Monday, 27 May, 2019
نریندر مودی کا دورہ مقبوضہ کشمیر، وادی میں کرفیو نافذ

نریندر مودی کا دورہ مقبوضہ کشمیر، وادی میں کرفیو نافذ

سری نگر . مقبوضہ کشمیر میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے دورے کے پیش نظر سری نگر میں انٹرنیٹ سروس اور تدریسی عمل معطل کرکے شہر میں کرفیو نافذ کردیا گیا۔ کشمیر میڈیا سروس کی رپورٹ کے مطابق نریندر مودی کے دورے کے خلاف لال چوک پر احتجاج کو ناکام بنانے کے لیے بھارتی فورسز نے پوری وادی کو سیل کردیا۔

واضح رہے کہ وزیراعظم نریندر مودی آج (بروز ہفتہ) شیر کشمیر انٹرنیشنل کنونش سینٹر (ایس کے آئی سی سی) میں ترقیاتی منصوبوں کا افتتاح کریں گے جس میں 14 کلومیڑ طویل زوجی لال ٹنل بھی شامل ہے۔ اس حوالے سے بتایا گیا کہ مذکورہ ٹنل ایشیاء کی سب سے بڑی بائی ڈائریکشنل ٹنل کہلائی گی۔

علاوہ ازیں حریت رہنماؤں سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک کی جانب سے لال چوک پر احتجاج کال دی گئی تھی۔ حریت رہنماؤں نے عوام سے اپیل کی کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی آمد پر احتجاجاً اپنے گھروں کی چھت پر کالے جھنڈے لہرائیں۔

علاوہ ازیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی آمد پرلائن آف کنٹرول کے دونوں طرف شدید احتجاج کیا گیا۔ مقبوضہ جموں میں کشمیریوں نے شہر شہر مظاہرے کئے اور ریلیاں نکالیں۔ آزاد کشمیر میں بھارتی ظلم و ستم سے نبرد آزما بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے یوم سیاہ منایا گیا۔

سری نگر، بارہ مولا، کشتواڑ، بڈگام، اودھم پور اور راجوڑی میں بھارتی مظالم سے تنگ کشمیری سڑکوں پر نکل آئے اور مودی حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کرتے رہے۔ مظاہرین  قاتل مودی واپس جاؤ  اور  کشمیر کشمیریوں کے حوالے کرو  سمیت دیگر نعرے لگا رہے تھے۔ بھارتی وزیراعظم مودی کی آمد کے موقع پر مقبوضہ وادی میں سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے تھے اور مقبوضہ کشمیر کو عملا فوجی چھاؤنی میں بدل دیا گیا تھا۔

مظفرآباد میں بھارت مخالف ریلی کے شرکا نے پریس کلب سے قائداعظم چوک تک مارچ کیا اور بھارت مخالف نعرے لگائے، اس موقع پر مظاہرین نے عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں بھاتی مظالم کے نوٹس لینے کا بھی مطالبہ کیا۔ آزاد کشمیر کے شہروں میرپور، بھمبر، کوٹلی راولاکوٹ، باغ اور پٹیاں میں یوم سیاہ کے دوران بھارت مخالف مظاہرے کئے گئے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  10838
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ بھارتی فورسز نے نہتے کشمیریوں کے قتل عام کا بازار گرم رکھا ہے جبکہ مقبوضہ علاقے کی بھارت نواز جماعتوں کے رہنما گزشتہ ستر برس سے قوم کو دھوکہ دیکر اقتدار کے مزلے لوٹ رہے ہیں۔
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی کارروائیاں جاری رکھتے ہوئے سال 2017 میں 6 خواتین اور18 بچوں سمیت291 بے گناہ کشمیریوں کو شہید کردیا۔ ان میں سے22 افراد کو دوران حراست شہید کیاگیا۔ان شہادتوں کی وجہ سے 31 خواتین بیوہ اور73 بچے یتیم ہوئے
کٹھ پتلی انتظامیہ نے مقبوضہ کشمیر میں سرکاری ملازمین پر سوشل میڈیا کے استعمال پر پابندی عائد کردی ہے۔ رواں ہفتے جاری ہونے والے نئے آرڈر کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں سرکاری ملازمین اب سوشل میڈیا کا استعمال نہیں کرسکیں گے۔آرڈر کے تحت سرکاری ملازمین کو سیاسی معاملات اور حکومت پر تنقید سے بھی روکا گیا ہے۔
بھارتی جارحیت کے خلاف ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے، تدفین میں ہزاروں افراد کی شرکت کی، شرکا کے بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں نعرے ، شرکاء پرآنسو گیس کی شیلنگ

مقبول ترین
شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی چیک پوسٹ پر مسلح افراد کے حملے میں 5 اہلکار زخمی ہو گئے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق محسن جاوید اور علی وزیر کی قیادت میں ایک گروہ نے شمالی وزیرستان
قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی آڈیو ویڈیو اسکینڈل کے مرکزی کرداروں کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کردیا گیا۔ نیب کی طرف سے دائر کیا جانے والا ریفرنس 630 صفحات پر مشتمل ہے جس میں آڈیو
لاڑکانہ میں چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹوزرداری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے رتو ڈیرو میں بچوں سمیت سیکڑوں افراد کے ایڈز مبتلا ہونے کے مسئلے پر گفتگو کی۔ انہوں نے کہا کہ ایچ آئی وی اور ایڈز میں بہت فرق ہے، ایچ آئی وی کا علاج نہ ہو تو دس
اسلام آباد میں وفاقی وزراء اور چیئرمین ایف بی آر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے عبدالحفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ موجود حکومت نے اقتدار سنبھالا تو معاشی حالت بہت بری تھی، جب حکومت آئی تو قرضہ 31 ہزار ارب روپے سے زیادہ تھا، برآمدات گر رہی تھیں

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں