Wednesday, 27 March, 2019
نواز شریف کے ضمنی ریفرنسز پر اعتراضات، فیصلہ محفوظ

نواز شریف کے ضمنی ریفرنسز پر اعتراضات، فیصلہ محفوظ

اسلام آباد ۔ سابق وزیراعظم نوازشریف نے نیب کی جانب سے دائر دو ضمنی ریفرنسز پر اعتراضات اٹھا دیئے ہیں جس پر احتساب عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا اور سماعت ڈیڑھ بجے تک ملتوی کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب کی جانب سے دائر 2 ضمنی ریفرنسز العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ پر سماعت کی۔ سابق وزیراعظم نوازشریف، ان کی صاحبزادی اور داماد کیپٹن صفدر ضمنی ریفرنسز میں عدالت پیش ہوئے۔ 

دوران سماعت نواز شریف کی معاون وکیل عائشہ حامد نے دلائل کے دوران دونوں ضمنی ریفرنسز پر اعتراضات اٹھاتے ہوئے کہا کہ نیب کی جانب سے دائر دونوں ضمنی ریفرنسز کی ضرورت نہیں تھی اور ضمنی ریفرنسز دائر کرنے کے لیے سپریم کورٹ کی شرائط پر عمل نہیں کیا گیا۔ مقدمات میں شریف خاندان کیخلاف اثاثے ملے نہ ہی شواہد ۔

وکیل عائشہ حامد نے کہا کہ سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ کوئی نیا اثاثہ سامنے آنے پر ضمنی ریفرنس دائر کیا جائے، جن کمپنیوں کی تفصیلات دی گئیں وہ برطانیہ کا کوئی بھی شہری ایک فارم بھر کر حاصل کر سکتا ہے۔

وکیل نے کہا کہ جے آئی ٹی کی تحقیقات کے دوران بھی یہ تمام ریکارڈ پبلک ڈومین میں موجود تھا اور ضمنی ریفرنسز میں دی گئی معلومات نئے اثاثوں کی کیٹیگری میں نہیں آتیں۔ دلائل مکمل ہونے کے بعد عدالت نے ضمنی ریفرنسز کی منظوری یا اسے مسترد کرنے کے حوالے سے فیصلہ محفوظ کرلیا۔ اور سماعت ڈیڑھ بجے تک ملتوی کردی ہے۔

اس کے ساتھ سابق وزیراعظم نوازشریف نے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کردی  نواز شریف کی معاون وکیل نے کہا کہ ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس میں استغاثہ کے غیرملکی گواہوں کے بیانات قلمبند کرنے کے موقع پر حاضری سے استثنیٰ دیا جائے، گواہوں کے بیان پر ہم نے جرح کرنی ہے، ملزمان کے آنے کی ضرورت نہیں۔   درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ وہ مصروفیت کے باعث عدالت میں پیش نہیں ہو سکتے عدالت سے استدعا ہے کہ حاضری سے استثنیٰ دیا جائے۔ 

جس پر فاضل جج نے ہدایت کی کہ آپ درخواست لکھ کر دے دیں اور نہ آنے کی وجہ بھی بتائیں جب کہ نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ صرف غیر معمولی حالات میں ہی حاضری سے استثنیٰ دیا جا سکتا ہے۔

فریقین کے دلائل کے بعد عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور مریم نواز کو آج کے لئے حاضری سے استثنیٰ دے دیا ہےاور کیس کی مزید سماعت آج دن ڈیڑھ بجے تک کیلئے ملتوی کر دی ہے۔ تاہم غیرملکی گواہوں کے بیانات کے موقع پر صرف کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پیش ہوں گے۔ فاضل جج آج ڈیڑھ بجے ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس کی دوبارہ سماعت کریں گے جس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو براہ راست ملزم قرار دیا گیا ہے۔ 

نیب کے 2 غیرملکی گواہوں میں فرانزک ماہر رابرٹ ریڈلی اور اختر راجا شامل ہیں جن کے بیانات لندن میں پاکستانی ہائی کمیشن سے بذریعہ ویڈیو لنک ریکارڈ کیے جائیں گے جب کہ احتساب عدالت میں بھی کیمرہ اور دو اسکرینیں لگادی گئی ہیں۔ آئی ٹی ماہرین نے گواہوں کے بیانات سے قبل فائنل ریہرسل کر کے انتظامات کا جائزہ بھی لیا جب کہ لندن میں پاکستانی ہائی کمیشن سے ویڈیو لنک رابطہ کر کے بلاتعطل اسٹریمنگ کا بھی جائزہ لیا۔

نیب پراسیکیوشن ٹیم کے سربراہ سردار مظفر عباسی اور ملزمان کے مقرر کردہ نمائندے بھی لندن میں ہائی کمیشن میں موجود ہوں گے۔

خیال رہے نواز شریف کی احتساب عدالت میں 20 ویں ، مریم نوازکی 22 ویں اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی 24 ویں پیشی ہے ۔ احتساب عدالت نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیاء کو بھی اصل ریکارڈ سمیت طلب کر رکھا ہے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  25374
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
آسیہ بی بی سے متعلق ترجمان دفترخارجہ کا مؤقف سامنے آیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ عدالتی فیصلے کے بعد آسیہ بی بی آزاد شہری ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کی جانب سے جاری بیان کے مطابق عدالتی فیصلے کے بعد آسیہ بی بی
سپریم کورٹ نے سکول فیسوں سے متعلق فیصلہ جاری کر دیا۔ عدالت نے نجی سکولز کو فیسوں میں 20 فیصد کمی کا حکم دے دیا۔ عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ 5 ہزار سے زائد فیس میں 20 فیصد کمی ہوگی، اطلاق ملک بھر کے پرائیویٹ
وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس ہوا جس میں جعلی اکاؤنٹس کیس میں پی پی پی کی اعلیٰ قیادت سمیت 172 ملزمان کے نام ای سی ایل سے فوری طور پر نہ نکالنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ افغان مفاہمتی عمل کے لئے پاکستان کے کردار کی ہر جگہ تعریف کی گئی اور افغان طالبان پر ہمارا محدود اثر ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے معمول کی بریفنگ دی۔ انہوں نے کشمیری

مزید خبریں
سپریم کورٹ میں آج دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان کا سینئر وکیل اعتزاز احسن سے خوش گوار مکالمہ ہوا جس کے دوران چیف جسٹس نے کہا کہ میری طرف سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو معاف کردیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ تسلیم کرتا ہوں کہ
میڈیا کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس علی اکبر قریشی نے اظہر صدیق ایڈوووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی۔ جس میں سگریٹ نوشی پر پابندی کے قوانین کی پاسداری نہ کرنے کی نشاندہی دہی کی گئی۔
صوبہ بلوچستان کے ضلع تربت میں کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے 15 اہم کمانڈروں سمیت تقریباً 200 فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوگئے ہیں۔ تقریب کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو تھے۔ اب تک ایک ہزار 8 سو کے قریب فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوچکے ہیں۔
سابق وزیراعظم اور حکمران جماعت کے سربراہ میاں محمد نواز شریف کی کل سعودی عرب روانگی کا امکان ہے۔ جہاں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف پہلے سے موجود ہیں۔ جبکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق بھی پی آئی اے کی پرواز کے ذریعے اہلخانہ کے ہمراہ سعودی عرب روانہ ہوگئے ہیں

مقبول ترین
وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ وکیل خواجہ حارث کو چاہیے کہ وہ اپنے موکل نواز شریف کو پیسے واپس کرنے کا مشورہ دیں۔ نواز شریف باہر جانا چاہتے ہیں تو عوام کے پیسے واپس کر دیں۔
کراچی کینٹ سٹیشن پر جیالوں کی بڑی تعداد صبح سے ہی موجود تھی، پارٹی پرچموں کی بہار نظر آئی، کارکنوں نے پارٹی نغموں پر رقص بھی کیا، بلاول بھٹو کی آمد پر جیالوں نے گل پاشی کی اور اپنے ہردلعزیز رہنما کو زبردست طریقے سے خوش آمدید کہا۔
چیف جسٹس پاکستان آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی طبی بنیادوں پر درخواستِ ضمانت کی سماعت کی۔ سپریم کورٹ نے 50 لاکھ روپے کے مچلکے کے عوض نواز شریف
میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ بھارتی طیاروں نے 26 فروری کو پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پےلوڈ پھینکے جس کے بعد 27 فروری کو پاکستان نے عام آبادی کو نشانہ بنائے بغیر جوابی کارروائی کا فیصلہ کیا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں