Thursday, 17 October, 2019
چیف جسٹس پنجاب میں صاف پانی کی عدم فراہمی پر برہم

چیف جسٹس پنجاب میں صاف پانی کی عدم فراہمی پر برہم

لاہور۔ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے صوبہ پنجاب میں صاف پانی کی عدم فراہمی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے سوال کیا کہ انتظامیہ صحت اور تعلیم پر کیا اقدامات کر رہی ہے؟

سپریم کورٹ کی لاہور رجسٹری میں پنجاب سمیت پاکستان بھر میں شہریوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے لیے از خود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی یبنچ نے از خود نوٹس کیس کی سماعت کی.

عدالتی حکم پر چیف سیکریٹری پنجاب زاہد سعید عدالت میں پیش ہوئے تھے۔

چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے چیف سیکریٹری پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے استفسار کیا کہ پنجاب حکومت صحت اور تعلیم پر کیا اقدامات کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آپ لوگ صرف خرچ کرتے ہیں اور کچھ نہیں کرتے آگرآپ اچھا اقدام اٹھائیں گے تو اس کو سراہا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ آپ کو معلوم ہے کہ گھروں میں پینے والے پانی میں آرسینک کی مقدار کتنی ہے؟

انہوں نے ہسپتالوں ،کالجز ،اسکولز میں پانی کے معیار سے عدالت کو آگاہ کرنے کی ہدایت جاری کیں جبکہ ریمارکس دیئے کہ نجی کالجز بھاری فیسں وصول کررہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 'چیف سیکریٹری صاحب ہم ایک ھفتہ لاہور میں ہی ہیں، آپ اپنی ساری مصروفیات ختم کرکے ہمارے ساتھ رہیں'۔

انہوں نے کہا کہ عدالت کو بتایا جائے کہ پنجاب حکومت شہریوں کو سہولیات فراہم کرنے کے لیے کیا کر رہی ہے؟

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ ہم نے کراچی میں سہولیات کے لیے بھی اقدامات اٹھانے کی ہدایات دیں، اب پنجاب کی باری ہے۔

انہوں نے چیف سیکریٹری سے کہا کہ آپ ہمارے ساتھ ابھی پی آئی سی چلیں،وہاں دی جانے والی سہولیات کو دیکھتے ہیں۔

بعد ازاں چیف جسٹس پاکستان نے سپریم کورٹ کے جسٹس عمر عطاء بندیال، جسٹس اعجازالاحسن اور چیف سیکرٹری پنجاب کے ہمراہ مئیو ہسپتال کے شعبہ ایمرجنسی کے مختلف حصوں کا دورہ بھی کیا۔

ان کے دورے کے دوران میو ہسپتال کے میڈیکل سپر انٹینڈنٹ (ایم ایس) نے چیف جسٹس پاکستان کو ہسپتال کے حوالے سے بریفنگ دی۔

چیف جسٹس پاکستان کا کہنا تھا کہ مریضوں کو ہر طرح کی سہولیات فراہم کی جائیں۔ ہسپتال میں پینے کے پانی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ مریضوں اور انکے لواحقین کو صاف پانی ملنا چاہیے۔

انہوں نے ایم ایس میو ہسپتال کو ہدایت جاری کیں کہ ہسپتال میں واٹر فلٹر لگائے جائیں۔

سیکرٹری پنجاب کو وارننگ جاری کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ صحت اور تعلیم کے شعبے میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔

میو ہسپتال کے دورے کے دوران انہں نے چیف سیکرٹری پنجاب کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ صاف پانی، صحت اور تعلیم کی بہتری کے لئے جو بھی اقدامات ممکن ہوں کیے جائیں

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ عدلیہ کے نزدیک شہریوں کے جان و مال کا تحفظ بہت اہم ہے، عدلیہ صحت اور تعلیم کے شعبہ کا مسلسل جائزہ لیتی رہے گی۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  90786
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
صوبہ بلوچستان کے سرحدی علاقے چمن میں بم دھماکے سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل مولوی حنیف زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہسپتال میں چل بسے۔ اس ضمن میں اسسٹنٹ کمشنر چمن یاسر دشتی نے جے
اسلام آباد میں نئے عدالتی سال کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس آصف کھوسہ کا کہنا تھا کہ میں نے تقاضا کیا تھا کہ انتظامیہ اور قانون سازعدالتی نظام کی تنظیم نو کے لیے نیا تین تہی نظام متعارف کروائیں لیکن حکومت اور پارلیمنٹ
چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ نے جج ارشد ملک کے وڈیو اسکینڈل پر دائر درخواستوں کی سماعت کے ریمارکس دیئے ہیں کہ آزاد لوگ خود کام کرتے ہیں کسی کے کہنے پر نہیں اور کمیشن بن بھی گیا تو اس کی رائے
چیف جسٹس نے شہری اشتیاق مرزا کی درخواست پر کیس سماعت کے لیے مقرر کیا، درخواست گزار نے ویڈیو لیک معاملے کی مکمل تحقیقات کی استدعا کی تھی۔ درخواست گزار نے کہا کہ جج ارشد ملک نے جو رشوت کی آفر کا الزام لگایا ہے وہ سنجیدہ

مقبول ترین
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پنجاب اور خیبر پختونخوا کے وزرائے اعلیٰ اورتین گورنرز نے شرکت کی۔ حکومت نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کے لیے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے
اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ نوکریاں حکومت نہیں نجی سیکٹر دیتا ہے یہ نہیں کہ ہر شخص سرکاری نوکر ی ڈھونڈے ، حکومت تو 400 محکمے ختم کررہی ہے مگرلوگوں کا اس بات پر زور ہے کہ حکومت نوکریاں دے۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خطے میں امن اور استحکام کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ایرانی صدر سے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ پاکستان اور
اسلام آباد میں وزیراعظم آفس کے سامنے مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کیخلاف انسانی زنجیر بنائی گئی۔ وزیراعظم عمران خان نے بھی اس تقریب میں شرکت کی اور قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں