Thursday, 19 September, 2019
’’اے این ایف نے رانا ثنااللہ کو گرفتار کرلیا‘‘

’’اے این ایف نے رانا ثنااللہ کو گرفتار کرلیا‘‘

لاہور ۔ اے این ایف ہیڈ کوارٹر راولپنڈی حکام نے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کی تصدیق کردی۔ میڈیا کے مطابق اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) نے مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے رانا ثنااللہ کو تحویل میں لے لیا اور ان سے پوچھ کچھ کی جاری ہے تاہم اس حوالے سے کوئی مصدقہ اطلاعات نہیں کہ انہیں کس کیس میں تحویل میں لیا گیا ہے۔

اے این ایف ہیڈ کوارٹر راولپنڈی حکام نے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ رانا ثنااللہ کو اے این ایف لاہور نے گرفتار کیا اور اس حوالے سے اے این ایف لاہور سے مزید تفصیلات حاصل کی جارہی ہیں۔
اے این ایف لاہور کا کہنا ہے کہ رانا ثنااللہ کی گاڑی سے بھاری مقدار میں منشیات برآمد ہوئیں، پکڑی جانے والی منشیات کا وزن کیا جارہا ہے اور اے این ایف بلاوجہ کسی کو گرفتار نہیں کرتی۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ رانا ثناء کی گرفتاری لاقانونیت اور سیاسی انتقام کی بدترین مثال ہے۔ 

شہباز شریف نے الزام عائد کیا کہ وزیراعظم کے حکم پر اداروں کو سیاسی مخالفین کے خلاف استعمال کی گھناؤنی مثال قائم کی گئی، کبھی نیب، کبھی نیب ٹو کا سیاسی مخالفین کی گرفتار ی اور دباؤ کے لیے استعمال افسوسناک ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اے این ایف کا سیاسی مخالفین کی گرفتار ی اور دباؤ کے لیے استعمال افسوسناک ہے۔

صدر ن لیگ نے مطالبہ کیا کہ رانا ثناء اللہ کو فوری طور پر عدالت میں پیش کیا جائے اور بتایا جائے ان پر کیا الزام ہے؟  شہباز شریف نے کہا کہ رانا ثناءاللہ کی گرفتاری میں عمران خان کا ذاتی عناد کھل کر سامنے آگیا ہے۔

دوسری جانب مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق گورنر پنجاب محمد ذبیر کا کہنا ہے کہ رانا ثناء اللہ کا موبائل فون بند جا رہا ہے اور ان سے کسی قسم کا رابطہ نہیں ہو پا رہا۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی گرفتاری میں براہ راست وزیراعظم ملوث ہیں۔

مریم نواز نے کہا کہ اس سے زیادہ بے ہودہ صورتحال نہیں ہو سکتی، اے این ایف کا رانا ثناء اللہ سے کیا لینا دینا؟ رہنما ن لیگ نے کہا کہ رانا ثناءاللہ کو جرات مندانہ مؤقف کی وجہ سے گرفتار کیا گیا، جعلی اعظم چھوٹا ذہن رکھنے والی شخصیت ہے۔

رانا ثناء اللہ کے داماد شہریار کا بتانا ہے کہ مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر دوپہر ڈیڑھ بجے فیصل آباد سے لاہور کے لئے روانہ ہوئے، 2 بجے رانا ثناء اللہ سے رابطہ کرنے کی کوشش کی لیکن رابطہ نہیں ہو سکا۔ شہریار کا مزید بتانا ہے کہ رانا اللہ ثناء کو موٹر وے سے حراست میں لیا گیا، ہمیں نہیں معلوم کہ رانا ثناء اللہ کو کہاں لےکر گئے ہیں۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے رانا ثناءاللہ کی گرفتاری پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ اے این ایف کا رانا ثناءاللہ کو گرفتار کرنا سیاسی انتقام کی مایوس کن کوشش ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ رانا ثناء اللہ ماضی میں پاکستان پیپلز پارٹی کے سخت ترین ناقد رہے اور موجودہ حکومت کے سخت ترین ناقدین میں مؤثر ترین آواز ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیاسی بنیادوں پر گرفتاریاں حکومت کی کمزوری اور مایوسی کو ظاہر کرتی ہیں۔

جیو نیوز کے اینکر پرسن اور سینئر صحافی حامد میر نے بتایا کہ رانا ثناء اللہ تین چار ہفتے سے مجھے اسلام آباد میں ملتے تھے تو بتاتے تھے شاید یہ ہماری آخری ملاقات ہو کیونکہ مجھے گرفتار کر لیا جائے گا۔ حامد میر نے کہا جب پوچھا جاتا کہ کیوں گرفتار کریں گے تو رانا ثناء اللہ نے بتایا کہ وہ ابھی مجھے گرفتار کرنے کی وجوہات ڈھونڈ رہے ہیں۔

رانا ثنااللہ مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر اور ممبر قومی اسمبلی ہیں۔ وہ عام انتخابات میں ن لیگ کے ٹکٹ پر این اے 106 فیصل آباد سے ایم این اے منتخب ہوئے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  76565
کوڈ
 
   
مقبول ترین
قومی احتساب بیورو نے پیپلزپارٹی کے اہم رہنما خورشید شاہ کو اسلام آباد سے گرفتار کرلیا۔ ترجمان نیب کے مطابق پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ کو گرفتار کرلیا گیا، خورشید شاہ کو سرکاری پلاٹوں پر قبضے، آمدن سے زائد اثاثوں کے الزام میں گرفتار
امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی تیل تنصیبات پر حملہ کرنے والوں کے ساتھ جنگ نہ کرنے عندیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم جنگ نہیں چاہتے اور نہ ہی کبھی امریکا نے سعودی عرب سے اس کی حفاظت کرنے کا وعدہ نہیں کیا۔ برطانوی خبر
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پہلی مرتبہ احتساب کا عمل سیاسی مداخلت سے آزاد ہے لہذا کوئی ڈیل نہیں ہوگی۔ وزیراعظم عمران خان سے بابر اعوان نے ملاقات کی جس میں حکومت کے آئینی اور قانونی معاملات پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا
وفاقی حکومت کی معاشی ٹیم نے نیشنل بینک آف پاکستان (این بی پی) اور اسٹیٹ لائف انشورنس کی نجکاری کا اشارہ دے دیا۔ وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ اور چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) شبر زیدی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں