Sunday, 20 October, 2019
'لوگ کیاکہیں گے' :کامران احمدکے ناول کی تقریبِ رونمائی

'لوگ کیاکہیں گے' :کامران احمدکے ناول کی تقریبِ رونمائی

 

ایڈیشنل کمشنرکوارڈینیشن راولپنڈی طارق محمودطارق نے کہا ہے کہ تحریروں کے ذریعے سماجی مسائل کی عکاسی کرنا کمالِ فن ہے۔انھوں نے یہ بات راولپنڈی آرٹس کونسل کے زیراہتمام ادبی بیٹھک میں منعقدہ نوجوان ناول نگارکامران احمدکے ناول 'لوگ کیاکہیں گے' کی تقریبِ رونمائی کے موقع پربطورمہمانِ خصوصی کہی ۔

ملک کے معروف دانشوراورمصنف حمیدشاہدنے تقریب کی صدارت کی۔ پروفیسرڈاکٹرروش ندیم مہمانِ اعزازتھے۔

ایڈیشنل کمشنر طارق محمودطارق نے کہا کہ ایک مصنف معاشرے کا عکاس ہوتا ہے اوراپنے حساس پن کی وجہ سے تمام چیزیں کومحسوس کرتا ہے۔ کامران احمدکے ناول میںبھی یہی کچھ دیکھنے کوملا ہے اور 'لوگ کیا کہیں گے 'ہمارے معاشرے کا المیہ اورتلخ حقیقت ہے۔

معروف افسانہ نگارحمیدشاہدنے کہا کہ نوجوان ناول نگارکامران احمدنے معاشرے کو جس نظرسے دیکھا ہے کم لوگ اس کی صلاحیت رکھتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ ناول نگاری کی دنیامیں ان کا پہلا قدم بہت موثرثابت ہواہے اورمستقبل میں یہ نوجوان کامیابی کے جھنڈے گاڑھے گا۔
پروفیسرڈاکٹرروش ندیم نے کہا کہ کامران احمدنے معاشرے کی ترجمانی کرتے ہوئے ناول کا نام 'لوگ کیا کہیں گے'رکھا جومعاشرے کی عکاسی کرتا ہے۔

سینئرشاعرنسیمِ سحرنے بھی کامران احمدکے ناول پرسیرحاصل گفتگوکی۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  72810
کوڈ
 
   
مقبول ترین
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ یہ پہلی اسمبلی ہے جو’ڈیزل‘ کے بغیر چل رہی ہے اگر فضل الرحمان کے لوگ میرٹ پر ہوئے تو انہیں بھی قرضے دیے جائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے نوجوانوں کے لیے ’کامیاب جوان پروگرام‘ کا افتتاح کردیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پنجاب اور خیبر پختونخوا کے وزرائے اعلیٰ اورتین گورنرز نے شرکت کی۔ حکومت نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کے لیے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے
اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ نوکریاں حکومت نہیں نجی سیکٹر دیتا ہے یہ نہیں کہ ہر شخص سرکاری نوکر ی ڈھونڈے ، حکومت تو 400 محکمے ختم کررہی ہے مگرلوگوں کا اس بات پر زور ہے کہ حکومت نوکریاں دے۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خطے میں امن اور استحکام کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ایرانی صدر سے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ پاکستان اور

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں