Thursday, 19 July, 2018
گوگل کے پاس موجود اپنی ذاتی معلومات مٹائیں

گوگل کے پاس موجود اپنی ذاتی معلومات مٹائیں

گوگل کو علم ہے کہ آپ اس پر کیا ڈھونڈ رہے ہیں، آپ کی کس چیز میں دلچسپی ہے، آپ کون سی ویب سائٹ کا استعمال کرتے ہیں۔

'آپ گوگل استعمال کرتے وقت ہمارے ساتھ اپنی ذاتی معلومات فراہم کرتے ہوئے ہم پر بھروسہ کرتے ہیں‘

گوگل کے ضوابط کار کی پہلی سطر میں یہ درج ہے کہ دنیا کے مقبول ترین سرچ انجن کو استعمال کرنے والے اس سے کیا توقع کر سکتے ہیں۔

لیکن کئی صارفین کو یہ علم نہیں ہے کہ 'مائی ایکٹیوٹی' نامی فنکشن کو استعمال کر کے وہ اپنی کوئی بھی ذاتی معلومات گوگل سے ختم کر سکتے ہیں۔

1) گوگل پر کی جانے والی تمام سرچ مٹا دیں

جب بھی آپ گوگل پر کچھ سرچ کرتے ہیں تو گو اسے آپ کے اکاؤنٹ سے منسلک کر دیتا ہے۔ آپ انٹرنیٹ پر کوئی فارم پر کریں یا گوگل پر اپنی ای میل چیک کریں وہ تمام چیزیں 'مائی ایکٹیویٹی' کے ریکارڈ میں شامل ہو جاتی ہیں۔

آپ اس پر اپنی مرضی کے مطابق مختلف اوقات میں سرچ کی ہوئی مختلف چیزیں مٹا سکتے ہیں اور اگر چاہیں تو سرچ کی ہوئی تمام کی تمام چیزیں وہاں سے حذف کر سکتے ہیں۔

گوگل آپ کو ایسا کرنے پر ایک تنبیہی پیغام دے گا لیکن حقیقت میں تمام معلومات کو حذف کرنے سے کوئی نقصان نہیں ہوگا۔

2) یو ٹیوب پر موجود اپنی تمام معلومات مٹا دیں

گوگل اپنے سرچ انجن کی طرح یو ٹیوب پر بھی اپنے صارفین کی تمام معلومات رکھتا ہے لیکن اسے بھی مٹانا نہایت آسان ہے۔

سب سے پہلے بائیں جانب موجود مینو میں 'ہسٹری' کو کلک کریں اور اس میں 'کلئیر آل سرچ ہسٹری' پر کلک کر دیں۔

3) وہ تمام معلومات کیسے مٹائیں جائیں جو اشتہارات دینے والی کمپنیاں آپ کے بارے میں رکھتی ہیں؟

گوگل نہ صرف آپ کے بارے میں تمام معلومات رکھتا ہے بلکہ وہ یہ تمام معلومات اشتہارات دینے والی کمپنیوں کو بھی فراہم کرتا ہے۔ اسی وجہ سے آپ کئی دفعہ دیکھتے ہیں کہ آپ وہی اشتہارات دیکھتے ہیں جس کے بارے میں آپ سرچ کر رہے ہوتے ہیں۔

لیکن اس میں بھی کوئی پریشانی نہیں ہونی چاہیے کیونکہ آپ یہ معلوم کر سکتے ہیں کہ گوگل آپ کی کون سی معلومات ان کمپنیوں کو دے رہا ہے۔

یہ جاننے کے لیے آپ اپنے گوگل اکاؤنٹ پر جائیں اور اس میں 'پرسنل انفو اینڈ پرائیوسی' کے خانے میں جائیں.

وہاں آپ 'ایڈ سیٹنگ' کے آپشن پر کلک کریں اور اس میں 'مینیج ایڈ سیٹنگ' پر کلک کریں۔

وہاں آپ کو 'ایڈ پرسنالائیزشن' کا آپشن نظر آئے گا جسے آپ بند کر سکتے ہیں اور اس کے بعد آپ کو گوگل پر سرچ کرنے والی چیزوں کے حوالے سے اشتہارات نظر نہیں آئیں گے۔.

4) اپنی گوگل کی لوکیشن معلومات مٹا لیں

اگر آپ اینڈرائڈ فون استعمال کرتے ہیں تو گوگل ان تمام جگہوں کی معلومات کی فہرست رکھتا ہے جہاں آپ اپنے فون کے ساتھ گئے ہوں۔

ان تمام معلومات کو مٹانے کے لیے گوگل میپ کے پیج پر جائیں اور اس میں سے 'لوکیشن ٹریکنگ' کو چن کر اپنا تمام ہسٹری وہاں سے حذف کر لیں۔ 

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  98342
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے پاکستان اور بھارت کی خفیہ ایجنسیوں کے دو سابق سربراہوں کی کتاب 'دی سپائے کرونیکلز: را، آئی ایس آئی اینڈ دی الوژن آف پیس' کی اشاعت پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر یہ کتاب کسی
سپریم کورٹ نے گزشتہ روز صحافیوں پر پولیس تشدد کے واقعے کی جوڈیشل انکوائری کا حکم دے دیا۔ گزشتہ روز صحافت کے عالمی دن پر اسلام آباد میں صحافیوں نے ریلی نکالی جسے پولیس نے پارلیمنٹ ہاؤس جانے سے روک دیا۔
بھارت، اسرائیل اور امریکہ مل کر دنیا کے مسلمانوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہے ہیں یہ وقت ہے کہ دنیا کے مسلمان متحد ہو کر اس منحوس تثلیث کے خلاف مشترکہ لائحہ عمل بنائیں۔ ان خیالات کا اظہار ملی یکجہتی کونسل پاکستان اور جماعت اسلامی
ملی یکجتی کونسل پاکستان کے صدر صاحبزادہ ابو الخیر زبیر نے کونسل کے ڈپٹی سیکٹری جنرل ثاقب اکبر کے ساتھ ایک ملاقات میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد بین المسلمین اللہ اور رسول صلعم کا حکم ہے، ہم اس پر کاربند رہیں گے۔

مقبول ترین
سینیٹ قائمہ کمیٹی میں بریفنگ دیتے ہوئے نمائندہ جی ایچ کیو نے بتایا پاک فوج کا الیکشن سے کوئی تعلق نہیں، آرمی صرف امن اومان کی صورتحال بہتر رکھنے کے لئے کام کر رہی ہے، آرمڈ فورسز ہمیشہ سول اداروں کو سپورٹ دیتی رہی ہے۔
اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیراعظم نوازشریف اورمریم نواز کی ان کے وکلا سے ملاقات منسوخ کردی گئی ہے۔ میڈیا کے مطابق نوازشریف اورمریم نواز کا آج اڈیالہ جیل میں چھٹا روزہے جب کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدرکو جیل کا مکین ہوئے 11 دن ہوگئے۔
ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹرفیصل کا کہنا ہے کہ بلوچستان اور خیبرپختون خوا میں انتخابی امیدواروں پر دہشت گردانہ حملوں سے پاکستان خوفزدہ ہونے والا نہیں ملک میں جمہوری انتخابی عمل جاری رہے گا۔
ترکی کی حکومت نے ناکام فوجی بغاوت کے بعد لگائی جانے والی ایمرجنسی دو سال بعد ختم کردی۔ 15 جولائی 2016 کو ترک فوج کے ایک دھڑے نے صدر رجب طیب اردوان کا تختہ الٹنے کی کوشش کی تھی جو ناکام ہوگئی تھی۔ اس بغاوت میں فوجیوں سمیت تقریب

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں