Sunday, 24 March, 2019
سائنس دان خون کے ذریعے سرطان کی تشخیص کرنے میں کامیاب

سائنس دان خون کے ذریعے سرطان کی تشخیص کرنے میں کامیاب

بالٹی مور ۔ سائنس دانوں نے طب کی دنیا میں ایک اہم سنگِ میل حاصل کر لیا ہے، امریکہ کی جانز ہاپکنز یونیورسٹی کے سائنس دانوں کی ایک ٹیم نے ایک ایسے طریقۂ کار کا تجربہ کیا ہے جس کے تحت آٹھ عام قسم کے سرطانوں کی تشخیص خون کے ذریعے کی جا سکتی ہے۔ اس کا تجربہ 1005 مریضوں پر کیا گیا جنھیں بیضہ دانی، جگر، معدے، لبلبے، خوراک کی نالی، بڑی آنت یا چھاتی کا سرطان تھا اور جو بھی دوسرے اعضا تک نہیں پھیلا تھا۔ اس کا مقصد سرطان کی بروقت تشخیص اور علاج ہے اور اس سے بہت سی زندگیاں بچائی جا سکیں گی۔

تاہم ایک ماہر نے کہا ہے کہ سرطان کو ابتدائی مراحل میں پکڑنے کے لیے اس ٹیسٹ کا موثر پن جاننے کے لیے مزید تجربات کی ضرورت ہے۔ سرطانی رسولیوں سے بہت قلیل مقدار میں تقلیب شدہ ڈی این اے اور پروٹینز خارج ہوتی ہیں جو خون میں شامل ہو جاتی ہیں۔

'کینسر سِیک' (CancerSEEK) نامی یہ ٹیسٹ 16 جینز کے اندر ایسی تبدیلیوں کا پتہ چلا سکتا ہے جو عام طور پر سرطان کے نتیجے میں رونما ہوتی ہیں۔ اس کے علاوہ یہ آٹھ قسم کی سرطانی پروٹینز کا بھی پتہ چلا سکتا ہے۔

اس کا تجربہ 1005 مریضوں پر کیا گیا جنھیں بیضہ دانی، جگر، معدے، لبلبے، خوراک کی نالی، بڑی آنت یا چھاتی کا سرطان تھا اور جو بھی دوسرے اعضا تک نہیں پھیلا تھا۔ مجموعی طور پر اس ٹیسٹ نے 70 فیصد سرطانوں کی درست تشخیص کی ہے۔

جانز ہاپکنز یونیورسٹی کے ڈاکٹر کرسچیئن ٹوماسیٹی نے اس بارے میں بتایا ہے کہ جلد تشخیص بہت اہم ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ اس کے ذریعے سرطان سے ہونے والی اموات پر بڑا اثر پڑے گا۔'

سرطان کی جس قدر جلد تشخیص ہو جائے، اس کے موثر علاج کے اتنے ہی زیادہ امکانات ہوتے ہیں۔ ان آٹھ سرطانوں میں سے پانچ کی ابتدائی تشخیص (سکریننگ) کا کوئی پروگرام موجود نہیں ہے۔ لبلبے کے سرطان کی علامات اس قدر تاخیر سے ظاہر ہوتی ہیں کہ پانچ میں سے چار مریض تشخیص کے ایک سال کے اندر اندر چل بستے ہیں۔

ڈاکٹر ٹوماسیٹی  نے کہا ہے کہ رسولی کی اسی وقت تشخیص جب اسے سرجری کے ذریعے نکالا جا سکے، مریض کی زندگی کے لیے رات اور دن کا فرق پیدا کر سکتی ہے۔' کینسر سیک کے اب ایسے لوگوں پر تجربات کئے جا رہے ہیں جن کے اندر سرطان کی تشخیص نہیں ہوئی۔ یہ اس کے موثر پن کا پہلا امتحان ہو گا۔

امید یہ ہے کہ اسے سکرینگ کے دوسرے طریقوں، مثلاً میموگرافی، کے ساتھ ملا کر سرطان کی بروقت تشخیص کے لیے استعمال کیا جا سکے گا۔ کینسر سیک اس لحاظ سے منفرد ٹیسٹ ہے کہ یہ بیک وقت تقلیب شدہ ڈی این اے اور سرطانی لحمیات کا سراغ لگا سکتا ہے۔ اس سے یہ کئی اقسام کے سرطانوں کا پتہ چلانے کے لیے موثر ثابت ہو سکتا ہے۔

برطانیہ کے محکمۂ صحت سے وابستہ ڈاکٹر گرٹ ایٹارڈ نے بتایا ہے کہ اس کے اندر زبردست امکانات ہیں۔ میں بہت پرجوش ہوں۔ خون کے ٹیسٹ کے ذریعے سکین کے بغیر سرطان کی تشخیص ایسی چیز تھی جس کی سب کو تلاش تھی۔' تاہم انھوں نے خبردار کیا کہ اگر اس ٹیسٹ کے ذریعے سرطان کی تشخیص ہو جائے تو پھر کیا کیا جائے۔ مردوں میں پراسٹیٹ کا سرطان زندگی کے لیے فوری خطرہ نہیں ہوتا اس لیے اس کا علاج کرنے کی بجائے اس کی نگرانی کرنا زیادہ بہتر ہوتا ہے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  80925
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
لودہ پانی کی تشخیص کرنے والا آلہ تیار کرنے والے پاکستانی طلبا کی ٹیم کو عالمی تنظیم کی جانب سے چاندی کے تمغے سے نوازا گیا۔ صوبہ خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاورکے انسٹی ٹیوٹ آف انٹیگریٹو بائیو سائنسز (آئی آئی بی) کے طلبا کو امریکی شہر بوسٹن میں ہونے والے سالانہ
دو امریکی خلا بازوں نے خلائی اسٹیشن آئی ایس ایس کے باہر خلا میں ’چہل قدمی کی ے۔ میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ چھ گھنٹے تک جاری رہنے والی اس چہل قدمی کے دوران ان دو میں سے ایک ’ڈاکنگ اڈیپٹر‘ کو خلائی اسٹیشن کے ساتھ جوڑا گیا۔
انڈونیشیا اور بحرالکاہل کے علاقوں میں لاکھوں افراد نے مکمل سورج گرہن کا تجربہ کیا اور اس خطے کے بعض علاقے مکمل تاریکی میں چلے گئے۔ یہ سورج گرہن مقامی وقت کے مطابق صبح چھ بج کر 19 منٹ (گرینج کے وقت کے مطابق 11 بجکر 19) منٹ پر شروع ہوا
سماجی رابطوں کی مقبول ویب سائٹ فیس بک کے مطابق سال 2015 کی چوتھی سہ ماہی میں اسے دوگنا سے زیادہ منافع ہوا ہے۔ فیس بک کا کہنا ہے کہ دسمبر تک کے تین ماہ میں اس کا خالص منافع 70 کروڑ دس لاکھ ڈالر سے بڑھ کر ایک ارب 56 کروڑ ڈالر ہو گیا ہے۔

مزید خبریں
تحقیق کے مطابق دہی اور کم چکنائی کے حامل پنیر کے استعمال سے ذیابیطس لاحق

مقبول ترین
یوم پاکستان کی مرکزی تقریب میں صدر، وزیراعظم، آرمی چیف، ملائیشین وزیراعظم مہاتیر محمد سمیت دیگر ممالک کی معزز شخصیات نے بھرپور شرکت کی۔ سپیکر قومی اسمبلی، چیئرمین سینیٹ، وفاقی وزراء، وزرائے اعلی، شوبز ستارے
نیوزی لینڈ کی تاریخ کی بدترین دہشت گردی کے ایک ہفتے بعد نہ صرف سرکاری طور پر اذان نشر کی گئی بلکہ مسجد النور کے سامنے ہیگلے پارک میں نمازِ جمعہ کے اجتماع میں وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کے علاوہ ہزاروں غیر مسلم افراد نے بھی شرکت کی۔
ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد کا سرمایہ کاری کانفرنس سے خطاب میں کہنا تھا کہ آزادی کے وقت ملائیشیا غریب ملک تھا۔ آزادی کے وقت طے کیا تھا کہ ملائیشیا ترقی کے مراحل طے کرے گا۔ ہم نے کوریا اور جاپانی لوگوں سے سبق لیا اور کام کیا۔
کراچی کی نیپا چورنگی پر ممتاز عالم دین مفتی تقی عثمانی قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے جب کہ ان کے دو گارڈ جاں بحق ہو گئے۔ ابتدائی طور پر اطلاعات تھیں کہ مختلف مقامات پر فائرنگ کے دو واقعات پیش آئے ہیں لیکن ایس ایس پی گلشن اقبال طاہر

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں