Wednesday, 29 January, 2020
ایک چراغ اور بجھا: فاطمہ ثریا بجیا انتقال کر گئیں

ایک چراغ اور بجھا: فاطمہ ثریا بجیا انتقال کر گئیں

کراچی ۔ پاکستان کی معروف ادیبہ اور ڈرامہ نگار فاطمہ ثریا بجیا 85 سال کی عمر میں کراچی انتقال کر گئی ہیں۔ ان کے بھائی انور مقصود کا کہنا تھا کہ فاطمہ ثریا بجیا کافی عرصے سے علیل تھیں۔ ان کے انتقال پر پورا خاندان دکھ اور صدمے کا شکار ہے۔ فاطمہ ثریا بجیا کی تدفین کل کی جائے گی۔ 

فاطمہ ثریا بجیا ادبی دنیا کی معروف شخصیت تھیں۔ ان کا خاندان بھی ادبی دنیا میں ایک نمایاں مقام رکھتا ہے۔ 

یکم ستمبر 1930 کو ضلع کرناٹک میں پیدا ہونے والی فاطمہ ثریا بجیا مقبول ترین ڈرامہ رائٹر تھیں، ان کے لکھے گھریلو ڈرامے ہر دور میں سب کی پسند رہے ہیں۔

معروف میزبان اور ادیب انور مقصود ان کے بھائی جبکہ زبیدہ آپا اور شاعرہ زہرہ نگار ان کی چھوٹی بہنیں ہیں۔

فاطمہ ثریا بجیا نے ٹیلی وژن کے علاوہ ریڈیو اور سٹیج کیلئے بھی کام کیا۔ فاطمہ ثریا بجیا یکم ستمبر 1930ء کو بھارتی شہر حیدر آباد کے ضلع کرناٹک میں پیدا ہوئیں۔ ان کو 1997ء میں حکومت پاکستان کی طرف سے تمغہ حسن کارکردگی سے نوازا گیا۔ اس کے علاوہ انہیں کئی قومی اور بین الاقوامی اعزازات سے بھی نوازا گیا جن میں جاپان کا اعلیٰ سول ایوارڈ بھی شامل ہے۔ 2012ء میں ان کو صدر پاکستان کی طرف سے ہلال امتیاز سے نوازہ گیا۔

فاطمہ ثریا بجیا نے باقاعدہ تعلیم حاصل کئے بغیر ہی ادب کو کچھ یوں نئی جہتوں سے روشناس کرایا کہ عالم کہلائیں۔ پاکستان ٹیلی ویژن کی ڈرامہ تاریخ ان کے بغیر ادھوری ہے۔ بجیا نے شمع، عروسہ، افشاں اور زینت کے ذریعے اپنا آپ منوایا۔ انا سے لیکر آگاہی تک ان کی تمام تصانیف نے بھی خوب پذیرائی سمیٹی۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  26698
کوڈ
 
   
مقبول ترین
عرب میڈیا کے مطابق سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی صدر کی جانب سے مشرق وسطیٰ میں اسرائیل اور فلسطین کے درمیان تنازع کے خاتمے کے لیے امن منصوبہ ’ ڈیل آف سینچری‘ پیش کرنے اور فریقین کے درمیان امریکی سرپرستی میں
فلسطین کے صدر محمود عباس نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشرق وسطیٰ کے امن منصوبے کو ’’صدی کا تھپڑ‘‘ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا برطانوی خبررساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر کے اعلان کے بعد سے غزہ
دفتر خارجہ نے ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کے حالیہ متشدد بیانات کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس کا نوٹس لے۔ دفتر خارجہ کی جانب سے جاری اہم بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی انتہا پسند بیانیہ
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ جسے امن منصوبے کا نام دے رہے ہیں وہ دراصل” امن کے خلاف جنگ“ (War Against Peace )ہے ۔اسے عالمی قوانین کی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں