Saturday, 25 November, 2017
عمران خان عدالت میں پیش، چاروں مقدمات میں ضمانت منظور

عمران خان عدالت میں پیش، چاروں مقدمات میں ضمانت منظور

 اسلام آباد: انسداد دہشت گردی عدالت نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی دھرنے کے دوران ایس ایس پی عصمت اللہ جونیجو پر تشدد،  پی ٹی وی اور پارلیمنٹ ہاؤس پر حملوں سمیت چار مقدمات میں درخواست ضمانت منظور کرلی ہے۔ 

اسلام آباد کے جوڈیشل کمپلیکس میں قائم انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پی ٹی آئی کے اسلام آباد میں 2014 دھرنے سے متعلق دائر ہونے والے 4 مقدمات کی سماعت ہوئی جس میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اپنے وکلا کے ہمراہ پیش ہوئے اور چیئرمین پی ٹی آئی کے وکلا نے عدالت سے چاروں مقدمات میں عمران خان کو ضمانت دینے کی درخواست کی۔ جس پر عدالت نے عمران خان کو چاروں مقدمات میں ضمانت دیتے ہوئے حکم دیا کہ وہ آج سے ہی تمام مقدمات کی تفتیش میں پیش ہوجائیں اور پولیس کو اپنا بیان ریکارڈ کروائیں۔

 عدالت نے چاروں مقدمات میں عمران خان کی درخواست ضمانت کرتے ہوئے 2،2 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا اور کیس کی سماعت 24 نومبر تک ملتوی کرادی ہے۔

پیشی سے قبل صحافیوں کی جانب سے تحریک انصاف کے سربراہ سے سوال کیا گیا کہ وہ شریف خاندان کی دیکھا دیکھی عدالت میں پیش ہورہے ہیں؟ جس پر عمران خان نے مختصر جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’گرکس کا جہاں اور ہے شاہین کا جہاں اور ‘ مجھے اُن سے مشابہت نہ دیں۔

ضمانت حاصل کرنے کے بعد پی ٹی آئی کے سربراہ عدالت سے اپنی رہائش گاہ کے لیے روانہ ہوگئے۔

بعدازاں عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ جھوٹے مقدمات قیادت کو دہشت گردی میں ملوث کرنے اورعوام آواز کو دبانے کے لیے قائم کیے گئے‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ہم نے سماعت کے دوران فاضل جج کے سامنے مؤقف اختیار کیا کہ عمران خان حکومتی اسٹیٹس کو کے سب سے بڑے مخالف ہیں اس لیے اُن کے اور کارکنان کے خلاف یہ مقدمات درج کیے گئے تھے۔

بابر اعوان کا کہنا تھا کہ ہم نے عدالت کے سامنے یہ مؤقف بھی پیش کیا تھا کہ دھرنے کے دوران جو لوگ مارے گئے اُن کے حوالے سے مقدمات درج نہیں کیے گئے بالکل اُسی طرح جیسے ماڈل ٹاؤن کا کوئی مقدمہ درج نہیں کیا گیا تھا۔

اُن کا کہنا تھا کہ عدالت میں یہ مؤقف بھی اختیار کیا گیا کہ یہ ایک جمہوری احتجاج تھا جس کی قیادت عمران خان نے کی، اس طرح کے مظاہرے کسی قانون کے تحت درج نہیں کیے جاسکتے۔ پولیس کا اس مقدمے سے کوئی تعلق نہیں کیونکہ آئی جی اسلام آباد نے خود حکومتی احکامات کو مسترد کرتے ہوئے عوام پر ظلم نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان کے خلاف پروپیگنڈا کیا جاتا ہے کہ وہ قانون کی حکمرانی نہیں چاہتے، اسی بات کو غلط ثابت کرنے کے لیے چیئرمین تحریک انصاف آج عدالت میں پیش ہوئے ہیں۔

یاد رہے کہ 2013 کے انتخابات میں مبینہ دھاندلی اور سانحہ ماڈل ٹاؤن کے خلاف تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک نے ڈی چوک پر 104 روز تک احتجاجی مظاہرہ کیا تھا۔

احتجاجی مظاہرین کی جانب سے پی ٹی وی کے مرکزی دفتر پر حملہ، ایس ایس پی عصمت اللہ جونیجو کو تشدد پر تشدد ، پارلمنٹ اور پی ٹی وی پر حملوں سمیت 4  مقدمات تھانہ سیکرٹریٹ میں مقدمات درج ہیں۔ اور عدالت کی جانب سے ان مقدمات میں عمران خان اور طاہرالقادری کو اشتہاری قرار دیا جاچکا ہے۔

مذکورہ مقدمات کے حوالے سے اس سے قبل ہونے والی سماعت پر عدالت میں پیش نہ ہونے کے باعث عدالت نے عمران خان اور ڈاکٹر طاہر القادری کے ورانٹ گرفتاری اور جائیداد ضبط کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  15847
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
کور کمانڈر لاہورلیفٹننٹ جنرل عامر ریاض نے جہلم کے علاقے ٹلہ جوگیاں میں پاک فوج کی فیلڈ فائرنگ رینج کا دورہ کیا جہاں انہوں نے جوانوں کی فیلڈ مشقیں دیکھیں ۔ کور کمانڈر لاہور نے آپریشنل تیاریوں کو سراہتے ہوئے ایسی مشقوں کو جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا
سابق وزیر اعظم نواز شریف ٗان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن صفدر حاضری سے استثنیٰ کے باوجود 3 نیب ریفرنسز کی سماعت کیلئے احتساب عدالت میں پیش ہوئے سماعت کے دور ان نواز شریف کے وکیل اور نیب پراسیکیوٹر میں گرما گرمی ہوئی جس پر جج محمد بشیر نے سخت برہمی کا اظہار کیا۔
تربت کے علاقے تجابان سے مزید 5 افراد کی لاشیں ملی ہیں، جنہیں گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا ہے۔ جاں بحق افراد میں سے 3 کی شناخت بدر منیر، عثمان قادر اور دانش علی کے ناموں سے ہوئی ہے۔ جاں بحق افراد کا تعلق پنجاب کے ضلع گجرات سے ہے،
اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم کے بعد اسلام آباد انتظامیہ نے وفاقی دارالحکومت اور راولپنڈی کو ملانے والے فیض آباد انٹرچینج پر دھرنے کے مظاہرین کو متنبہ کیا ہے کہ وہ اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے پر عمل کر کے فیض آباد انٹرچینج اور دوسری شاہرائیں فوری طور پر خالی کردیں۔

مزید خبریں
وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف پورے عزم سے لڑ رہے ہیں ، دہشت گردوں کا نیٹ ورک توڑ دیا ہے ، آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جنگ لڑیں گے۔ وزیر اعظم نواز شریف سے پشاور میں مسلم لیگ ن کے سینیٹرز اور ارکان قومی
سابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرورنے تحریک انصاف میں باضابطہ طور پر شامل ہونےکی تصدیق کردی ہے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف جمہوریت پسند جماعت ہے اس لئے اس میں شامل ہونے کا
ترجمان دفتر خارجہ تسنیم اسلم نےافغان حکام کی جانب سے لگائے جانے والے ان الزامات کو سختی کے ساتھ مسترد کردیا ہے، جن میں کہا گیا تھا کہ سول کپڑوں میں ملبوس پاکستانی فوجی دستے افغان صوبے کنڑ میں حملے کر رہے ہیں۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ افغان حکام کے بے بنیاد اور من گھڑت الزامات سے
سردارمہتاب احمد خان نے خیبرپختونخواکے نئے گورنرکی حیثیت سے اپنے عہدے کاحلف اٹھالیا ہے جنہوں نے قبائلی علاقوں میں قیام امن ، سماجی واقتصادی ترقی اوربحالی وتعمیرنو کواپنی ترجیحات قراردیا ہے۔

مقبول ترین
اسلام آباد انتظامیہ کی جانب سے دھرنے کے شرکاء کو دی گئی 12 بجے کی ڈیڈ لائن ختم ہوگئی ہے تاہم فیض آباد کے مقام پر مظاہرین کی جانب سے دھرنا جاری ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ انتظامیہ ڈیڈ لائن میں اضافہ کردیا ہے اور کہا ہے
دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لیے سعودی عرب کی سربراہی میں قائم اسلامی ممالک کی افواج کے اتحاد کی سرکاری ویب سائٹ متعارف کرا دی گئی ہے۔ دہشت گردی مخالف اسلامی فوجی اتحاد‎ (آئی ایم سی ٹی سی) کی ویب
سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا کہنا ہے کہ کرپشن کے خلاف سعودی عرب میں ہونے والی حالیہ کارروائی کو تخت حاصل کرنے کی کوشش قرار دینا مضحکہ خیز ہے۔ انہوں نے ایران کے رہبرِ اعلیٰ آیت اللہ خامنہ ای کے بارے میں
اسلام آباد انتظامیہ نے دھرنے کے شرکا کو آج رات 12 بجے تک فیض آباد خالی کرنے کی وارننگ جاری کردی جب کہ حکم پر عملدرآمد نہ ہونے کی صورت میں آپریشن کا عندیہ دیا گیا ہے۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ آپریشن کی تمام ذمہ

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں