ۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق جماعت اسلامی کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہاکہ یہ خبر ذرائع ابلاغ میں نمایاں طور پر شائع ہونے کے باوجود کٹھ پتلی انتظامیہ کی اس پر خاموشی معنی خیز ہے۔

انہوں نے کہاکہ اس طرح کی کارروائیاں ماضی میں بھی ہوتی رہی ہیں جس کے نتیجے میں وادی کشمیر میں جگہ جگہ فوجی چھائونیاں اور کیمپ قائم ہیں اور وادی کے زرخیز اور جاذب نظر علاقوں پربھارتی فوجیوں نے قبضہ جمایاہوا ہے۔ 

انہوں نے کہاکہ ان کارروائیوں میں یہاں کے کٹھ حکمران برابر کے شریک ہیں۔

انہوں نے ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن سے اپیل کی کہ وہ اس اہم اور نازک مسئلے کا باریک بینی سے جائزہ لے کر اس کی قانونی چارہ جوئی کے لیے ضروری اقدامات کریں۔ 

ترجمان نے کہاکہ کشمیریوں کے حقیقی نمائندوں کو اس مسئلے کی طرف فوری توجہ دینے کی ضرورت ہے تاکہ یہاں کے باشندوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جاسکے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  46782
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی فوج نے مقبوضہ وادی میں ظلم و بربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے، سری نگر میں بھارتی کی جارحیت میں مزید 3 نوجوانوں نے جام شہادت کیا۔ ایک ہفتے میں شہید ہونے والوں کی تعداد 12 ہوگئی ہے۔
دنیا بھر میں مہلک وباء کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے تیاریاں زورو شور سے جاری ہیں، اس دوران بیماری سے روکنے کے لیے ہر ملک دوسرے کے ساتھ بھرپور تعاون کر رہا ہے، تاہم بھارتی سرکار کورونا وائرس کی وباء کے دوران کشمیریوں
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ضلع شوپیاں کے علاقے زین پورہ میں بھارتی فوج نے داخلی و خارجی راستوں کو بند کرکے گھر گھر تلاشی کے نام پر بنیادی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی گئیں، اس دوران قابض بھارتی فوج نے فائرنگ کرکے 5 نہتے کشمیری
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں آج مزید 2 کشمیری شہید ہوگئے، دونوں نوجوانوں کو ضلع پلوامہ میں سرچ آپریشن کے دوران گولیاں مارکر شہید کیا گیا جب کہ علاقے میں انٹرنیٹ سروس کو بھی معطل کردیا گیا ہے۔

مقبول ترین
ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے کہا کہ امریکی رپورٹ میں پاکستان کے دہشت گردی کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات کو متنازع بنایا گیا ہے۔ القاعدہ کی خطے میں ناکامی کو تو تسلیم کیا گیا لیکن اس کے خلاف پاکستان کی کاوشوں کو نظر انداز کیا گیا۔ پاکستان میں
رینٹل پاور کیس میں سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف سمیت 10 ملزمان نے بریت کی درخواست دائر کر رکھی تھی اور نیب ترمیمی آرڈیننس کے تحت تمام درخواستیں دائر کی گئی تھیں۔ جس پر احتساب عدالت اسلام آباد نےفیصلہ محفوظ کر رکھا تھا تاہم آج احتساب
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہم سے جواب مانگا جارہا ہے جواب ان سے مانگا جائے جو ملک کو اس حال میں چھوڑ کرگئے۔ قومی اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد
سپریم کورٹ میں کورونا از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوان چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیے کہ وزیراعظم کہتےہیں ایک صوبے کا وزیراعلیٰ آمر ہے، اس کی وضاحت کیا ہوگی؟ چیف جسٹس نے کہا کہ وزیراعظم اور وفاقی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں