Monday, 09 December, 2019
صحیح احتساب نہ ہوا تو چوراہوں پر عدالتیں لگانا مجبوری ہوگی، سراج الحق

صحیح احتساب نہ ہوا تو چوراہوں پر عدالتیں لگانا مجبوری ہوگی، سراج الحق

لاہور ۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا ہے کہ حکمرانوں نے ایک دن بھی آئین پر عمل نہیں کیا، اگر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال انصاف نہ کر سکے تو پھر چوراہوں میں عدالتیں لگیں گی۔

لاہور میں پارٹی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس میں 436 افراد کے نام ہیں اور ہم سب کا احتساب چاہتے ہیں، چیرمین نیب سے کہتا ہوں قوم آپ کی طرف دیکھ رہی ہے، اگر آپ بھی انصاف نہ کر سکے تو پھر چوراہوں میں عدالتیں لگیں گی۔

انہوں نے کہا کہ آج کی سیاست نظریات کے گرد نہیں شخصیات کے گرد گھومتی ہے، نواز شریف اور ان کے خاندان نے پنجاب میں رنجیت سنگھ سے زیادہ عرصہ حکومت کی لیکن اتنا عرصہ حکومت کے بعد بھی آج لاہور میں پینے کا صاف پانی نہیں ملتا۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاکستان پر ظالم اور کرپٹ جاگیر داروں اور سرمایہ داروں نے قبضہ کیا جن سے آج پاکستان کے جغرافیے اور ختم نبوت کو بھی خطرہ ہے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ پاکستان پر ڈرگ مافیا اور لینڈ مافیا نے قبضہ کیا، حکمرانوں نے چند ڈالروں کے خاطر عافیہ صدیقی اور ایمل کانسی کو بھی فروخت کیا۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ یہ سارا نظام چند خاندانوں اور وی آئی پیز کے لیے ہے، اس نظام میں ہمارے نوجوان بھی محروم ہیں، غریب کے بیٹے کے پاس ڈگری ہے مگر اسے نوکری نہیں ملتی اور آج اس ملک میں سفارش، رشوت اور کرپشن کا کلچر ہے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ جب تک یہ نظام رہے گا، نواز شریف اور آصف زرداری پیدا ہوتے رہیں گے، خدا کے لیے ان سیاسی پنڈتوں کے گھروں کا طواف مت کریں۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  34184
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
اگر پاکستان، امریکا کے ساتھ اپنے تعلقات برقرار رکھنا چاہتا ہے تو اسے اپنی سرزمین پر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی اور انسداد دہشت گردی کی کوششوں کو مزید تیز کرنا ہوگا، ٹرمپ خارجہ پالیسی
محلات کی چکاچوند کو چھوڑ کر جنگلات کی پر سکون وادیوں میں بڑے درختوں کے نیچے آنکھیں بند کیے دنوں بیٹھے رہنے والے شہزادے کو گیان حاصل ہوا تو دنیا اسے مہاتما بدھ کے نام سے جانتی ہے۔ مہاتما کی

مقبول ترین
نئے چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کے معاملے پر قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ کوشش ہو گی کہ حکومت سے پُر خلوص بات چیت کی جائے۔ اِس وقت شہباز شریف اپنے بھائی اور سابق وزیراعظم نواز شریف کی
آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ لاہور پہنچے ہیں۔ انہوں نے داتا دربارؒ پر حاضری دی، مزار پر چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانی کی۔ اس موقع پر ملکی ترقی و خوشحالی اور سلامتی کیلئے دعائیں بھی مانگی گئیں۔
لاہور میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ سپریم ہے، قانون سازی کا اختیار رکھتی ہے۔ سپریم کورٹ کے تفصیلی فیصلے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا کہ ریویو میں جانا ہے یا قانون بنانا ہے؟
جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی-ف) کے امیر مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ آئین کی حکمرانی کے لیے جو قدم اٹھایا وہ منزل پر پہنچ رہا ہے اور حکمرانوں کی کشتی ڈوبنے کے قریب پہنچ گئی ہے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں