Wednesday, 21 August, 2019
سول ملٹری تعلقات: ملکی ترقی میں آکسیجن کی مانند ہے، احسن اقبال

سول ملٹری تعلقات: ملکی ترقی میں آکسیجن کی مانند ہے، احسن اقبال

اسلام آباد ۔ ایبٹ آباد ۔ وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ سول ملٹری تعلقات کی ہم آہنگی ملکی ترقی و استحکام کے لیے آکسیجن کی حیثیت رکھتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سول ملٹری تعلقات میں ہم آہنگی ملکی ترقی و استحکام میں اتنی ہی اہم ہے جتنی انسانی جسم میں آکسیجن ضروری ہے۔

سینیٹ کے اجلاس میں وفقہ سوالات کے دوران وزیر داخلہ احسن اقبال کی جانب سے جمع کرائے جانے والے تحریری جواب میں کہا گیا کہ آرمی چیف کی سینیٹ کو دی جانے والی بریفنگ بہت اچھا شگون ہے۔

احسن اقبال نے کہا کہ کہا دہشت گردی کا جن ابھی پوری طرح بوتل میں بند نہیں ہوا، فیض آباد کا دھرنا ایک ڈراؤنا خواب تھا جس سے ملک بغیر کسی نقصان کے نکل آیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم کوشش کررہے ہیں کہ سول ملٹری قیادت کے تعاون سے ملک میں امن و استحکام کو یقینی بنائیں۔

پاکستان تحریک انصاف پر تنقید کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ جب سے تحریک انصاف نے سیاست میں قدم رکھے ہیں تب سے انصاف کی منزل دور ہوگئی ہے اور ایسے فیصلے آرہے ہیں جن سے تنازعات کھڑے ہورہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’’ملک کے آئینی و قانونی ماہرین یہ تبصرے کررہے ہیں کہ جو فیصلے ہورہے ہیں ان میں انصاف کے ترازو مختلف نظر آرہے ہیں، یہ افسوس ناک بات ہے‘‘۔

اس سے قبل وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ پاکستان میں تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں دھرنوں کی سیاست کو فروغ نہ دیں، دھرنوں سے ملک کمزور ہوتا ہے۔

وزیر داخلہ نے حویلیاں کے مقام پر ہزارہ موٹروے کے معائنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں دنیا کا مقابلہ کرنے کے لئے اپنی معیشت مضبوط کرنی ہے، نواز شریف تمام لوگوں کو برابری کی سطح پر انصاف کی فراہمی کی تحریک چلا رہے ہیں۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ مولانا طاہر القادری اور عمران خان کو دھرنوں کی سیاست ختم کر دینی چاہئے، سی پیک منصوبے کی تکمیل سے پاکستان کی کروڑوں عوام کی تقدیر بدل جائے گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کرسکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  5411
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
پاکستان، آزاد کشمیر اور دنیا بھر میں بھارت کا یوم آزادی آج یوم سیاہ کے طور پر منایا گیا۔ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے اور وادی میں قابض فوج کے مظالم کے خلاف پاکستان نے فیصلہ کیا تھا کہ 15 اگست
فواد چوہدری نے اپنے ایک بیان میں اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ ان کی سابقہ وزارت میں غیر منتخب افراد نے مداخلت کی، ایک وقت میں 5 لوگ کام کریں تو وہی ہو گاجو ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فیصلے منتخب لوگوں کو کرنے چاہئیں ناکہ غیر منتخب افراد کو، وزارتیں
اپوزیشن کے واک آؤٹ کے دوران عبدالقادر بلوچ نے کہا کہ فاٹا بل پر تھوڑا موقع اور دیا جائے، اپوزیشن نے صرف فاٹا پر ایک نکتہ ذہن میں رکھا ہوا ہے، فاٹا بل میں مزید تاخیر نہیں کریں گے۔
اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی کا کہنا ہے کہ عالمی برادری تنازعات کے حل کی بجائے تماشا دیکھ رہی ہے جب کہ بیرونی قبضے، سیاسی و معاشی نا انصافیوں، غربت کے خاتمہ کی ضرورت ہے۔

مقبول ترین
پاک فوج نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ اور سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیوں کا منہ توڑ جواب دیا جس کے نتیجے میں ایک افسر سمیت 6 بھارتی فوجی ہلاک اور 2 بنکرز تباہ ہوگئے۔
پاکستان نے مسئلہ کشمیر کو عالمی عدالت انصاف میں لے جانے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے۔ میڈیا کے مطابق آئندہ ماہ جنیوا میں انسانی حقوق کمیشن اجلاس بلانے کیلئے وزارت خارجہ نے تیاری شروع کر دی ہے اور اس سلسلے میں سابق سیکرٹری
وزیراعظم عمران خان نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں 3 سال کی توسیع کردی۔ وزیراعظم آفس کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے عہدے کی موجودہ مدت مکمل ہونے کے بعد انہیں مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر
بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آرٹیکل 370 ختم کیے جانے کے بعد سے وزیراعظم عمران خان نے شدید تشویش کا اظہار کیا تھا اور وہ کشمیر کے معاملے پر بین الاقوامی برادری سے مسلسل رابطے میں ہیں۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں