Wednesday, 21 February, 2018
میں آزاد ہوں، جہاں جانا چاہوں جاسکتا ہوں، سعد الحریری

میں آزاد ہوں، جہاں جانا چاہوں جاسکتا ہوں، سعد الحریری

ریاض ۔ لبنان کے مستعفی وزیراعظم سعد الحریری نے سعودی عرب میں نظر بندی کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ بالکل آزاد ہیں اور جہاں جانا چاہیں جا سکتے ہیں۔ خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق سعودی دارالحکومت ریاض میں لبنانی ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں سعد الحریری نے جلد واپس لبنان جانے کا اعلان بھی کردیا۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر حزب اللہ عدم مداخلت کی پالیسی کا احترام کرے تو وہ استعفیٰ واپس لے لیں گے۔ انٹرویو کے دوران الحریری نے کہا، 'میں یہاں بالکل آزاد ہوں، اگر میں کل سفر کرنا چاہوں تو میں کرسکتا ہوں'۔

واضح رہے کہ لبنان کے وزیراعظم سعد حریری نے رواں ماہ 4 نومبر کو ملک میں ایران کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ اور اپنی جان کو درپیش خطرات کے پیش نظر عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

تاہم لبنان کے صدر مشعل عون نے ابھی تک باقاعدہ طور پر ان کا استعفیٰ منظور نہیں کیا۔

دو بار لبنان کے وزیراعظم رہنے والے سعد حریری نے اپنے خطاب میں الزام عائد کیا تھا کہ ایران اور اس کی اتحادی تنظیم حزب اللہ خطے میں اپنا غلبہ چاہتے ہیں اور لبنان پر ایران کی گرفت مضبوط ہوتی جارہی ہے۔

سعد الحریری کا استعفیٰ ایک ایسے وقت میں سامنے آیا، جب سعودی عرب اور ایران کی جانب سے ایک دوسرے پر لبنان میں مداخلت کے الزامات عائد کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔

دوسری جانب لبنان میں پیدا ہونے والی سیاسی کشیدگی اور عدم استحکام بڑھنے پر سعودی عرب اور کویت نے گذشتہ دنوں اپنے شہریوں کو لبنان سے نکلنے کا حکم دے دیا تھا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کرسکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  34695
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
اگر پاکستان، امریکا کے ساتھ اپنے تعلقات برقرار رکھنا چاہتا ہے تو اسے اپنی سرزمین پر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی اور انسداد دہشت گردی کی کوششوں کو مزید تیز کرنا ہوگا، ٹرمپ خارجہ پالیسی
لبنانی وزیراعظم سعد حریری نے صدر سے ملاقات کے بعد مستعفیٰ ہونے کا فیصلہ واپس لے لیا ہے۔ برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق لبنان کے وزیراعظم سعد حریری آج وطن واپس پہنچے تھے جہاں انہوں نے صدر سے
محلات کی چکاچوند کو چھوڑ کر جنگلات کی پر سکون وادیوں میں بڑے درختوں کے نیچے آنکھیں بند کیے دنوں بیٹھے رہنے والے شہزادے کو گیان حاصل ہوا تو دنیا اسے مہاتما بدھ کے نام سے جانتی ہے۔ مہاتما کی

مقبول ترین
پاک فوج کے اضافی دستے سعودی عرب بھیجنے پر قومی اسمبلی میں بحث ہوئی ہے۔ میڈیا کے مطابق قومی اسمبلی میں پاک فوج کو سعودی عرب بھیجنے کا معاملہ پھر زیر بحث آیا۔ پاکستان تحریک انصاف کی رکن شیریں مزاری نے اظہار
وزیر مملکت اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کا کہنا ہےکہ تمام اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہنا چاہیے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر نے درست کہا ہے کہ ہم سے بھی غلطیاں ہوئیں اور جب سیاست دانوں پربھینس چوری کے پرچی کٹے تو غلطی تب بھی ہوئی۔
ایرانی دار الحکومت تہران میں سکیورٹی فورسز اور صوفی عقیدت مندوں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں 6 افراد جاں بحق ہوگئے۔ تہران پولیس کے ترجمان بریگیڈیئر سعید منتظرالمہدی نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ تہران کے
میڈیا کے مطابق سپریم کورٹ میں میڈیا کمیشن کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ کل پیغام دیا گیا کہ عدالت قانون سازی میں مداخلت نہیں کر سکتی، میں نے بار بار کہا پارلیمنٹ سپریم ادارہ ہے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں