Wednesday, 14 November, 2018
عاصمہ جہانگیر کا انتقال
 

پاکستان کی ممتاز وکیل اور انسانی حقوق کی سرگرم کارکن حقوقِ انسانی کی علمبردار اور سکیورٹی اداروں کی ناقد عاصمہ جہانگیر 11 فروری کو لاہور میں 66 برس کی عمر میں انتقال کر گئیں ہیں۔ انکی زندگی پر مختصر نظر

  • عاصمہ جہانگیرکا انتقال عاصمہ جہانگیرکا انتقال


تصاویر
یوم دفاع و شہداء کا دن
جشنِ آزادی کی تیاریاں
عیدِ قرباں کیلئے مویشی منڈی
فلسطینیوں کے احتجاج پر اسرائیلی بربریت
مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے ریاستی مظالم
یوم پاکستان پرمسلح افواج کی شاندار پریڈ
وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا دورۂ نیپال
اداکارہ سری دیوی کی آخری رسومات
عاصمہ جہانگیر کا انتقال
’’کشمیر بنے گا پاکستان‘‘
دنیا میں نئے سال کا شاندار استقبال
’’کوئٹہ میں چرچ پر خودکش حملہ‘‘
’’جشنِ عید میلاد النبیﷺ‘‘
اسلام آباد میں دھرنا: آپریشن اور جھڑپیں
شہید میجراسحاق کا سفر آخرت
ایران اورعراق میں 7.3 شدت کا زلزلہ
مقبول ترین
خیبر پختون خوا پولیس کے اعلیٰ افسر ایس پی طاہر داوڑ کا جسد خاکی افغانستان نے پاکستان کے حوالے کردیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شہید ایس پی طاہر داوڑ کا جسد خاکی جلال آباد میں پاکستان قونصل خانے کے اعلیٰ عہداروں کے حوالے کر دیا گیا ہے
سابق وزیراعظم نواز شریف نے العزیزیہ ریفرنس میں صفائی کا بیان قلمبند کرانا شروع کر دیا۔ پہلے روز 50 عدالتی سوالات میں سے 45 کے جواب ریکارڈ کرا دیئے۔ باقی سوالات پر وکیل خواجہ حارث سے مشاورت کے لیے وقت مانگ لیا۔
فلسطین میں قابض اسرائیلی فوج کے معاملے پر اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا بند کمرا اجلاس بے نتیجہ ختم ہوگیا۔ میڈیا کے مطابق غزہ میں قابض اسرائیلی فوج نے ظلم وبربریت کی انتہا کررکھی ہے، آئے دن نہتے فلسطینیوں کو فائرنگ کرکے موت کے گھاٹ
چند روز قبل اسلام آباد سے اغوا ہونے والے خیبر پختونخوا پولیس کے ایس پی طاہر خان داوڑ کو مبینہ طور پر افغانستان میں قتل کر دیا گیا۔ خیبر پختونخوا پولیس کے ایس پی طاہر خان داوڑ 27 اکتوبر کو اسلام آباد سے لاپتہ ہوئے تھے۔

براہ راست نشریات
اسلام آباد ۔ اللہ کریم نے عورت کو ماں ، بہن ، بیٹی ، بیوی ہر روپ میں عزت و تکریم عطا کی ہے تاہم آج ہم دیکھتے ہیں کہ ہمارے معاشرے میں خاتون کو وہ مقام حاصل نہیں ہے جو اللہ اور اس کے نبی نے دیا ۔ اس کی وجہ جہاں مرد ہے خود عورت بھی اس کی ذمہ دار ہے
ہماری بد قسمتی کہ پچھلے کئی سالوں سے ملک میں پھیلی دہشتگردی کی لہر نے نہ صرف قوم کے جریں سپوتوں کے سروں کے ساتھ فٹ بال کھیلے بلکہ کئی اہل علم بھی اس کی بھلی چڑھ گئے اور نجانے کتنی مزید جانیں درکار ہوں گی ان خون کے پیاسوں کو مگر
جمعیت علمائے اسلام(سمیع الحق) کے سربراہ مولانا سمیع الحق 1937 میں اکوڑہ خٹک میں پیدا ہوئے اور دارالعلوم حقانیہ سے تعلیم حاصل کی جس کی بنیاد ان کے والد مولانا عبدالحق نے رکھی تھی۔

عدالتوں سے نااہل شخص کو پارٹی صدر بنانے کا فیصلہ کیسا ہے؟
نتائج ملاحظہ کریں
پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں