Wednesday, 20 November, 2019
’’آزادی مارچ، حکومت کا مشروط اجازت دینے کا فیصلہ‘‘

’’آزادی مارچ، حکومت کا مشروط اجازت دینے کا فیصلہ‘‘
فائل فوٹو

اسلام آباد ۔ حکومت نے اپوزیشن کو آزادی مارچ کی مشروط اجازت دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آئین اور قانون کے دائرے میں رہ کر احتجاج کے حق کو تسلیم کرتے ہیں۔ اسلام آباد میں احتجاج سے متعلق عدالتی فیصلوں کی روشنی میں اپوزیشن کو مارچ کی اجازت دی جائے گی۔

میڈیا کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت اہم اجلاس ہوا جس میں جے یو آئی (ف) کے مارچ اور ممکنہ دھرنے سے متعلق غور کیا گیا۔ مذاکراتی کمیٹی کے سربراہ پرویز خٹک نے اپوزیشن جماعتوں کیساتھ رابطوں سے وزیراعظم کو آگاہ کیا۔ پرویز خٹک نے کہا کہ کوشش میں ہیں کہ 27 اکتوبر سے پہلے اپوزیشن کو مذاکرات پر آمادہ کر لیں۔

وزیراعظم عمران خان نے مذاکراتی کمیٹی کو اپوزیشن سے مذاکرات کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ آئین کے اندر رہتے ہوئے احتجاج اپوزیشن کا حق ہے۔ وفاقی دارالحکومت میں احتجاج سے متعلق عدالتوں کے فیصلے موجود ہیں، ان کی روشنی میں اپوزیشن کو احتجاج کی اجازت دی جائے لیکن کسی کو سڑکیں بند نہ کرنے دی جائیں۔ وزارت داخلہ عدالتی فیصلوں کے مطابق پرامن احتجاج یقینی بنانے کے لیے حکمت عملی طے کرے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  88036
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
وفاقی حکومت نے پیپلز پارٹی اور (ن) کے ادوار میں سابق حکمرانوں کی جانب سے سرکاری خزانے سے خرچ کیے گئے اربوں روپے وصول کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ میڈیا کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں سابق سربراہان مملکت کے کیمپ آفسز، سیکیورٹی
ٹوئٹر پر ایک بیان میں مریم نواز نے لکھا کہ "اللہ کا شکر۔۔۔مگر معاملہ کسی جج کو معطل کئے جانے کا نہیں۔ اس فیصلے کو معطل کرنے کا ہے جو اس جج نے دیا۔۔۔معاملہ کسی جج کو عہدے سے نکالنے کا نہیں۔ اس فیصلے کو عدالتی ریکارڈ سے نکالنے
لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ 'عمران خان نے بار بار کہا کہ ان کی آف شور کمپنی ہے مگر انہیں جانے دیا گیا جس سے پتا چلتا ہے کہ ہمارے لیے اور عمران خان کے لیے فیصلے اور طرح کے ہیں'۔
پی ٹی آئی رہنما فیصل جاویدخان نے سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے علی موسی گیلانی پر محافظوں کے ذریعے فائرنگ کا الزام لگایا تھااور ان پر مقدمہ درج کرانے کا اعلان کیا تھا۔

مقبول ترین
سابق وزیراعظم کو گاڑی کے ذریعے جاتی امرا سے لاہور ایئر پورٹ کے حج ٹرمینل پہنچایا گیا، ایئر پورٹ پر کارکنان کی بڑی تعداد حج ٹرمینل کے باہر موجود تھی جنہوں نے نواز شریف کے حق میں نعرے بازی کی، نواز شریف کی گاڑی کے ساتھ
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ عدلیہ طاقتور اور کمزور کےلیے الگ قانون کا تاثر ختم کرے۔ ہزارہ موٹروے فیز 2 منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پچھلے دنوں کنٹینر
لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالتے کا حکم دیتے ہوئے انہیں 4 ہفتے کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت دیدی جبکہ عدالت کی طرف سے کوئی گارنٹی نہیں مانگی گئی۔
وفاقی دارالحکومت اسلام آباداور کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں جمعیت علماء اسلام (ف) کے کارکنوں نے دھرنے دے کر سڑکیں بلاک کردیں۔ مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ کے ’پلان بی‘ کے تحت ملک بھر میں دھرنوں کا سلسلہ

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں