Friday, 14 August, 2020
اسلام آباد اور تہران کے درمیان براہ راست پروازوں کا آغاز

اسلام آباد اور تہران کے درمیان براہ راست پروازوں کا آغاز

 

اسلام آباد ۔ ایران کی نجی کمپنی 'کیش ایئرلائن' کی جانب سے ایران اور پاکستان کے دارالحکومتوں کے درمیان پہلی بار براہ راست پروازوں کا آغاز کردیا گیا جو دونوں ہمسایہ ممالک کے تعلقات میں ایک اہم سنگ میل ہے.

موصولہ اطلاعات کے مطابق  کیش ایئرلائن کا ایئربس-321 طیارہ گزشتہ روز 46 مسافروں کو لے کر تہران سے اسلام آباد پہنچ گیا جس کے بعد یہ جہاز اسلام آباد سے مسافروں کو لے کر تہران واپس چلا گیا.

کیش ایئر لائن کی پرواز اسلام آباد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر پہنچنے کے موقع پر ایک خصوصی تقریب کا انعقاد کیا گیا تھا جس میں پاکستان میں قائم اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتخانے کا ایک نمائندہ بھی شریک تھا.

پروگرام کے تحت کیش ایئرلائن کی پرواز ہفتے میں ایک دن (منگل) تہران سے اسلام آباد آئے گی اور اسی شام اسلام آباد سے تہران واپس جائے گی.

تہران اور اسلام آباد کے درمیان براہ راست پروازوں کے آغاز نے دونوں ممالک کے درمیان طویل المدت زمینی سفر کو آسان بنادیا ہے. پاکستان سے ایران جانے کے لئے مسافروں کو 20 گھنٹے سے زائد زمینی طے کرنا پڑتا تھا مگر اب براہ راست پروازوں کے ذریعے یہ سفر تین گھنٹے میں پورا ہوگا.

کیش ایئر لائن کی پرواز کے آغاز سے ایران اور پاکستان کے درمیان موجودہ پروازوں کی تعداد چار ہوگئی ہے اس سے پہلے 'ایران ایئر کمپنی' کی جانب سے تہران اور کراچی کے درمیان ہر جمعرات کے روز پرواز چلائی جاتی ہے جبکہ ایران کی نجی کمپنی 'تابان' کی مشہد اور لاہور کے درمیان براہ راست پروازوں کا عمل جاری ہے جبکہ حال ہی میں ایران کی مشہور کمپنی 'ماہان ایئر' نے بھی مشہد اور لاہور کے درمیان براہ راست پروازوں کا آغاز کردیا ہے.

توقع کی جاتی ہے کہ ایران اور پاکستان کے دارالحکومتوں کے درمیان براہ راست پروازوں کے آغاز سے دوطرفہ تعلقات میں ایک نئے باب کا آغاز ہوگا بالخصوص دونوں ممالک کی تاجر برداری اور کاروباری حلقوں میں مشترکہ سرگرمیوں کے لئے مثبت فضا قائم ہوگی. تہران، اسلام آباد کی براہ راست پروازوں کے ذریعے سے پاک،ایران تجارتی اور اقتصادی سرگرمیوں کو مزید بڑھانے میں مدد ملے گی.

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  65605
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
عام طور پر یہ سمجھا جاتا ہے کہ اسرائیل ایک بہت طاقتوراورمضبوط ریاست ہے۔ اس لئے بھی کہ اسے دنیا کی بڑی طاقتوں کی حمایت حاصل ہے نیز وہ ایک ایسی متحد قوم ہے جو بے پناہ اقتصادی وسائل رکھتی ہے، جس کا امریکہ جیسی طاقت کے اوپر بہت اثرورسوخ ہے اورجس کے پاس نہایت جدید اورطاقتور ذرائع ابلاغ موجود ہیں۔ اس لئے بھی کہ آج اسرائیل ایک ایٹمی طاقت ہے۔علاوہ ازیں وہ بڑے بڑے عرب ممالک کوزبردست فوجی شکستوں سے ہمکنار کرچکا ہے۔
وفاقی حکومت نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے نظر ثانی درخواست سپریم کورٹ میں دائر کردی ہے، حکومت کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ فیصلے میں اہم آئینی و قانونی نکات
پیپلز پارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے سیاست میں اسٹیبلشمنٹ کی مداخلت بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ پی ایس پی اورمتحدہ کے بننے پر جوڈیشل کمیشن بنایا جائے۔

مقبول ترین
لاک ڈاؤن نے جہاں ہماری زندگی میں معیشت کا پہیہ جام کیا وہیں بہت سارے سبق بھی دے گیا۔ لاک ڈاؤن نہ ہوتا تو ہم شاید اپنی مصروف زندگی میں اتنے مصروف ہو جاتے کہ رشتوں، ناطوں کی اہمیت اور فیملی سسٹم کی خوبصورتی اور چاشنی سے مزید دور ہوتے چلے جاتے۔ وہ جو اک زندگی ہے نا کہ جس میں بیٹا دفتر جا رہا ہے، بیٹی یونیورسٹی جا رہی ہے، سب گھر والے ادھرادھر بکھرے پڑے ہیں۔
قومی اسمبلی سے انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا، شرکت داری محدود ذمہ داری سمیت پانچ بلز منظور کرلئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا جس میں کمپنیز ترمیمی بل اور نشہ آور اشیا کی روک تھام کا بل بھی شامل ہے۔
وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نورالحق قادری نے کہا ہے کہ اسرائیل میں موساد کی ایک خاتون جعلی اکاؤنٹ سے فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے۔ یہ خاتون فرقہ وارانہ موادسوشل میڈیا پربھیج دیتی ہے اورپھر آگے شیعہ اور سنی خود سے اسے پھیلاتے ہیں۔
سعودی عرب کے سابق انٹیلجنس افسر کی شکایت پر واشنگٹن کی ایک امریکی عدالت نے سعودی بن سلمان ولی عہد کو طلب کرلیا ہے۔ سابق سعودی انٹیلی جنس ایجنٹ کو مبینہ طور پر ناکام قاتلانہ حملے میں نشانہ بنایا گیا تھا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں