Monday, 25 June, 2018
حکومت اور میڈیا کے درمیان دراڑ ڈالنے والے عناصر کے خلاف انکوائری کا حکم

حکومت اور میڈیا کے درمیان دراڑ ڈالنے والے عناصر کے خلاف انکوائری کا حکم

اسلام آباد ۔ وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ پرنٹ میڈیا کو ریگولیٹ کرنے کے حوالے سے میرے نام سے منسوب جعلی خط جاری ہوئے ہیں، اس قسم کے کسی بھی خط سے میرا یا وزارت اطلاعات کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ وزارت اطلاعات کے کہنے پر کوئی قانون نہیں بنایا جا رہا، ایسے ہر ڈرافٹ کو مسترد کرتی ہوںاوراس کی کوئی لیگل حیثیت نہیں ہے ۔ وزارت اطلاعات کا کام میڈیا کو فرائض کی ادائیگی میں آسانیاں فراہم کرنا ہوتا ہے ان کے راستے میں روڑے انکانا نہیں۔ 

پارلیمنٹ ہاوس اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ پریس کونسل پاکستان کے آرڈیننس سے متعلق خبریں من گھڑت اور بے بنیاد ہیں، وزارت اطلاعات کے کہنے پر کوئی بھی قانون نہیں بنایا جا رہا ہے، پرنٹ میڈیا کو ریگولیٹ کرنے کے حوالے سے میرے نام سے منسوب جعلی خط جاری ہوئے ہیں۔ پرنٹ میڈیا کو ریگولیٹ کرنے کے حوالے سے میرا نام استعمال کر کے تین سے چارجعلی خطوط لکھے گئے ،جن کے ذریعے وزارت کے اندر وزیر کے دفتر کو ٹارگٹ کرنے کی کوشش کی گئی ہے، متعلقہ ڈائریکٹر کو او ایس ڈی بناتے ہوئے متعلقہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر کو معطل کر دیا گیا ہے۔معاملے کی تحقیقات کیلئے تین رکنی کمیٹی تشکیل دیدی ہے ،جس کی انکوائری رپورٹ آنے کے بعد پریس کانفرنس کروں گی۔

وزیر مملکت نے واضح کیا کہ میڈیا اور صحافیوں کو سہولت فراہم کرنا میری ذمہ داری ہے، اطلاعات تک رسائی کا بل ہماری حکومت نے منظور کرایاپریس کانفرنس سے مریم اورنگزیب نے معاملے سے مکمل اظہار لاتعلقی اختیار کی ، ان کا کہنا تھا کہ پریس کونسل آف پاکستان کی ایک بریفنگ کے دوران انہوں نے اپنی رائے کا اظہارکرتے ہوئے کہا تھا کہ میڈیا کی سہولت کی خاطر اور وزارت اطلاعات تک براہ راست رابطے کے لئے آڈٹ بیورو آف سرکولیشن ، پریس رجسٹرار اور پریس کونسل آف پاکستان کا انضمام کردیا جائے تاہم ا س حوالے سے کوئی مزید حکم نہیں دیا تھا اور نہ ہی قانون سازی کے لئے کسی آرڈیننس کا مسودہ تیار کیا ، اس حوالے سے وزیر اعظم نے بھی استفسار کیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے بعد ایک غیر رسمی انکوائری کی گئی جس کے مطابق ایک جونیر آفیسر نے ذاتی حیثیت میں پریس کونسل آف پاکستان کو آرڈیننس کے تیاری کے لئے خطوط لکھے ہیں ، اس دوران متعلقہ آفیسر نے نہ تو ہائیر اتھارٹیز کو مطلع کیا اور نہ ہی قانون سازی یا آرڈیننس کی تیاری کے لئے ضروری مروجہ طریقہ کار اختیار کیا۔ مجھے وزارت کی فائلز میں اس حوالے سے کوئی بھی ریکارڈ موجود نہیں ہے اور میں مجوزہ آرڈیننس سے متعلق میڈیا رپورٹس پڑھ کر حیران ہوگئی حالانکہ کسی بھی قانون سازی کیلئے وزارت قانون سے اجازت لینا پڑتی ہے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  99251
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
سپریم کورٹ نے تنخواہیں نہ دینے والے میڈیا مالکان کو کل طلب کرلیا۔ سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے صحافیوں کو تنخواہوں کی عدم ادائیگی کیخلاف کیس کی سماعت کی۔
پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس(پی ایف یوجے)کی کال پرمیڈیا ورکرز کےحقوق کےلئے9 اپریل کوپارلیمنٹ ہاؤس کےسامنے دھرنےکی ڈیجیٹل میڈیاپر کوریج کیلئےخصوصی اجلاس نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں ہوئی
میڈیا کے مطابق سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ کی 20 ویں گریڈ میں ترقی پر اپوزیشن نے پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں شدید احتجاج کیا ۔ اپوزیشن اراکین کا کہنا تھا کہ احد چیمہ کو جیل سے گریڈ 19 سے 20 میں ترقی دے دی گئی
میڈیا کے مطابق سپریم کورٹ میں میڈیا کمیشن کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ کل پیغام دیا گیا کہ عدالت قانون سازی میں مداخلت نہیں کر سکتی، میں نے بار بار کہا پارلیمنٹ سپریم ادارہ ہے

مزید خبریں
صوبہ بلوچستان کے ضلع تربت میں کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے 15 اہم کمانڈروں سمیت تقریباً 200 فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوگئے ہیں۔ تقریب کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو تھے۔ اب تک ایک ہزار 8 سو کے قریب فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوچکے ہیں۔
سابق وزیراعظم اور حکمران جماعت کے سربراہ میاں محمد نواز شریف کی کل سعودی عرب روانگی کا امکان ہے۔ جہاں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف پہلے سے موجود ہیں۔ جبکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق بھی پی آئی اے کی پرواز کے ذریعے اہلخانہ کے ہمراہ سعودی عرب روانہ ہوگئے ہیں
وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف پورے عزم سے لڑ رہے ہیں ، دہشت گردوں کا نیٹ ورک توڑ دیا ہے ، آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جنگ لڑیں گے۔ وزیر اعظم نواز شریف سے پشاور میں مسلم لیگ ن کے سینیٹرز اور ارکان قومی
سابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرورنے تحریک انصاف میں باضابطہ طور پر شامل ہونےکی تصدیق کردی ہے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف جمہوریت پسند جماعت ہے اس لئے اس میں شامل ہونے کا

مقبول ترین
بین الاقوامی سفارتی حلقوں میں یہ تاثر عام ہو رہا ہے کہ مودی سرکار اپنی داخلی اور خارجہ پالیسیوں کے تناظر میں بڑی حد تک حواس باختہ ہو چکی ہے۔ اس کا اندازہ یوں کیا جا سکتا ہے کہ گذشتہ دنوں خود بھارتی میڈیا کے مطابق چنائی میں چائنہ سٹڈی سنٹر
پاکستان میں جب سے سوشل میڈیا پر خاص و عام کی رسائی ممکن ہوئی ہے ہم نے بحیثیت قوم جہاں سوشل میڈیا پر بہت سی غیر ضروری ابحاث میں وقت برباد کیا وہیں اسی سوشل میڈیا کے ذریعے کئی تحریکوں نے جنم لیا ، کئی اسی سوشل میڈیا
الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے بیلٹ پیپرز کی چھپائی کے حوالے سے تینوں پرنٹنگ پریس کی سیکیورٹی کےلیے فوج کی نفری مانگ لی۔ الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے لیے فوج کی معاونت حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے
چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ کچھ لوگ چاہتے ہیں کہ انہیں گرفتار کیا جائے تاکہ وہ سیاسی شہید بن جائیں۔ لاہور میں نیب کمپلکس کے دورے کے موقع پر افسران سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ بدعنوانی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں