Sunday, 19 January, 2020
’’ہمیں کوئی سلیکٹڈ اور سلیکٹر قبول نہیں: بلاول بھٹو‘‘

’’ہمیں کوئی سلیکٹڈ اور سلیکٹر قبول نہیں: بلاول بھٹو‘‘

کوئٹہ ۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پوری پارٹی اس پر ڈٹی ہوئی ہے کہ طاقت کاسرچشمہ عوام ہے اور ہمیں سلیکٹڈ منظور نہیں۔

کوئٹہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب میں بلاول بھٹو زرداری کا کہناتھا کہ اس وقت بلوچستان میں لوگوں کو حقوق نہیں دیےجارہے، بلوچستان میں دیگر صوبوں سے زیادہ وسائل ہیں، مگربدقسمتی سے بلوچستان کے لوگ محروم ہیں، نالائق اور نااہل حکمران بلوچستان کے عوام کو فائدہ نہیں پہنچاسکتے، پاکستان سے جاگیرداری نظام شہید بھٹو نے ختم کیا اور عوام کو آواز دی۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے اگر حکومت کی تو وہ عوام کی مرضی اور عوام کی طاقت سے کی، 18 ویں ترمیم کے ذریعے ہم نے صوبوں کو ان کے حقوق دیے لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑرہا ہے کہ 18 ویں ترمیم پر اس کی روح کے مطابق عمل نہیں ہوا۔

ان کا کہنا ہے کہ جمہوری حقوق پر حملے ہورہے ہیں اور سلیکٹڈ کو بٹھا کر 18 ویں ترمیم پر حملے کیے جارہے ہیں، سلیکٹڈ اپنی ناکامی کا بوجھ عوام پر ڈ ال رہا ہے، ملک میں غربت میں اضافہ ہوتا جارہا ہے، ہماری معیشت پی ٹی آئی ایم ایف پر چل رہی ہے لیکن سلیکٹڈ جب کوئی اور لاتا ہے تو وہ سلیکٹڈ عوام کا خیال نہیں رکھتے۔

پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ ہم نے بھی آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کیے لیکن عوام کے معاشی حقوق کا تحفظ بھی کیا، سلیکٹڈ آج بھی سمجھتے ہیں کہ وہ پاکستان پیپلزپارٹی کو دبا سکتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ جو ظلم اس ملک کے عوام کے ساتھ ہورہاہے وہ ہم برداشت نہیں کرسکتے، لیاقت باغ میں جہاں شہید بے نظیر بھٹو کو شہید کیا آج وہاں بھٹو کی تیسری نسل آرہی ہے، پوری پارٹی اس پر ڈٹی ہوئی ہے کہ طاقت کاسرچشمہ عوام ہے، ہمیں سلیکٹڈ منظور نہیں، ہم نے عوام کو مشکلات سے نکالنا ہے اور عوامی مسائل حل کرنے ہیں، کٹھ پتلی حکومت عوامی مسائل حل نہیں کرسکتی۔

بلاول کا کہنا ہے کہ اس سال بینظیر بھٹو کی برسی ہم لیاقت باغ راولپنڈی میں منائیں گے، یہ پاکستان پیپلز پارٹی کی تیسری نسل کا پنڈی کو پیغام ہے کہ ہم پھر سے پنڈی آرہے ہیں، ہمیں کوئی سلیکٹڈ اور سلیکٹر قبول نہیں، ہمارے لیے صرف عوام کی مرضی چل سکتی ہے، کسی امپائر کی انگلی نہيں۔

ان کا کہنا تھا کہ کٹھ پتلیوں کا راج ختم کرنا ہے اور عوامی راج قائم کرنا ہے، ہم نے آمریت کا مقابلہ کیا، یہ کٹھ پتلی تو کوئی چیز ہی نہیں، یہ سمجھتے ہیں کہ بے نظير کے بیٹے کو ڈرا سکتے ہيں تو یہ ان کی بھول ہے۔

یاد رہے کہ رواں سال سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر 27 دسمبر کو راولپنڈی کے لیاقت باغ میں جلسہ کیا جائے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  2242
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
کوئٹہ کے علاقے سیٹلائٹ ٹاؤن کی مسجد میں ہونے والے زودار دھماکے میں‌ ڈی ایس پی امان اللہ اور امام سمیت 15 افراد شہید جبکہ متعدد ہو گئے۔ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کا کنٹرول سنبھالتے ہوئے دھماکے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں.
حکومت کی جانب سےوزیر دفاع پرویز خٹک نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کا آرمی ترمیمی ایکٹ 2020 بل قومی اسمبلی میں پیش کردیا۔
پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی قیادت نے آرمی چیف کی مدت ملازمت سے متعلق آرمی ایکٹ میں ترامیم کی مخالفت نہ کرنے بلکہ آرمی ایکٹ میں ترامیم کی غیر مشروط حمایت کرنے کا فیصلہ کر لیا۔
وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدر ی نے کہا ہے کہ پاکستان کا مسئلہ یہ ہے کہ ادارے باہم دست و گریباں ہیں۔ وفاقی وزیر کا سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہمارے تمام ادارے نہ تو تمام معاملات میں قصور وار ہیں

مزید خبریں
گلگت بلتستان میں سردی کی شدت میں اضافے کے باعث درجہ حرارت منفی 20 تک گر گیا۔گلگت بلتستان کے بالائی علاقے خاص کر استور، روندو، کھرمنگ اور سکردوں میں شدید سردی اور، یخ بستہ ہواوں نے لوگوں کی زندگی اجیرن اور زندگی مفلوج کردی ہے۔

مقبول ترین
وزیراعظم, عمران خان, ملائشین وزیراعظم, مہاتیر محمد, اسلامی دنیا, تجربہ کار, حکمران, مسائل,
وزیرِ اعظم عمران خان کی معاونِ خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کہتی ہیں کہ میڈیا پر آٹا سپلائی سے متعلق منفی پروپیگنڈا چل رہا ہے۔
صوبائی وزیر خوراک سمیع اللہ چودھری نے کہا ہے کہ لاہور میں سستا آٹا وافر مقدار میں موجود ہے، آٹے کا مصنوعی بحران پیدا کرنے کی کوشش کی گئی، منافع خوروں کیخلاف کریک ڈاون جاری ہے۔
وزیر اعظم عمران خان نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر بھارت کی جانب سے مستقل اشتعال انگیزی پر عالمی برادری کو خبردار کیا ہے کہ اگر بھارت کی جانب سے حملوں اور نہتے شہریوں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ نہ رکا تو پاکستان کے لیے خاموش رہنا مشکل ہو جائے گا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں