Wednesday, 21 February, 2018
پاناما نظرثانی کیس، 5 رکنی بنچ بنانے کی استدعا منظور

پاناما نظرثانی کیس، 5 رکنی بنچ بنانے کی استدعا منظور

اسلام آباد ۔ سپریم کورٹ نے سابق وزیراعظم نواز شریف، انکے بچوں حسن نواز، حسین نواز، مریم نوازاور داماد کیپٹن صفدر کی نظر ثانی درخواستوں پر پانچ رکنی بینچ بنانے کی درخواست کو منظور کرلی ہے۔ تین رکنی بینچ نے لارجر بینچ کی تشکیل کا معاملہ چیف جسٹس کو بھجوا دیا ہے اور کیس کی مزید سماعت کل تک کیلئے ملتوی کردی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے پاناما کیس کی نظرثانی اپیل پانچ رکنی بینچ کے سنے جانے کی شریف خاندان کی درخواست منظور کرلی ہے۔ جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے پاناما نظرثانی درخواستوں پرسماعت کی،نواز شریف کی جانب سے خواجہ حارث اور ان کے بچوں کی جانب سے سلمان اکرم راجا ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔

سماعت کے آغاز پر نوازشریف کے بچوں کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پانچ رکنی فیصلے کیخلاف نظر ثانی درخواست پہلے سنی جائے، کیونکہ پاناما کیس میں بھی تین رکنی بینچ کا فیصلہ پانچ رکنی بینچ میں ضم ہوگیا تھا، جس پر جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے کہ فرض کریں نظرثانی درخواستوں کیلئے پانچ رکنی بینچ بن جائے مگر فیصلہ تین رکنی بینچ کا ہے۔ تین رکنی اکثریتی فیصلہ تبدیل ہونے سے پانچ رکنی بینچ کا فیصلہ بھی تبدیل ہوجائیگا، فرض کریں نظرثانی درخواستوں کیلیے پانچ رکنی بینچ بن جائے، فیصلہ کن ججمنٹ تین رکنی بینچ کی ہے، دو اراکین کا فیصلہ بے سود ہوگا۔ جس پر وکیل سلمان اکرام راجہ نے دلائل دیتے  ہوئے کہا پانچ رکنی بینچ کے دوبارہ اکٹھا ہونے پر بھی سوال ہے۔ 28 جولائی کو فیصلہ 5 رکنی لارجر بنچ نے دیا تھا اس لیے نظر ثانی اپیل بھی 5 رکنی بینچ میں لگائی جائے اور اس کے لیے 5 رکنی لارجر بینچ تشکیل دیا جائے۔

سماعت کے دوران سلمان اکرم راجا نے مؤقف اختیار کیا کہ نظرثانی درخواست میں فیصلے کے خلاف بنیادی سوالات اٹھائے ہیں جس میں مرکزی نکتہ ہے کہ جو اس بینچ کے ممبر ہی نہیں تھے انہوں نے بھی فیصلہ سنایا۔ یہ بھی سوال ہے کہ دو جج پانچ رکنی بینچ میں آ کر کیسے بیٹھے۔جسٹس عظمت سعید نے سلمان اکرم راجا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم آپ کے موکلان کو متاثر نہیں کرنا چاہتے۔

 نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے کہا کہ 28 جولائی کا فیصلہ پانچ جج صاحبان کا تھا،اس پر پانچوں کے دستخط تھے۔  نواز شریف کے بچوں کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ 5 رکین بینچ نظرثانی اپیل کی سماعت کرے جس پر جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے کہ آپ کی نظرثانی اپیل میں سارے گراؤنڈ تین رکنی بینچ کے فیصلے کے خلاف ہیں اور پاناما کیس میں اکثریتی فیصلہ تین رکنی بینچ کا تھا۔

عدالت نے سماعت کے بعد شریف خاندان کی پاناما کیس پر نظرثانی کی پانچ رکنی بینچ کی جانب سے سماعت کرنے درخواست منظور کرلی اور تین رکنی بینچ نے نظرثانی درخواست پر پانچ رکنی بینچ کی تشکیل کیلئے معاملہ چیف جسٹس آف پاکستان کو بھجوا دیا ہے جبکہ کیس کی مزید سماعت کل تک کیلئے ملتوی کردی گئی ہے۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ کے 5 رکنی بنچ نے 28 جولائی کو پاناما کیس کے فیصلے میں اس وقت کے وزیراعظم نواز شریف کو صادق اور امین نہ ہونے پر نااہل قرار دیا تھا اور نیب کو احکامات جاری کئے تھے کہ شریف خاندان اور اسحاق ڈار کیخلاف 6 ہفتوں کے دوران ریفرنسز دائر کئے جائیں

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  38209
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
پاک فوج کے دستے کی سعودی عرب روانگی سے متعلق وزیر دفاع خرم دستگیر نے سینیٹ اجلاس کے دوران حکومت کے پالیسی بیان میں کہا کہ پاکستان کا سعودی عرب سمیت مختلف اسلامی ممالک کے ساتھ دفاعی تعاون جاری ہے۔
سابق وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے اور دن رات کام کرنے پر انہیں نکالا گیا لیکن اب ووٹ کے تقدس کے لئے عوام کو کچھ کرنا پڑے گا۔ شیخوپورہ کے کمپنی گراؤنڈ میں عوامی اجتماع سے
آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کے منظم کیمپ پاکستان میں نہیں،افغانستان میں ان کے محفوظ ٹھکانے موجود ہیں۔ نجرمنی کے شہر میونخ میں میں عالمی سیکیورٹی کانفرنس سے خطاب میں آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان فخر
متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رہنما فاروق ستار نے سینیٹ الیکشن کی نشست کے معاملے پر رابطہ کمیٹی کو پیشکش کی ہے کہ وہ اپنی مرضی کے چار اراکین کے نام دے دیں۔وہی ہمارے امیدوار ہوں گے، دیگر امیدوار دستبردار ہوجائیں گے۔ میں باقاعدہ اعلان کردوں گا۔

مزید خبریں
صوبہ بلوچستان کے ضلع تربت میں کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے 15 اہم کمانڈروں سمیت تقریباً 200 فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوگئے ہیں۔ تقریب کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو تھے۔ اب تک ایک ہزار 8 سو کے قریب فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوچکے ہیں۔
سابق وزیراعظم اور حکمران جماعت کے سربراہ میاں محمد نواز شریف کی کل سعودی عرب روانگی کا امکان ہے۔ جہاں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف پہلے سے موجود ہیں۔ جبکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق بھی پی آئی اے کی پرواز کے ذریعے اہلخانہ کے ہمراہ سعودی عرب روانہ ہوگئے ہیں
وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف پورے عزم سے لڑ رہے ہیں ، دہشت گردوں کا نیٹ ورک توڑ دیا ہے ، آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جنگ لڑیں گے۔ وزیر اعظم نواز شریف سے پشاور میں مسلم لیگ ن کے سینیٹرز اور ارکان قومی
سابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرورنے تحریک انصاف میں باضابطہ طور پر شامل ہونےکی تصدیق کردی ہے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف جمہوریت پسند جماعت ہے اس لئے اس میں شامل ہونے کا

مقبول ترین
پاک فوج کے اضافی دستے سعودی عرب بھیجنے پر قومی اسمبلی میں بحث ہوئی ہے۔ میڈیا کے مطابق قومی اسمبلی میں پاک فوج کو سعودی عرب بھیجنے کا معاملہ پھر زیر بحث آیا۔ پاکستان تحریک انصاف کی رکن شیریں مزاری نے اظہار
وزیر مملکت اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کا کہنا ہےکہ تمام اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہنا چاہیے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر نے درست کہا ہے کہ ہم سے بھی غلطیاں ہوئیں اور جب سیاست دانوں پربھینس چوری کے پرچی کٹے تو غلطی تب بھی ہوئی۔
ایرانی دار الحکومت تہران میں سکیورٹی فورسز اور صوفی عقیدت مندوں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں 6 افراد جاں بحق ہوگئے۔ تہران پولیس کے ترجمان بریگیڈیئر سعید منتظرالمہدی نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ تہران کے
میڈیا کے مطابق سپریم کورٹ میں میڈیا کمیشن کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ کل پیغام دیا گیا کہ عدالت قانون سازی میں مداخلت نہیں کر سکتی، میں نے بار بار کہا پارلیمنٹ سپریم ادارہ ہے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں