Wednesday, 20 November, 2019
شاہ زیب قتل کیس، تمام مجرموں کی سزائیں کالعدم قرار

شاہ زیب قتل کیس، تمام مجرموں کی سزائیں کالعدم قرار

کراچی ۔ سندھ ہائی کورٹ نے شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی اور اس کے دیگر ساتھیوں کی سزائے موت کالعدم قرار دیتے ہوئے اور مقدمے سے دہشت گردی کی دفعات ختم کرتے ہوئے مقدمہ ازسرِنو سماعت کے لئے سیشن عدالت میں بھیج دیا ہے۔ شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی اور اس کے دیگر ساتھیوں نے اپنی سزا کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔

تفصیلات کےمطابق کراچی کے علاقے ڈیفنس میں چارسال قبل قتل ہونے والے طالبعلم شاہ زیب قتل کیس میں نیا موڑ سامنے آگیاہے،سندھ ہائی کورٹ نے شاہ رخ جتوئی، سراج تالپر، سجاد تالپر اور غلام مرتضی کی سزا کالعدم قرار دیتے ہوئے مقدمے کی ازسرنو سماعت کے لیے معاملہ سیشن عدالت بھیج دیا ہے۔

سندھ ہائی کورٹ میں سزائے موت کے خلاف دائر کی گئی درخواست میں شاہ رخ جتوئی کے وکیل ایڈووکیٹ فاروق ایچ نائک نے دلائل پیش کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ ان کے موکل جرم کے وقت نابالغ تھے، جس کی بنا پر ان پر انسداد دہشت گردی کا قانون لاگو نہیں ہوتا، انھوں نے عدالت سے استدعا کی کہ کیس کی دوبارہ سماعت ایک ملزم کی حیثیت سے عام عدالت میں کی جائے کیونکہ شاہ رخ جتوئی جرم کے وقت بالغ نہیں تھا۔ سزا کے وقت شاہ رخ جتوی کی عمر 18 سال سے کم تھی اوریہ مقدمہ بچوں کے مقدمات کے ضمرے میں آتاتھا۔ مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کی عمر 18 سال سے کم ہونے کی بنا پر ان کا مقدمہ جیو نائل قانون کے تحت چلایا جانا چاہیے تھا جبکہ ان کا مقدمہ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سنا گیا، جو غیر قانونی تھا۔ انسداد دہشت گردی عدالت نے قانونی تقاضے پورے کئے بغیر شاہ رخ جتوئی اور اس کے ساتھیوں کو سزا سنائی۔

جب کہ کیس کے تفتیشی افسر نے شاہ رخ جتوئی کا جو پیدائشی سرٹیفکیٹ پیش کیا تھا اس پر بھی والد کا غلط نام درج تھا، یہ جھگڑا بھی ذاتی نوعیت کا تھا اس لئے اس کا ٹرائل انسداد دہشت گردی عدالت میں تو بنتا ہی نہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ فریقین کے درمیان صلح نامہ بھی طے پا گیا تھا جس کی پیروی درخواست بھی عدالت میں جمع کرائی جاچکی ہے، انہوں نے بتایا کہ اس صلح نامے کے مطابق مقتول کے اہل خانہ نے تمام ملزمان کو معاف کردیا تھا۔

پراسیکیوٹر جنرل سندھ شہادت اعوان نے کہا کے مقتول شاہ زیب اور شاہ رخ کی فیملی کے ساتھ صلح ہوچکی ہے، اور صلح نامے کی درخواست ہائیکورٹ میں دائر کی گئی تھی ۔

پراسیکیوٹر جنرل سندھ نے کہا کے ہائیکورٹ نے 29 ستمبر2014 کو صلح نامے کی تصدیق کے لیے معاملہ اے ٹی سی بھیجا تھا، جس کی تصدیق پر تاحال نیا حکم سامنے نہیں آیا، معاملہ زیر التوا ہے۔ ہائی پروفائل کیس میں فریقین کے درمیان صلح ہونے پر جسٹس صلاح الدین پنہور نے حیرت کا اظہار کیا۔ جسٹس صلاح الدین نے کہا کے شاہ زیب قتل کیس میں دہشت گردی کی دفعات درج ہیں، فریقین کے درمیان صلح کیسے ہوسکتی ہے۔

شاہ رخ جتوئی کے وکیل نے تجویز دی کہ پہلے اے ٹی سی ٹرائل کے دائرہ کار پر بحث کرلی جائے بعد میں صلح نامہ دیکھا جائے۔ جسٹس صلاح الدین پنہور نے کہا کے مقدمہ اے ٹی سی کے دائرہ اختیار پر کارروائی کے لیے واپس ٹرائل کورٹ بھیجا جا سکتا ہے، فریقین کے درمیان صلح نامے کے معاملے کو بعد میں دیکھا جائے گا۔ حق نواز تالپر ایڈووکیٹ نے کہا کے شاہ زیب کا قتل ایک سادہ سا قتل کیس تھا اس کا ٹرائل سیشن عدالت میں ہونا چاہیے تھا۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد شاہ رخ جتوئی، سراج تالپور، سجاد تالپور اور غلام مرتضیٰ کی سزا کالعدم قرار دے دی اور مقدمے سے دہشت گردی کی دفعات ختم کرتے ہوئے مقدمہ ازسرِنو سماعت کے لئے سیشن عدالت میں بھیج دیا ہے۔

شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی اور اس کے دیگر ساتھیوں نے اپنی سزا کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔ 

واضح رہے کہ سکندر جتوئی کے بیٹے شاہ رخ جتوئی اور ان کے دوست نواب سراج علی تالپور سمیت دیگر 2 ملزمان کو ڈی ایس پی اورنگزیب کے 20 سالہ بیٹے شاہ زیب کے قتل کے جرم میں 7 جون 2013 کو سزائے موت سنائی گئی تھی، شاہ زیب کو 25 دسمبر 2012 کو ڈیفنس میں ان کی رہائش گاہ کے قریب قتل کیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  28284
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
وفاقی دارالحکومت اسلام آباداور کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں جمعیت علماء اسلام (ف) کے کارکنوں نے دھرنے دے کر سڑکیں بلاک کردیں۔ مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ کے ’پلان بی‘ کے تحت ملک بھر میں دھرنوں کا سلسلہ
صوبہ بلوچستان کے سرحدی علاقے چمن میں بم دھماکے سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل مولوی حنیف زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہسپتال میں چل بسے۔ اس ضمن میں اسسٹنٹ کمشنر چمن یاسر دشتی نے جے
لاہور اور پشاور سمیت مختلف شہروں میں تاجروں نے کاروبار جزوی طور پر بند کررکھے ہیں اور مطالبات پورے ہونے تک ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ سینیئر نائب صدر انجمن تاجران سندھ نے آج صوبے بھر میں شٹرڈاؤن ہڑتال کا اعلان کرتے
فیصل آباد میں تقریب سے خطاب کے موقع پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ایف بی آر میں ایک سے 15 گریڈ تک تبادلے ہوئے ہیں، جو معمول کے مطابق ہیں، نیا ایف بی آر ضرور بنے گا لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ کوئی نئے لوگ

مقبول ترین
سابق وزیراعظم کو گاڑی کے ذریعے جاتی امرا سے لاہور ایئر پورٹ کے حج ٹرمینل پہنچایا گیا، ایئر پورٹ پر کارکنان کی بڑی تعداد حج ٹرمینل کے باہر موجود تھی جنہوں نے نواز شریف کے حق میں نعرے بازی کی، نواز شریف کی گاڑی کے ساتھ
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ عدلیہ طاقتور اور کمزور کےلیے الگ قانون کا تاثر ختم کرے۔ ہزارہ موٹروے فیز 2 منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پچھلے دنوں کنٹینر
لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالتے کا حکم دیتے ہوئے انہیں 4 ہفتے کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت دیدی جبکہ عدالت کی طرف سے کوئی گارنٹی نہیں مانگی گئی۔
وفاقی دارالحکومت اسلام آباداور کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں جمعیت علماء اسلام (ف) کے کارکنوں نے دھرنے دے کر سڑکیں بلاک کردیں۔ مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ کے ’پلان بی‘ کے تحت ملک بھر میں دھرنوں کا سلسلہ

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں