Saturday, 08 August, 2020
کورونا وائرس کے باعث مزدور طبقہ زیادہ متاثر ہوا، وزیراعظم

کورونا وائرس کے باعث مزدور طبقہ زیادہ متاثر ہوا، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نےانٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن (آئی ایل او) کے تحت عالمی کانفرنس سے بذریعہ ویڈیو لنک خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم نے مشترکہ حکمت عملی کے تحت کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکا تاہم کورونا وائرس کی وبا کے دوران مزدور طبقہ سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جس سے نمٹنے کے لیے دنیا کو ایک مشترکہ حکمت عملی اپنانا ہوگی۔

 ان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ جاری ہے کچھ ممالک میں یہ کم ہوکر دوبارہ تیزی سے پھیل رہا ہے جبکہ کچھ میں یہ بلندی پر ہی موجود ہے، لہٰذا ہم سب کے لیے ضروری ہے کہ ایک مشترکہ حکمت عملی اپنائی جائے تاکہ مزدوروں کے حالات کوبہتر کیا جاسکے۔
پاکستان کی جانب سے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیراعظ نے بتایا کہ ایک طرف ہم نے لاک ڈاؤن نافذ کیا اور یکسوئی سے اس کے پھیلاؤ کو روکنے کی کوشش کی کیونکہ ہم جانتے تھے کہ اگر یہ وائرس اچانک پھیلا تو ہمارا نظام صحت جواب دے جائے گا اور ہم نے اس طرح وائرس کی رفتار کو کم کیا۔
تاہم ان کا کہنا تھا کہ دوسری طرف مسئلہ یہ تھا کہ معیشت سے جڑا ایک بڑا حصہ خود سے کمانے والا تھا اور ہمارا مزدور طبقہ رجسٹرڈ نہیں تھا جبکہ جب ہم نے لاک ڈاؤن کا نفاذ کیا تو اچانک ان لوگوں کی بڑی تعداد بیروزگار ہوگئی۔

اپنی بات جاری رکھتے ہوئےانھوں نے کہا کہ مزدور طبقے کو ابتدائی ایام میں بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ لوگ بھوک کی وجہ سے شدید پریشانی کا شکار تھے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ جب ہمیں صورتحال کا ادراک ہوا، ہم نے اسمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا اور ایک طرف ہم نے تعلیمی ادارے، شادی ہالز، کھیلوں کے مقابلوں پر پابندی لگائی تاہم دوسری طرف ہم نے تعمیرات اور زراعت کے شعبوں کو کھولنے کی اجازت دی کیونکہ تعمیراتی شعبے سے لیبر  کی ایک بڑی تعداد وابستہ ہوتی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس کے علاوہ ہم نے یہ فیصلہ بھی کیا کہ ضرورت مند، مزدور طبقے کو رقم کی منتقلی کی جائے جبکہ جو لوگ رجسٹرڈ تھے ان کے آجر سے بات کی کہ ان کی ملازمت کو برقرار رکھا جائے ہم اس کا معاوضہ دیں گے۔

احساس پروگرام کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اس پروگرام کے تحت ہم نے لوگوں کو رجسٹرڈ کیا اور ان کی جانچ پڑتال کی اور پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ اتنے کم وقت میں اتنے لوگوں میں رقوم کی فراہمی یقینی بنائی۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ اسی حکمت عملی نے ہمیں لاک ڈاؤن کے باعث سامنے آنے والی بدترین صورتحال سے محفوظ رکھا، ساتھ ہی بھارت کی مثال دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت نے اس کے مخالف کام کیا اور وہاں کرفیو لگایا گیا اور اس سے یومیہ مزدوروں کو سخت مشکلات کا سامنا ہوا اور غربت بڑھی۔

دوران خطاب وزیراعظم کا یہ بھی کہنا تھا کہ مستقبل بہت غیرمستحکم ہے، ہمیں نہیں معلوم اس لاک ڈاؤن کے اثرات سے کب تک معیشت بحال ہوگی لہٰذا اس بارے میں کسی کو نہیں معلوم کے آگے کیا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم دعا کرتے ہیں کہ اس وائرس کی کوئی ویکسین آئے اور وہ تحفظ کرے لیکن اس وقت کے دوران غیریقینی صورتحال برقرار رہے گی جبکہ ہمارے معاشرے کا سب سے کمزور طبقہ مزدور ہی رہے گا۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ اسی لیے یہ کانفرنس بہت اہم ہے کیونکہ ہمیں یہاں خیالات کے تبادلے کی ضرورت ہے اور مزدور طبقے کی مدد کے لیے ایک مشترکہ حکمت عملی اپنانے کی ضرورت ہے۔

چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار سے متعلق انہوں نے کہا تھا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے بہت سے کاروبار دیوالیہ ہوگئے اور اسی لیے ہمیں کوئی حکمت عملی اپنانی ہوگی اس کے علاوہ بیرون ملک مقیم شہریوں کے حالات کو بھی دیکھنا ہوگا کیونکہ پاکستان سمیت مختلف ممالک ان کی ترسیلات زر پر انحصار کرتے ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ ہمیں یہ حکمت عملی بنانے کی ضرورت ہے کہ کس طرح ان ممالک کو سمجھا سکیں کہ وہ مزدوروں کے ساتھ ہمدردی رکھیں، اس کے علاوہ ہمیں ایک مشترکہ حکمت عملی کی ضرورت ہے کہ تاکہ مزدور طبقے کے حالات کو دیکھا جاسکے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  16527
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے ہندوستان میں حالات اب بگڑتے جائیں گے، مودی حکومت بند گلی میں پھنس چکی اور اب کشمیر آزاد ہوگا۔ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کا حل ہونا چاہیے۔
وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ لگتا ہے کراچی میں کوئی حکومت ہی نہیں اور کراچی والوں کوسندھ حکومت کےرحم وکرم پرنہیں چھوڑاجاسکتا۔ پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت نے صوبے بالخصوص کراچی کی ترقی کے لیے کوئی کام نہیں کیا۔
صوبائی وزیراطلاعات فیاض چوہان کا کہنا ہے کہ پنجاب بھر میں سخت لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا ہے اور فیصلے کا آج رات سے اطلاق ہوگا۔ ذرائع کے مطابق مارکیٹیں آج رات سے بند کر دی جائیں گی۔
وزیراعظم عمران خان نے شوگرمافیا کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کرتے ہوئے رپورٹ کی بنیاد پر ایف بی آر، نیب، ایس ای سی پی اور ایف آئی اے کو تحقیقات کا حکم دے دیا۔ حکومت نے شوگر مافیا کی جانب سے بلیک میل کرنے کی کوشش ناکام بنادی۔

مزید خبریں
وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کورونا وائرس کے مزید پھیلاؤ کے خطرے کو مدنظر رکھتے ہوئے اضلاع کی سطح پر قرنطینہ مرکز بنانے کی ہدایت کردی ہے۔
وزارت قانون و انصاف نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی منظوری سےخالد جاوید خان کو انور منصور کی جگہ پاکستان کا نیا اٹارنی جنرل تعینات کرنے کا باضابطہ نوٹی فیکیشن جاری کر دیا ہے۔
اسلام آباد: ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) اور مائیکروسافٹ نے Imagine Cup 2020میں نیشنل یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی (نسٹ)، اسلام آباد کی ٹیمFlowlines کو نیشنل فائنل 2020کا فاتح قرار دیاہے۔نسٹ کی ٹیم نے ملک بھر کی 60 فائنلسٹ ٹیموں میں بہترین کارکردگی دکھائی۔
پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے بانی رہنما اور وزیر اعظم عمران خان کے دیرینہ سیاسی معاون نعیم الحق طویل علالت کے بعد انتقال کر گئے۔ انھیں کینسر کا مرض‌لاحق تھا۔ وہ کراچی کے نجی اسپتال میں زیر علاج تھے۔

مقبول ترین
پاکستان کے وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے چند روز قبل نجی ٹی وی چینل پر کشمیر اور مسلم ممالک پر مشتمل اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) سے متعلق ایک بیان دیا جسے بعدازاں چینل نے سینسر کر دیا گیا۔
احتساب عدالت نے پارک لین ریفرنس میں نیب کے دائرہ اختیار کیخلاف آصف زرداری کی درخواست مسترد کرتے ہوئے پیر کے روز فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ تحریری حکم نامہ آج ہی جاری کریں گے جس میں ضروری ہدایات دی جائیں گی۔
اس میں شک نہیں کہ مختلف دینی مسالک کے ماننے والوں کا عمومی رویہ یہ ہے کہ وہ دوسروں کی بات نہیں سنتے بلکہ اپنی محفلوں میں دوسروں کو آنے کی دعوت تک نہیں دیتے ۔ اس غیر صحت مندانہ رجحان سے غیر صحت مندانہ معاشر ہ تشکیل پاچکا ہے ۔ اس صورت حال کا ازالہ بحیثیت قوم بقا کے لیے ناگزیر ہے ۔ اس سلسلے میں ہم ذیل میں چند معروضات پیش کرتے ہیں :
احتساب عدالت نے رمضان شوگر ملز ریفرنس میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز پر فرد جرم عائد کردی۔ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کا صحت جرم سے انکار کردیا، عدالت نے آئندہ سماعت پر نیب گواہوں کو طلب کرلیا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں