Monday, 25 September, 2017
جمہوریت سے متعلق مواد تعلیمی نصاب میں شامل کرنے کی سفارش

جمہوریت سے متعلق مواد تعلیمی نصاب میں شامل کرنے کی سفارش

 

اسلام آباد ۔ ایک ایسے وقت میں جب پاکستان کی بڑی جامعات کے طلبہ میں انتہا پسند رجحانات کے کچھ عملی نمونے سامنے آنے پر تشویش کے ساتھ ساتھ تعلیمی نظام و نصاب پر توجہ دینے کی باتیں کی جا رہی ہیں، ملک کے ایوان بالا 'سینیٹ' نے ایک ایسی قرارداد منظور کی ہے جس میں جمہوریت اور جمہوری اقدار کو نصاب تعلیم میں شامل کرنے کا کہا گیا ہے۔

قرارداد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ شہریوں کو ان کے جمہوری حقوق کے ساتھ ساتھ فرائض کی تعلیم اور مہذب معاشرے میں جمہوریت کی اہمیت اسکول سے ہی دینا شروع کی جائے۔

یہ قرارداد پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والی سینیٹر سحر کامران نے پیش کی تھی جسے پیر کو ایوان نے منظور کیا تھا۔

منگل کو وائس آف امریکہ سے بات کرتے ہوئے سینیٹر سحر کامران کا کہنا تھا کہ یہ بہت ضروری ہے کہ نوجوان نسل جس نے ملک کی باگ ڈور سنبھالنی ہے اسے اپنی ذمہ داریوں، بنیادی حقوق اور پاکستان کے خدوخال واضح کرنے والے آئین کے بارے میں آگاہی ہو۔

"اس کے بہت دور رس نتائج ہوں گے۔ آئین پڑھایا جائے۔ شہری حقوق و فرائض کی تعلیم ہو۔ جمہوریت کو پڑھایا جائے۔۔ آج کل جو لگتا ہے کہ لوگ اپنے بنیادی حقوق کے لیے کھڑے نہیں ہوتے تو اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ ان کو آگاہی نہیں ہے اور اسی وجہ سے بار بار جمہوری عمل کو دھچکا لگتا ہے۔ اسی لیے ہم صحیح سمت میں سفر نہیں کر سکے۔"

قرارداد کی ایوان سے منظوری ایک اچھی پیش رفت تو ہے لیکن ان مندرجات کو عملی طور پر نافذ کرنا ایک مشکل اور وقت طلب معاملہ ہے جس سے یہ قرارداد پیش کرنے والی سینیٹر بھی اتفاق کرتی ہیں۔

سینیٹر سحر کامران نے کہا کہ وہ قائمہ کمیٹی برائے وفاقی تعلیم کی بھی رکن ہیں لہذا وہ پوری کوشش کریں گی کہ اس عمل کو تیز کرنے کے لیے اقدام کیے جائیں، کیونکہ ان کے بقول کل کا پاکستان اگر مضبوط بنانا ہے تو یہ کرنا ہوگا۔ آنے والی نسل کو شعور دینا ہوگا اور ایسا نہیں ہوتا تو یہ بہت بڑی ناانصافی ہوگی۔

"تعلیمی اداروں میں جو شدت پسندی کی طرف رغبت نظر آ رہی ہے اس کی وجہ یہی ہے کہ ہم نے ان کو جو بنیادی ذمہ داریاں ہیں، بنیادی حقوق ہیں، آئین کے مطابق جو بنیادی ضابطہ اخلاق ہے وہ سکھایا ہی نہیں۔ وہ ذمہ داریاں اور حقوق سب بتانا ہوگا اور اسکول سے سکھانا ہوگا تاکہ ہم اچھے مضبوط ذہن کے ساتھ اپنے آنے والی نسل کو پروان چڑھائیں جو ذمہ داری کے ساتھ اپنا کردار ادا کریں۔" بہ شکریہ وائس اف امریکہ اردو

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  57289
کوڈ
 
   
 
متعلقہ خبریں
قطرکی جانب سے کہا گیا ہے کہ قطری نیوایجنسی کی ویب سائٹ کو نا معلوم ہیکرز نے ہیک کرلیا تھا جس پرجعلی اورجھوٹی خبریں پوسٹ کی گئیں جبکہ بعد میں ان خبروں اوررپورٹس کو ویب سائٹ سے ہٹا دیا گیا۔

مقبول ترین
انجیلا مرکل انتخابات میں کامیابی حاصل کرکے چوتھی بار جرمنی کی چانسلر منتخب ہوگئیں۔ میڈیا کے مطابق جرمنی میں ہونے والے فیڈرل الیکشن میں انجیلا مرکل کی سیاسی جماعت کرسچین ڈیموکریٹک یونین(سی ڈی یو) اور اس کی اتحادی
صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس حوالے سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ٹوئٹ کیا جس میں ان کا کہنا تھا کہ ابھی اقوام متحدہ میں شمالی کوریا کے وزیر خارجہ کے خطاب کو سنا، اگر وہ 'لٹل راکٹ مین' کی ہی سوچ کی تائیدکرتے ہیں تو پھر وہ بہت دیر تک نہیں رہیں گے۔
اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ جمہوریت کو مضبوط کرنے کیلیے صاف شفاف الیکشن کرائے جائیں، شاہد خاقان عباسی بہت کمزور وزیراعظم ہیں، ان پر خود ایل این جی کرپشن کا دھبا ہے۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ ہر قیمت پر مادر وطن کے دفاع کی قسم کھائی ہے، ہم قربانیاں دیتے آئے ہیں، قربانیاں دے رہے ہیں اوردیتے رہیں گے

پاکستان
 
وزیراعظم ملک میں نئے انتخابات کا اعلان کریں، عمران خان
 
آپریشن ردالفساد، ڈی آئی خان میں 3 دہشت گرد ہلاک
 
شہید لیفٹیننٹ ارسلان کی مکمل سرکاری اعزاز کے ساتھ تدفین
 
تحریک انصاف اور ایم کیوایم قومی اسمبلی میں تبدیلی پر متفق
 
شہید ہونے آئے ہیں، گولی کا انتظار ہے، شہید لیفٹیننٹ ارسلان عالم
 
عمران کے گوشوارے: تفصیلات سپریم کورٹ میں جمع
 
 
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں