Sunday, 20 September, 2020
بیروت میں فلسطین سے متعلق کانفرنس منعقد کرنے کا اعلان

بیروت میں فلسطین سے متعلق کانفرنس منعقد کرنے کا اعلان
فائل فوٹو

بیروت - لبنان : مسئلہ فلسطین سے متعلق علمائے مقاومت کی عالمی فلسطین کانفرنس بعنوان ’’الوعد الحق ‘‘ یعنی سچا وعدہ کے عنوان سے لبنانی دارلحکومت بیروت میں یکم اور دو نومبر کو منعقد ہو گی۔ 

عالمی فلسطین کانفرنس کا انعقاد عالمی اتحادِ علمائے مقاومت اسلامی کے زیر اہتمام کیا جا رہاہے جس میں مقبوضہ فلسطین و القدس سے مفتیان عظام بشمول مفتی اعظم فلسطین و القدس اور عالم اسلام کی نمایاں شخصیات شرکت کریں گی، جبکہ علمائے اسلام کی بین الاقوامی فلسطین کانفرنس میں فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کا چھ رکنی وفد فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے سیکرٹری جنرل صابر ابو مریم کی قیادت میں پاکستان کی نمائندگی کرے گا۔

علمائے اسلام و مقاومت اسلامی کی عالمی فلسطین کانفرنس کا انقعاد ایسے موقع پر کیا جا رہاہے کہ جب فلسطین کی ناجائز تقسیم اور غاصب صیہونی ریاست اسرائیل کو فلسطین پر قابض کرنے کے لئے بالفور نامی بدنام زمانہ اعلامیہ کی تاریخ کو ایک سو سال مکمل ہو رہے ہیں جسے صیہونی اپنے حق میں ایک درست وعدہ کے طور پر استعمال کرتے ہیں جبکہ در اصل وعدہ الہیٰ جو کہ فلسطین سے متعلق پورے فلسطین کی نہر سے بحر تک آزادی سے متعلق ہے اس عنوان سے کانفرنس کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔

عالمی فلسطین کانفرنس دو روز تک جاری رہے گی جہاں اسلامی دنیا سے تعلق رکھنے والی مایہ ناز اسلامی شخصیات، علمائے کرام، اسکالرز، مفتیان عظام اور تحریک آزادی فلسطین کے لئے سرگرم عمل گروہ بشمول حماس، حزب اللہ، جہاد اسلامی، پاپولر فرنٹ اور پی ایل او سمیت دیگر گروہوں کی اعلی سطحی قیادت شریک ہو گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کرسکتے ہیں۔ ادا

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  71685
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
البصیرہ کے شعبہ خواتین کی سربراہ سیدہ ہما مرتضیٰ نے جماعت اسلامی پاکستان شعبہ خواتین کے زیر اہتمام ’’قومی مشاورت:عورت، اختیار او ر پاکستانی معاشرہ ‘‘سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

مقبول ترین
ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے کہا کہ امریکی رپورٹ میں پاکستان کے دہشت گردی کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات کو متنازع بنایا گیا ہے۔ القاعدہ کی خطے میں ناکامی کو تو تسلیم کیا گیا لیکن اس کے خلاف پاکستان کی کاوشوں کو نظر انداز کیا گیا۔ پاکستان میں
رینٹل پاور کیس میں سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف سمیت 10 ملزمان نے بریت کی درخواست دائر کر رکھی تھی اور نیب ترمیمی آرڈیننس کے تحت تمام درخواستیں دائر کی گئی تھیں۔ جس پر احتساب عدالت اسلام آباد نےفیصلہ محفوظ کر رکھا تھا تاہم آج احتساب
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہم سے جواب مانگا جارہا ہے جواب ان سے مانگا جائے جو ملک کو اس حال میں چھوڑ کرگئے۔ قومی اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد
سپریم کورٹ میں کورونا از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوان چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیے کہ وزیراعظم کہتےہیں ایک صوبے کا وزیراعلیٰ آمر ہے، اس کی وضاحت کیا ہوگی؟ چیف جسٹس نے کہا کہ وزیراعظم اور وفاقی

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں