Saturday, 31 July, 2021
”قومی اسمبلی: حرمت حضرت فاطمہؑ، قرارداد متفقہ منظور“

”قومی اسمبلی: حرمت حضرت فاطمہؑ، قرارداد متفقہ منظور“

اسلام آباد ۔ قومی اسمبلی میں پیپلز پارٹی کی رکن شگفتہ جمانی کی جانب سے پیش کی جانے والی قرار داد کوحکومت و اپوزیشن ارکان نے حرمت حضرت فاطمتہ الزہرا سلام اللہ علیہا کے حوالے سے حرمت سیدہ کائنات پر یک ذبان، متفقہ قرارداد منظورکرتے ہوئے دختر دسول، زوجہ علی المرتضی، مادر حسینین کریمین کی حرمت پر جان قربان، گستاخی کرنیوالے مذہبی سکالر کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیاہے  ۔

قرارداد پیش کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کی رکن شگفتہ جمانی کا کہنا تھا کہ وزیر پارلیمانی امور اور وزیر مذہبی امور سمیت حکومت و اپوزیشن کی شکر گزار ہوں جنہوں نے بھرپور حمایت کی یہ معزز ایوان بارگاہ اُم السادات ،مخدوم کائنات ، دختر مصطفی کاتم النبین ، بانوئے مرتضیٰ،اُم الحسنین کریمین ، سیدہ طیبہ ، طاہرہ، راضیہ مرضیہ ، عابدہ ، زاہدہ ، محدثہ، معظم مبارکہ ، ذکیہ سیدة النساءسیدہ فاطمہ البتول الزہرہ سلام اللہ علیہاکی بارگاہ عالی مرتبت میں کروڑ ہا بار ھدیہ سلام عقیدت پیش کرتی ہوں ۔

 قرار داد کے مطابق حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اکرم نے فرمایا کہ ایک فرشتہ جو اس رات سے پہلے کبھی زمین پر نہ اترا تھا اس نے اپنے پروردگارسے اجازت مانگی کے مجھے سلام کرنے حاضر ہونا ہے اور یہ خوشخبری دی کہ فاطمہ سلام اللہ علیہا ایل جنت کی تمام عورتوں کی سردار ہیں اور امام حسن ؑ اور امام حسین ؑ جنت کے تمام نوجوانوں کے سردار ہیں ، حضرت مسور بن محترمہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اکرم نے فرمایا فاطمہ ؑ میری جان کا حصہ ہے پس جس نے اسے ناراض کیا اس نے مجھے ناراض کیا ۔

حضرت عبداللہ بن زبیر رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں رسول اکرم نے فرمایا بے شک فاطمہ ؑ سلام اللہ علیہا میری جان کا حصہ ہے اُسے تکلیف دینے والی چیز مجھے تکلیف دیتی ہے اور اسے مشقت میں ڈالنی والا مجھے مشقت میں ڈالتا ہے ۔ حضرت ابو حنظلہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اکرم نے فرمایا کہ بے شک فاطمہؑ سلام اللہ علیہا میری جان کا حصہ ہے جس نے اسے ستایا اس نے مجھے ستایا ۔

ایک مشہور حدیث جو حدیث کسا کے نام سے مشہور ہے کے مطابق حضرت رسول اکرم نے ایک یمنی چادر کے نیچے حضرت فاطمہ ، حضرت امام علی ؑ، حضرت امام حسن ؑ اور حضرت امام حسین ؑ کو اکھٹا کیا اور فرمایا کہ بے شک اللہ تعالیٰ چاہتا ہے کہ اے میرے اہلبیتؑ تجھ سےرجس کو دور کرے اور ایسا پاک کرے جیسے پاک کر نے کا حق ہے ۔

سیدہ طاہرہ، ام ابیہا کے حوالے سے ایک مذہبی سکالر نے سوشل میڈیا پر توہین کی ہے جس کی یہ ایوان نہ صرف مذمت کرتا ہے اور اس سے پوری امت کی دل آزاری تصور کر تاہے ۔صحابہ کرام ؓ، اہلبیت ؑاطہار ،اذواج مطہرات رضوان اللہ علیہا، اور برگزیدہ ہستیوں کی بارگاہ میں اشارہ ،کنایةً، تحریراً، تقریر یا کسی بھی انداز میں بے ادبی و گستاخی قابل مذمت اور ناقابل قبول ہے ۔

اراکین اسمبلی نے اسے اسلامی تعلیمات کے منافی ، قومی بیانیہ پیغام پاکستان کے متفقہ اعلامیہ و فتوی کے خلاف ورزی کا سنگین جرم قرار دیتے ہوئے اس امر کا مطالبہ کر تا ہے کہ حکومتی سطح پر اقدامات اٹھائے جا نا ناگزیر ہیں اس کے لئے موجودہ قوانین پر عملدرآمد کے ساتھ ساتھ ان قوانین میں ترامیم لا کر انہیں مزید سخت اور موثر کر نے کی ضرورت ہے ۔تاکہ توہین و اہانت کا دروازہ مکمل طور پربند ہو سکے۔

مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی سید عمران علی شاہ حضرت فاطمہ ؑ کاذکر کرتے ہوئے ایوان میں آبدیدہ ہوگئے انہوں نے سپیکر اسمبلی سے حضرت فاطمہؑ کی توہین کرنے والے مولوی اشرف جلالی کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کردیا۔ انہوں نے کہا ہم علماے کرام کا احترام کرتے ہیں مگر آصف اشرف جلالی نامی مولوی نے خاتون جنت پر تنقید کی اورغلط الفاظ بولے میری جناب سپیکر آپ سے گزارش ہے کہ اس کے خلاف کارروائی کریں۔

 قرآن پاک میں اللہ اپنے نبی حضرت محمد سے فرماتا ہے کہ اے نبی کہہ دیجیے میں اپنی نبوت کا اجرتم سے نہیں مانگتا سوائے اس کے میرے قرابت داروں سے محبت کرو ،میں کہتا ہوں علی محمد خان اورپیر نور الحق قادری اس معاملے کو دیکھیں اور اس مولوی کو کہیں کہ وہ اللہ سے رجوع کرے۔ وزیر مملکت شہر یا ر آفریدی نے کہایہ ہماراا یمانی واخلاقی فرض ہے ہر وہ سو چ جو ان کی نفی کاسوچے اس کو عبرت کا نشان بنایا جائے۔

سیدہ کی حرمت پر ہماری جان بھی قربان ، اشرف جلالی کے خلاف کارروائی کی جائے، غلام محمد لالی نے سپیکر سے رولنگ کا مطالبہ کیا جبکہ چیئرمین کشمیر کمیٹی شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ آل رسول کی حرمت پر کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا ۔قرار داد ایوان میں پیش کی گئی تو اسے متفقہ طور پر منظور کرلیا گیا۔

سیدہ طاہرہ، ام ابیہا کے حوالے سے ایک مذہبی سکالر نے سوشل میڈیا پر توہین کی ہے جس کی یہ ایوان نہ صرف مذمت کرتا ہے بلکہ آئین پاکستان اور نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائی کا مطالبہ کرتا ہے،حضور اکرم خاتم النبیین، اہلبیت علیہ السّلام، صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین اور بزرگان کا احترام لازم ہے ۔قرارداد کی منظوری کے بعد پینل آف چیئر امجد خان نیازی نے پورے ایوان کو مبارک باد پیش کی-

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

 

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  94615
کوڈ
 
   
مقبول ترین
- وزیراعظم عمران خان نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ افغانستان کے معاملے پر پاکستان پر بہت بڑا پریشر آئے گا، ہم دباؤ میں آنے کے بجائے عوام کی بہتری کے لیے فیصلے کریں گے۔ وزیراعظم نے یہ بات اسلام آباد میں اپنے زیر صدارت حکومتی رہنماؤں کے ایک اہم اجلاس سے خطاب میں کہی۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جب لاکھوں امریکی و نیٹو فوجی افغانستان میں تھے تب طالبان سے مذاکرات کرنے چاہیے تھے اب جب طالبان کو افغانستان میں فتح نظر آرہی ہے تو وہ ہماری بات کیوں سنیں گے۔ تاشقند میں وسطی اور جنوبی ایشیا رابطہ ممالک کی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے
افغانستان میں قیام امن اور خطے میں تجارتی تعلقات کے فروغ کے لیے پاکستان، امریکا، افغانستان اور ازبکستان پر مشتمل سفارتی پلیٹ فارم قائم کردیا گیا۔ امریکی دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق سفارتی پلیٹ فارم کا قیام تاشقند میں جاری سنٹرل اینڈ ساؤتھ ایشیا کانفرنس کے موقع پر عمل میں آیا۔
کروڑوں دلوں پر راج کرنے والے برصغیرکے مایہ ناز اداکار اوربالی ووڈ کے شہنشاہ جذبات اداکار دلیپ کمار 98 برس کی عمر میں انتقال کر گئے، انہوں نے 65 سے زائد فلموں میں لازوال کردار نبھائے۔ ایک اور عہد تمام، یوسف خان عرف دلیپ کمار خالق حقیقی سے جا ملے، وہ طویل عرصے سے ممبئی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں